افغانستان میں متحارب فریق طبی مراکز پر حملے کر رہے ہیں، اقوام متحدہ

united nations

واشنگٹن (م ڈ ) اقوام متحدہ کی رپورٹ میں 15 ایسے پرتشدد واقعات کا ذکر کیا گیا ہے، جن کا نشانہ صحت کے مراکز تھے۔عالمگیر کرونا وبا کے پیش نظر یہ خطرناک رجحان ہے۔میڈیارپورٹس کے مطابق افغانستان میں اقوام متحدہ کے امدادی مشن کی خصوصی رپورٹ میں افغان حکومت کی فورسز اور طالبان پر الزام لگایا گیا ہے کہ وہ کرونا وائرس کی وبا کے دوران ہیلتھ ورکرز اور صحت کے مراکز پر جان بوجھ کر حملے کر رہے ہیں۔اب تک تقریبا 29 ہزار افغانی اس مرض کا شکار ہوئے ہیں اور 600 اموات ہوئی ہیں۔ ماہرین کا خیال ہے کہ چونکہ وہاں ٹیسٹنگ کی سہولتیں ناکافی ہیں، اس لیے یہ تعداد اس سے بھی زیادہ ہو سکتی ہے۔اقوام متحدہ کی تازہ ترین رپورٹ میں مارچ سے اب تک پندرہ ایسے واقعات کی دستاویزی شہادت پیش کی گئی ہے، جس کے مطابق ہیلتھ کیئر نظام کو نشانہ بنایا گیا۔ ان میں زیادہ حملے طالبان نے کیے۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*