و ز یر اعظم عمر ان خان کی بلوچستان کی تر قی میں خصو صی دلچسپی

ڈپٹی سپیکر قو می اسمبلی قا سم خا ن سو ری نے گذ شتہ رو ز وفا قی و ز یر دفا عی پید ا وا ر زبید ہ جلا ل سے کی جا نے والی ملا قا ت میں ایک با ر پھر اس عزم کا اظہا ر کیا ہے کہ و زیر اعظم عمر ا ن خان بلوچستان کی تر قی میں خصو صی دلچسپی رکھتے ہیں ان کی ہد ا یت پر صو بے میں کئی میگا تر قیا تی منصو بو ں پر کا م جا ری ہے بلوچستان قد ر تی وسائل سے ما لا ما ل صو بہ ہے تا ہم ما ضی میں اس کو نظر اند از کیا جا تا رہا اور صو بے کے عو ام کے مسائل پر کوئی تو جہ نہیں دی گئی جس کی وجہ سے صوبے کے عو ام احسا س محر ومی کا شکا ر ہیں اس طرح جا ری منصو بوں کی تکمیل سے صو بے میں تر قی اور خو شحالی کے ایک نئے دو ر کا آغا ز ہو گا اور صو بے کے عو ام میں پا ئی جا نیو الی احسا س محر ومی کا خا تمہ ہو گا بلوچستان کی تعمیر و تر قی کیلئے وفا قی و ز یر دفا عی پید ا وا ر زبید ہ جلا ل کی کا و شو ں کو بھی سرا ہا تے ہیں۔
ڈپٹی سپیکر قو می اسمبلی قا سم خان سو ری کا بلوچستان کی تر قی سے متعلق ایک اور بیان اس سلسلے میں وفا ق کی جا نب سے دیئے گئے بیانا ت کا تسلسل لگتا ہے جس میں وفا قی حکومت ہمیشہ بلوچستان سے متعلق ایسے ہی بیا نا ت دیتی آ رہی ہے لیکن افسو س کی با ت یہ ہے کہ اس سلسلے میں عملی طو ر پر اقد اما ت نظر نہیں آرہے جیسا کہ ڈپٹی سپیکر قو می اسمبلی قا سم خان سو ری نے اپنے مذکو رہ بیان میں کہا ہے کہ بلوچستان قدرتی وسائل سے ما لا مال ہونے کے با وجو د نظر اند از کیا جا تا ہے یہ تو ٹھیک ہے لیکن اب اس سے نکلنا ہو گا اور اس سلسلے میں عملی طو ر پر اقد ا ما ت کرنے چا ہئیں ما ضی میں جو بھی صوبے کے سا تھ ہو ا اس کو دہر انے کی با ر با ر ضرورت نہیں ہے اس طرح کرنے سے ایسا لگتا ہے کہ شا ید مو جو دہ حکومت سکو ر ننگ کر رہی ہے جو کہ بلا شبہ ٹھیک عمل نہیں ہے اس کو پچھلے با تو ں کو دہر انے کی بجا ئے اپنے کئے گئے وعد و ں اور دعو ﺅ ں کو عملی جا مہ پہنا نے کے لیے اقد ا ما ت کر نے چاہئیں بلکہ یہا ں اس با ت کا ذکر کرنا از حد ضروری ہے کہ قا سم خان سور ی جو صو بائی دا ر الحکومت کوئٹہ سے قو می اسمبلی کے ممبر منتخب ہو ئے ہیں اور وہ انتہائی اہم عہد ے ڈپٹی سپیکر قومی اسمبلی ہیں کو اس سلسلے میں زیا دہ کو ششیں کر نی چا ہئیں ان کو وفا ق کی جا نب سے دیئے گئے بیانا ت کو عملی جا مہ پہنا نے کے لیے اقد اما ت کر نے پر وفا قی حکومت پر زو ر دینا چا ہیئے اس کے سا تھ سا تھ وفا قی و ز یر دفا عی پید ا وا ر زبید ہ جلا ل جو ایک سینئر پا ر لیمنٹئیر اور بلوچستان کے مسائل سے بخو بی آگا ہ ہیں کوبھی اس سلسلے میں اپنا اہم کر دا ر ادا کرنا چا ہیئے کیو نکہ جب تک ایسا نہیں ہو تا صو بہ بلوچستان تر قی کی راہ پر گامز ن نہیں ہو سکتا۔ امید ہے کہ بلوچستان سے منتخب ہونے والے دیگر ار ا کین قو می اسمبلی اور سینیٹر ز بھی صو بے کی تر قی پسما ند گی اور عو ام کے احسا س محر ومی کے خا تمے کیلئے اہم کر دا ر ادا کریں گے جو کہ انتہائی نا گز یر ہے اس کے سو ا اور کوئی آپشن نہیں ہے اگر مو جو دہ وفا قی حکومت بلوچستان کو تر قی کی راہ پر گا مزن کر دیتی ہے تو یہ بلا شبہ ایک بہت بڑ ا کا رنا مہ ہو گا جس کو تا ریخ میں سنہر ے حرو ف سے لکھا جا ئے گا۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*