ملک کے تحفظ کو یقینی بنا نے کا عز م

گذشتہ رو ز ہرنائی اور زیا رت کے قبائلی
عما ئد ین سے ایف سی میس لو ر الائی میں خطا ب کے دو ران آئی جی ایف سی شمالی بلوچستان میجر جنر ل محمد یو سف مجوکہ نے اس عزم کا اظہا ر کیا ہے کہ ملک کے تحفظ کو ہر صو ر ت پر یقینی بنا یا جا ئے گا انہو ں نے وا ضح کیا کہ ہم نا قا بل تسخیر قو ت ہیں ہمیں کوئی دشمن میلی آنکھ سے نہیں دیکھ سکتا ایف سی ملک و صو بے کے تحفظ کے سا تھ سا تھ عوام کے فلا ح و بہبو د کیلئے بھی خد ما ت سر انجا م دے رہی ہے ایف سی سر حد و ں کی حفا ظت کے سا تھ سا تھ منشیا ت سمگلنگ جر ائم پیشہ عنا صر کی سر کو بی کیلئے کو ششو ں میں مصر وف عمل ہیں انہو ں نے عو ام اور قبا ئلی معتبر ین
علا قے کی تر قی اور امن و امان کے قیام میں تعا ون کرنے پر اس اقد ام کو سر اہا۔
اس میں کوئی شک نہیں ہے کہ اس وقت صو بے میں ایف سی کا کر دا ر بڑی اہمیت کا حا مل ہے ان کا صو بے میں امن وا ما ن کے قیا م میں اہم رو ل ہے اس کے لیے ان کو جا نو ں کی قر با نیا ں بھی دینی پڑ رہی ہیں لیکن اس کے با و جو د امن وا ما ن کے قیام کے لیے پر عزم ہیں جو کہ قا بل تعر یف با ت ہے اب تک صو بے میں کئی ایف سی اہلکا ر جا م شہا دت نو ش کر چکے ہیں لیکن اس کے با وجو د وہ صو بے سے دہشت گر دی کا قلع قمع کرنے کے لیے اپنا احسن کر دا ر ادا کر رہی ہے جب سے ایف سی نے انتظا می امور میں پو لیس کے سا تھ تعا ون شر وع کیا ہے اس سے صو بے میں امن و اما ن کی صو رتحال کا فی بہتر ہو رہی ہے کیو نکہ یہ اپنے فر ائض جا نفشا نی سے ادا کر رہی ہے۔
جہا ں تک منشیا ت کی سمگلنگ کا تعلق ہے تو اس کی رو ک تھا م کے لیے بھی ایف سی اہم کر دا ر ادا کر رہی ہے جیسا کہ آئی جی ایف سی شما لی بلوچستان میجر جنر ل محمد یوسف مجو کہ نے اپنے مذکو رہ بیان میں کہا ہے کہ ہم نا قا بل تسخیر قو ت ہیں ہمیں کوئی دشمن میلی آنکھ سے نہیں دیکھ سکتا اس با ت کی عکا سی کرتا ہے کہ یہ ایک منظم فو ر س ہے جو اپنے ملک کی حفا ظت کرنا خو ب جا نتی ہے۔
ہم سمجھتے ہیں کہ ایف سی کو اسی طرح اپنے فر ائض سر انجام دینے چاہئیں بلکہ اس سلسلے میں مز ید بہتر ی لانی چاہیئے تا کہ دہشت گر دی جیسے نا سو ر کا مکمل خا تمہ ہو جائے اس میں کوئی شک نہیں کہ اس مقصد کے لیے عو ام اور قبائل معتبر ین کا تعاون بہت ہی نا گز یر ہے اس لیے ان کو ایف سی کے سا تھ مز ید تعا ون کرنا چا ہیئے تا کہ وہ اپنے مقا صد میں کا میا ب ہو سکیں۔
٭٭٭٭٭٭

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*