اپوزیشن اپنے، گناہوں کی ،معافی مانگے ، لوٹی ہوئی رقم واپس لائے، شبلی فراز

Shibli Faraz

اسلام آباد (این این آئی) وفاقی وزیر اطلاعات ونشریات سینیٹر شبلی فراز نے کہا ہے کہ مائنس ون اپوزیشن کی ذہنی اختراع ہے ،اپوزیشن اپنی کرپشن چھپانے کیلئے اس قسم کے ہتھکنڈے استعمال کر رہی ہے،اپوزیشن کو اپنے گناہوں کی معافی مانگے ، لوٹی ہوئی رقم واپس لائے، وزیر اعظم عمران خان کا اپنا کوئی کاروبار نہیں ، تمام اتحادی حکومت کے ساتھ کھڑے ہیں ،موٹرسائیکلوں پر آنے والوں نے محل بنا لیے ، ان کے کیسز کا کیا بنا؟،بلاول بھٹو سیاست کے نشیب و فراز سے آشنا نہیں،عمران خان اپنی سیاست کیلئے گلی گلی پھرے،پیپلز پارٹی اداروں میں میرٹ اور شفافیت پر یقین نہیں رکھتی ، ماضی میں پنجاب میں سینٹرل لاہور پر زیادہ ترقیاتی کام ہوئے ، باقی پنجاب کو نظر انداز کیا گیا،تمام ائیر لائنو ں کے سٹاف کی ڈگریوں کی تصدیق کو یقینی بنایا جائے گا،مشکوک لائسنس والے پائلٹس بر طرف کر دیئے گئے ہیں ،ہمارے پائلٹس جو جہاز اڑا رہے ہیں ان کی ڈگریاں سو فیصد کلیئر ہیں،جعلی ڈگریوں کے حامل پائلٹس کے خلاف بلاتفریق کارروائی ہو گی جبکہ وفاقی کابینہ نے ہائیڈروپاور پراجیکٹ کے 3منصوبو ں ، عثمان ناصر کی ایم ڈی سافٹ ویئر ایکسپورٹ بورڈ اورسکیورٹی اینڈ ایکس چینج کمیشن کیلئے آڈیٹر جنرل کی تعیناتی کی منظوری دیتے ہوئے کہا ہے کہ سستی بجلی کے منصوبوں سے مہنگے پلانٹس بندہو جائیں گے۔ بدھ کو کابینہ اجلاس کے بعد میڈیا کو بریفنگ دیتے ہوئے وزیراطلاعات ونشریات سینیٹر شبلی فراز نے کہاکہ کابینہ اجلاس میں آڈیٹر جنرل کی رپورٹ پر بحث ہوئی ہے ۔ انہوںنے کہاکہ کابینہ نے ہائیڈروپاور پراجیکٹ کے 3منصوبو ں کی منظوری دی گئی ،متبادل توانائی کے منصوبوں کے فروغ پر بھی بات ہوئی ہے ۔ وفاقی وزیر نے کہاکہ متبادل توانائی کے فروغ میں حائل رکاوٹوں کو دور کرنے پر بات ہوئی ہے ۔ انہوںنے کہاکہ سستی بجلی کے منصوبوں سے مہنگے پلانٹس بندہو جائیں گے۔شبلی فراز نے کہاکہ ماضی میں پنجاب میں سینٹرل لاہور پر زیادہ ترقیاتی کام ہوئے جبکہ باقی پنجاب کو نظر انداز کیا گیا۔ انہوںنے کہاکہ پروونشیل فنانس کمیشن کے ذریعے صوبوں میں بلاتفریق ترقیاتی کام ہوں گے۔ وفاقی وزیر نے کہاکہ ترقیاتی کاموں میں پیسوں کے ضیاع کوروکنے کیلئے خسرو بختیار کی سربراہی میں کمیٹی بنائی گئی،کمیٹی 90 دن میں رپورٹ پیش کرے گی۔