وفا قی کا بینہ کا چینی کی قیمت پر اظہا ر تشو یش

گذشتہ رو ز وز یر اعظم عمر ان خا ن کی زیر صد ار ت وفا قی کا بینہ کا اجلا س منعقد ہو ا اجلا س کے بعد وفا قی وزیر اطلا عا ت ونشر یا ت سینیٹر شبلی فر ا ز نے میڈ یا کو بر یفنگ دی اجلا س میں شو گر انکو ائر ی کمیشن کی سفا ر شا ت پر عمل در آمد کرنے کا فیصلہ کیا گیا کیو نکہ سفا ر شا ت پر عمل در آمد کر نے سے چینی کی قیمت میں فر ق آئے گا چینی کی قیمتو ں سے متعلق نظا م آئند ہ تین ما ہ میں مکمل ہو گا کو رو نا وا ئر س کے بعد پتہ چلا ہے کہ صحت کا نظا م کتنا خر اب ہے ؟انہو ں نے وا ضح کیا کہ جب تک کورونا وا ئر س کی ویکسین نہیں آجا تی اس طرح کی صو رتحال کا سا منا رہے گا اگست تک وبا ءکا خطر ہ کا فی حد تک مو جو د رہے گا پا کستا ن میں کو رونا وا ئر س کی وجہ سے ہلا کتیں کم ہیں حکومت گند م کی سمگلنگ روکنے اور آ ن لا ئن ایجو کیشن کیلئے اقد اما ت کر رہی ہے۔
وفا قی کا بینہ کے اجلا س میں چینی کی قیمت پر اظہا ر تشو یش اچھا اقد ام ضرور ہے لیکن حیر ت کی با ت یہ ہے کہ یہ معا ملہ ایک عر صے سے چل رہا ہے لیکن اس کو حل نہیں کیا جارہا حکومت نے اس اہم معا ملے پر ہو نیو الی تحقیقا تی ر پورٹ کو پبلک کیا حا لا نکہ اس ر پو رٹ میں وزیر اعظم عمر ان خا ن کے قر یبی سا تھیو ں جن میں جہا نگیر
تر ین اور چند وزر ا ءکے نا م بھی آئے لیکن انہو ں نے اس کی پر وا ہ نہ کر تے ہوئے پبلک کے مفا د کے لیے یہ قد م اٹھا یا جو یقینا عوا م کے مسا ئل پر ان کی خصو صی تو جہ کا ثبو ت ہے لیکن اتنا کچھ ہو نے کے بعد اب تک اس معا ملے کو ختم نہ کرنا لمحہ فکر یہ ہے کیو نکہ اس کی وجہ سے اب تک چینی کی قیمتو ں میں ا و پن ما رکیٹ میںکوئی کمی نہیں ہوئی عوام اب بھی مہنگی چینی خر ید نے پر مجبو ر ہے اس لیے کا بینہ کو اپنے مذکو رہ فیصلے پر عمل در آمد کر تے ہوئے شو گر انکو ا ئر ی کمیشن کی سفا ر شا ت پر فو ر ی طو ر پر عمل در آمد کر نا چا ہیئے اس نظا م کو تین ما ہ کی بجا ئے جلد حل کیا جائے۔
جہا ں تک ملک میں صحت کے نظا م کی با ت ہے تو اس سلسلے میں ہم اپنی ان ہی سطو ر پر متعد د با ر اس کا ذکر کر چکے ہیں اور ان کے حل کیلئے تجا و یز بھی دی ہیں لیکن ان کو حل کرنے کی بجا ئے اس سلسلے میں صر ف زبا نی طو ر پر فیصلے کئے جا تے ہیں ان پر کوئی عمل در آمد نہیں کیا جا تا جس کے باعث صحت سے متعلق مسا ئل جو ں کے تو ں ہیں ۔
کا بینہ کے اجلا س میں حکومت نے گند م کی سمگلنگ روکنے اور آن لائن ایجو کیشن کیلئے اقد اما ت کی با ت ہے لیکن یہا ں صو رتحال اس کے با لکل بر عکس ہے ملک میں ایک با ر پھر گندم کی قلت اور آٹا مہنگا ہونا شر وع ہو گیا ہے اس طرح آٹے کی قیمتو ں میں اضا فہ ہو رہا ہے اس سے قبل بھی آٹا بہت مہنگا ہو ا تھا لیکن بعد میں اس کی قیمت کم ضرو ر ہو ئی تھی مگر پھر بھی پر انی سطح پر نہیں آئی تھی اب دو با رہ قیمتو ں میں اضا فے دیکھنے میں آ رہا ہے جو یقینا اس با ت کا ثبو ت ہے کہ حکومت اور متعلقہ ادا رے ا س اہم معا ملے کو حل نہیں کر پا رہے آٹا ہر شخص کی ضرورت ہو تا ہے چا ہے وہ امیر ہو یا غر یب اس لیے حکومت کو غر یب عو ام کے منہ سے کم ازکم سو کھی رو ٹی کا نو الہ نہیں چھینا چا ہیئے کیو نکہ زند ہ رہنے کے لیے اسے رو ٹی چا ہیئے حکومت آئن لائن ایجو کیشن کیلئے جو اقد اما ت کر رہے ہیں اس پر عوام کو کا فی تحفظا ت ہیں اس لیے ا ن کو دور کرنے کیلئے اقد اما ت کر نا نا گز یر ہے حکومت کو ا س اہم مسئلے کو سنجید ہ لینا چا ہیئے۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*