شعبہ معدنیات صوبے کا اہم پیداواری سیکٹر ہے ،وزیر اعلیٰ بلوچستان

Chief Minister Balochistan, Mir Jam Kamal

کوئٹہ(خ ن)وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال خان سے ملک شہر یار میر بہروز ریکی امجد صدیقی میر اسماعیل مینگل اور سردار نعمت اللہ پر مشتمل بلوچستان کول مائینز اونرزایسوسی ایشن کے وفد نے ملاقات کی اس موقع پر معدنیات کے شعبہ کی ترقی سے متعلق امور پر بات چیت کی گءوفد نے کورنا وائرس کی موجودہ صورتحا ل کے معدنی شعبہ اور کان کنی کی صنعت پر مرتب ہونے والے اثرات سے وزیراعلیٰ کو آگاہ کیا اور مائینگ سیکٹر کی ترقی کے لیے حکومتی اصلاحات و اقدامات منرل پالیسی اور آئندہ مالی سال کے بجٹ میں معدنی پیداوار میں اضافے کے لیے ترقیاتی منصوبوں کی شمولیت کو سراہتے ہوئے کوئلہ اور دیگر معدنیات پر مختلف مدات میں رائلٹی فیسوں اور ٹیکسوں میں اضافے کو 31 دسمبر 2020 تک موخر کرنے پر وزیراعلیٰ کا شکریہ ادا کیا اس موقع پر بات چیت کرتے ہوئے وزیراعلیٰ نے کہا کہ کورونا وائرس کے معاشی و اقتصادی اثرات اور چیلنجز سے نمٹنے کے لیے صوبائی حکومت نے آئندہ مالی سال کے بجٹ میں خصوصی منصوبے شامل کیے ہیں شعبہ معدنیات صوبے کا اہم پیداواری سیکٹر ہے جس سے ہزاروں لوگوں کا روزگا ر وابستہ ہے جبکہ یہ شعبہ صوبے کی آمدنی کا بھی اہم زریعہ ہے انہوں نے کہا کہ ماضی میں معدنی شعبہ کو وہ اہمیت نہ مل سکی جو ملنی چاہے تھی تاہم موجودہ حکومت تمام پیداواری شعبوں کو ترقی دینے کے لیے اصلاحات متعارف کرا رہی ہے جس سے نہ صرف روزگار اور معاشی و اقتصادی سرگرمیو ں میں تیزی آئے گی بلکہ ہمارے محاصل میں بھی اضافہ ہو گا اور حقیقی مائین اونرز کی حو صلہ افزائی اور انکے اعتماد میں اضافہ ہوگا وزیراعلیٰ نے کہا کہ معدنی شعبہ کے ٹیکسوں سے متعلق تمام امور اور پالیسی سازی میں تمام سٹیک ہولڈرز کو اعتماد میں لیا جائے گا۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*