پی ڈی ایم کے جلسے میں رکا و ٹ نہیں بنیں گے،تر جما ن حکومت بلوچستان

Liaquat Shahwani

کوئٹہ(سٹاف رپورٹر)حکومت بلوچستان کے ترجمان لیاقت شاہوانی نے کہا ہے کہ پی ڈی ایم کے زیر اہتمام کوئٹہ میں 25اکتوبر کو ہونے والے جلسے کےلئے حکومت بلوچستان نے مکمل سیکورٹی پلان ترتیب دے دیا گیا نیکٹا کے الرٹ کے بعد ہماری زمہ داریاں بڑھ گئی ہیں سیکورٹی تھریٹ کے بعد اب پی ڈی ایم میں شامل جماعتوں کے قائدین پر بھی ز مہ داریاں بڑھ گئی ہیں پی ڈی ایم کے جلسے میں رکاوٹ نہیں بنیں گے ‘ےہ بات انہوںنے میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہی انہوںنے کہا کہ کل کوئٹہ میں پی ڈی ایم کا جلسہ ہونے جارہاہے جلسے کیلئے 26 نکاتی ایجنڈا ہے جس میں سیکورٹی کا نظام بھی شامل ہے جلسے کیلئے 3 ہزار سیکورٹی تعینات رہیں گے پی ڈی ایم نے سب سے پہلے کوئٹہ میں جلسہ کا فیصلہ کیا میں نے کچھ سولات اٹھائیں ہم نے ایک سوال اٹھایا کہ پی ڈی ایم نے زیادہ آبادی والے صوبوں کو چھوڑ کر بلوچستان کا انتخاب کیوں کیا پہلا جلسہ کوئٹہ میں کیو ںرکھا اس سوال کا جواب پی ڈی ایم نے نہیں دیا بار بارکوئٹہ جلسے کی تاریخ تبدیل کرنے سے ظاہر ہوتا ہے کوئٹہ کے شہری پی ڈی ایم کے ساتھ نہیں ہیں انہوںنے کہا کہ ایسے واقعات پہلے بھی ہوئے اس لئے بلوچستان حکومت نے سیکورٹی تھریٹ کو سنجیدہ لیا ہے پی ڈی ایم میں شامل جماعتوں کے قائدین کی بھی سیکورٹی تھریٹ کو سنجیدہ لیں تین چار سال قبل بلوچستان میں لوگ شام کو گھروں سے نہیں نکل سکتے تھے آج امن امان برقرار رہیں پی ڈی ایم کی قیادت نے تین بار اپنا جلسہ تیاریاں نہ ہونے کی وجہ سے ملتوی کی ہے اگر تین بار اپنا جلسہ تبدیل کرسکتا ہے تو عوام کی خوشحالی کیلئے جلسہ ملتوی کریں انہوںنے کہا کہ اہم قائدین سیکورٹی تھریٹ کی وجہ سے اپنا جلسہ ملتوعی کریںجب تک سیکورٹی تھریٹ ہے اس وقت تک پی ڈی ایم اپنا جلسہ ملتوعی کریں ہم نے جلسے کرنے سے کسی کو نہیں روکا گیا ہے کرونا وائرس کے پیش نظر بلوچستان میں سخت اقدامات کے بعد کیسز میں کمی آئی ہے جب کوئٹہ سے دوسرے شہریوں سے لوگ آئیں گئے تو ایس او پیز پر عمل درآمد نہیں ہوگا پی ڈی ایم قیادت خود ماسک لگاتے ہیں لیکن کارکنان کو کبھی ماسک کی تلقین نہیں کی ہے انہوں نے کہا کہ جلسے کے بعد ہمیں کورونا کا تحفہ دیا جائے گا۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*