وزیر اطلاعات شبلی فراز نے کہاکہ عثمان ناصر کو ایم ڈی سافٹ ویئر ایکسپورٹ بورڈ تعینات کرنے کی منظوری دی گئی۔ وفاقی وزیر نے کہاکہ کے پی کے میں ای ٹینڈرنگ کا سلسلہ جاری رکھا جائے گا۔ وزیراطلاعات نے کہاکہ سکیورٹی اینڈ ایکس چینج کمیشن کیلئے آڈیٹر جنرل تعینات کرنے کی منظوری دی گئی۔ انہوںنے کہاکہ زائرین کیلئے بنائے گئے ایس او پیز میں بہتری لانے کی کوشش کریں گے۔شبلی فراز نے کہاکہ تعلیم اور صحت کے شعبے میں نجی شراکت دارو ں کوراغب کیا جائے گا۔شبلی فراز نے کہاکہ وزیراعظم اداروں کو فعال کرنے اور میرٹ میں شفافیت لانے کیلئے پرعزم ہیں ۔ وفاقی وزیر نے کہاکہ تمام ائیر لائنو ں کے سٹاف کی ڈگریوں کی تصدیق کو یقینی بنایا جائے گا۔ انہوںنے کہاکہ پی آئی اے ایک عظیم ماضی کا حامل ادارہ ہے،سول ایوی ایشن اتھارٹی میں اصلاحات لائی جائیں گی۔شبلی فراز نے کہاکہ جن پائلٹس کے لائسنس مشکوک تھے انہیں برطرف کر دیا گیا ہے،ہمارے پائلٹس جو جہاز اڑا رہے ہیں ان کی ڈگریاں سو فیصد کلیئر ہیں۔ انہوںنے کہاکہ جعلی ڈگریوں کے حامل پائلٹس کے خلاف بلاتفریق کارروائی ہو گی۔ وفاقی وزیر نے کہاکہ مائنس ون اپوزیشن کی ذہنی اختراع ہے،اپوزیشن اپنی کرپشن چھپانے کیلئے اس قسم کے ہتھکنڈے استعمال کر رہی ہے۔شبلی فراز نے کہاکہ اپوزیشن کو ایسی باتیں کرنے سے پہلے سوچنا چاہیے کہ کیا اس سے ملک کو فائدہ ہوگا۔ انہوںنے کہاکہ اپوزیشن کو چاہیے کہ اپنے گناہوں کی معافی مانگے اور لوٹی ہوئی رقم واپس لائے۔شبلی فراز نے کہاکہ ماضی میں بجلی کے مہنگے منصوبوں کے معاہدے کیے گئے،ماضی میں بجلی کے ترسیلی نظام پر توجہ نہ دی گئی۔ وفاقی وزیر نے کہاکہ اپوزیشن کورونا سے متعلق بے یقینی کی صورتحال پیدا کر رہی ہے۔ انہوںنے کہاکہ پی ٹی آئی کے اتحادی ہمارے ساتھ کھڑے ہیں، وفاقی وزیر نے کہاکہ وزیراعظم عمران خان کا اپنا کوئی کاروبار نہیں۔ وفاقی وزیر نے کہاکہ موٹرسائیکلوں پر آنے والوں نے محل بنا لیے ، ان کے کیسز کا کیا بنا؟۔ وفاقی وزیر نے کہاکہ بلاول بھٹو سیاست کے نشیب و فراز سے آشنا نہیں،عمران خان اپنی سیاست کیلئے گلی گلی پھرے۔ وفاقی وزیر نے کہاکہ ماضی میں پی آئی اے میں بے شمار سیاسی بھرتیاں کی گئیں۔ انہوںنے کہاکہ پیپلز پارٹی اداروں میں میرٹ اور شفافیت پر یقین نہیں رکھتی۔ سینیٹر شبلی فراز نے کہاکہ اپوزیشن عمران خان کو مافیاز کے خلاف کارروائیوں پر اپنانشانہ بنا رہی ہے۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*