بغیر پھا ٹک کے با عث ایک اور حا دثہ

گذشتہ رو ز شیخو پو رہ کے علا قے فا رو ق آباد کے قر یب ایک مسا فر کو سٹر ٹر ین کی ز د میں آ گئی جس کے باعث 19 افر اد جا نو ں کی با ز ی ہا ر گئے جبکہ 8 افر اد زخمی ہو ئے حا دثہ فا رو ق آبا د اور بحالی ریلو ے سٹیشن کے در میا ن بغیر پھا ٹک کی کر اسنگ پر پیش آیا جہا ں شا ہ حسین ایکسپر یس سٹیشن کے قر یب سکھ بر ا در ی کی کو سٹر سے ٹکر ا گئی کو سٹر میں 25 سکھ یا تر ی سو ار تھے جن میں سے 19 ہلا ک ہو گئے تر جما ن ریلو ے کے مطا بق وفا قی وزیر ریلو ے شیخ رشید نے وا قعہ کے ذمہ دا ر و ں کیخلا ف فو ری کا رو ائی کا حکم دید یا ہے۔
شیخو پو ر ہ کے قر یب بغیر پھا ٹک کے باعث ہو نیو الی المنا ک حا د ثہ قا بل افسو س ہے جس میں 19 جا نیں ضا ئع اور 8 زخمی ہو ئیں بغیر پھا ٹک پر ہونے والا مذکو رہ حا دثہ کوئی پہلا حا دثہ نہیں ہے اس سے قبل بھی کئی ایسے بے شما ر حا دثا ت ہو چکے ہیں اور جن میں کئی قیمتی جانیں ضا ئع اور زخمی ہو ئی ہیں بغیر پھا ٹک کی کر اسنگ پو رے ملک میں بہت بڑ ی تعد اد میں مو جو د ہیں لیکن افسو س کی با ت یہ ہے کہ اس پر کسی حکومت نے بھی تو جہ نہیں دی اس طرح اس پر لو گوں کو ما رنے کا سلسلہ جا ری ہے پا کستا ن ریلو یز ملک کا ایک بہت بڑ ا ادا رہ ہے اور یہ ہمیشہ خسا رے کا رو نا رو تا ہے اس میں جو وزیر بھی آیا ہے اس کا یہ کہنا ہو تا ہے کہ محکمہ خسا رے میں جا رہا ہے حا لا نکہ اگر گر ا ﺅ نڈ پردیکھا جا ئے تو اس میں جتنی بھی ٹر ینیں چلتی ہیں وہ سب منا فع بخش ہیں اس کے علا وہ محکمے نے جا ن بو جھ کر کئی ایسی ٹر ینوں کو بلا وجہ بند کیا ہو ا ہے جو کہ منا فع بخش تھیں جن میں کوئٹہ سے پشا ور جانے والی ابا سین ایکسپریس ،کوئٹہ سے لاہور جانے والی چلتن ایکسپر یس ،کوئٹہ سے کر اچی جانے والی نا ن سٹا پ ٹر ین اور مہر ان ایکسپر یس بھی شا مل ہیں ان تما م ٹر ینو ں میں بکنگ کئی کئی رو ز پہلے کی جا تی تھی جس سے یہ اند از ہ لگا یاجا سکتا ہے کہ یہ منا فع بخش ٹر ینیں تھیں ان سب کو ٹر ا نسپو ر ٹر و ں سے ملی بھگت کے با عث بند کر دیا گیا تا کہ ٹر ا نسپو ر ٹر و ں کا کا رو با ر چل سکے ان ٹر ینو ں میں سب سے زیا دہ منا فع بخش ٹر ین ابا سین ایکسپر یس کو جنر ل مشر ف کے دو ر میں بلا جو از بند کیا گیا یہ ٹر ین پو رے ملک کا سفر طے کر کے اپنی منزل مقصو د تک پہنچتی تھی جس میں ہر علا قے کے غر یب لو گ سفر کر تے تھے۔
جہا ں تک بغیر پھا ٹک کے کر اسنگ کا تعلق ہے تو جیسا کہ اوپر در ج کیا جا چکا ہے کہ یہ مسئلہ گذشتہ کئی حکومتو ں سے چلا آر ہا ہے اس پر کسی نے بھی تو جہ نہیں دی جس کے باعث حا دثے مسلسل ہو رہے ہیں جو کہ محکمہ ریلو ے کے لیے ایک بہت بڑ ا لمحہ فکر یہ ہے وفا قی وزیر ریلو ے شیخ رشید جو اکثر بڑ ے بلند و با لا دعو ے کر تے نہیں تھکتے ہمیشہ اپنی ہی زبا ن میا ں میٹھو بنے ہو تے ہیں کے دو رمیں بھی ریلو ے جیسے اہم محکمے میں اصلا حا ت نہیں کی گئیں جس کے باعث محکمہ خسا رے سے نہیں نکل پا رہا مذکو رہ وزیرریلو ے اپنے محکمے پر تو جہ کم اور دیگر امو ر پر زیا دہ دے رہے ہیں وہ پیشنگو ئیا ں کر تے رہتے ہیں جو کہ ان کا کام نہیںہے اس لیے ان کو اپنی ذمہ دا ریو ں کا احسا س کر تے ہوئے اپنا کا م کرنا چا ہیئے تا کہ محکمہ صحیح خطو ط پر استو ار ہو سکے انہو ں نے مذکو رہ حا دثے کی جو کا رو ائی کا حکم دیا ہے وہ کس کے خلا ف کا رو ائی کر یں گے کیو نکہ یہ حا دثہ تو بغیر پھا ٹک والے کر اسنگ پر ہو ا ہے زیا دہ سے زیا دہ وہا ں چو کید ار سے پو جھ گچھ ہو گی اگر کوئی وہاں تعینا ت ہو ا تو ۔
ا س لیے یہا ں ضرورت اس امر کی ہے کہ وز ارت ریلو ے کو خسا رے کا رونا کم کر تے ہوئے بند کی گئیں منا فع بخش ٹر ینو ں کو فو ر ی طور پر چلا نے کے اقدامات کرنے چاہئیں اور اس کے علا وہ پو رے ملک میں بغیر پھا ٹک کی کر اسنگو ں پر فو ری طو ر پر پھا ٹک تعمیر کرنے چاہئیں تا کہ آئے رو ز ہو نیو الے حا دثا ت کی رو ک تھا م ہو سکے۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*