سمارٹ لاک ڈاﺅن کا ابھی فیصلہ نہیں ہوا،بازار رات 10 بجے بند کئے جائینگے ،بشریٰ رند

کوئٹہ(سٹاف رپورٹر) مشیر اطلاعات بلوچستان بشریٰ رند نے کہا ہے کہ سمارٹ لاک ڈاو¿ن کا ابھی کوئی فیصلہ نہیں ہوا البتہ بازار رات دس بجے بند کئے جائیں گے وزیر اعلیٰ بلوچستان نے اس لئے صحت کس قلمدان اپنے پاس رکھا ہے کہ مافیا کو کنڑول کریں وزیر اعلی نے بعض کےس خود نےب کو دئےے ہےںصوبے میں مزید سب ڈوےژن کے قیام کیلئے کمیٹی قائم کی گئی ہے‘ےہ بات انہوں نے افےسر کلب مےں مےڈےا کو برےفنگ دےتے ہوئے کہی‘ انہوں نے کہاکہ موجودہ حکومت عوام کی مسائل حل کرنے کےلئے وزےراعلیٰ بلوچستان جام کمال خان کی قےادت مےں کوشاں ہےں صوبہ جلد ترقی کی راہ پر گامزن ہوگا انہوں نے کہاکہ بلوچستان میں کابینہ کے اجلاس میں اہم فیصلے ہوئے ہیں وزیر اعلیٰ بلوچستان جام کمال خان کی صدارت میں ہونے والے اجلاس میں پنچگور میں کھجور کو محفوظ کرنے کے پلانٹ کی منظوری دی گئی صوبے میں مزید سب ڈوےژن کے قیام کیلئے کمیٹی قائم کی گئی ہے صوبے میں ڈاکٹروں کی کمی دور کرنے کیلئے کنٹرےکٹ پر جلد ڈاکٹر بھرتی کئے جائیں گے بعض محکمے شروع سے بگڑے ہوئے ہیں صحت اور تعلیم کے شعبے میں مافیا ہیںوزیر اعلی نے اس لئے صحت کس قلمدان اپنے پاس رکھا ہے کہ مافیا کو کنڑول کریں وزیر اعلیٰ بلوچستان نے خود بعض کیس نیب کو دئے ہیں سمارٹ لاک ڈاون کا ابھی کوئی فیصلہ نہیں ہوا انہوں نے کہاکہ کورونا سے بہت لوگ متاثر ہورہے ہیں عوام احتیاطی تدابیر کا خود خیال کریں رات دس بجے تک بازار کھلے رہےں گے بلوچستان کے تمام علاقوں میں یکساں ترقیاکام ہونگے تین ہزار ڈاکٹروں کو تین سے پانچ سال کیلئے عارضی بھرتیاں کرینگے برف باری سے نمٹنے کیلئے جدید مشےنری حاصل کرلی گئی ہے گیس اور بجلی وفاقی حکومت کا ایشو ہے وزیر اعلیٰ نے اس بارے بات کی ہے سٹی ہاوسنگ اسکےم تجاوزات پر قائم کرنے کا فیصلہ غیر دانش مندانہ تھا حکومت کا عزم ہے کیس قبضہ مافیا کو برداشت نہیں کیا جائے گا۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*