پاکستان اور روس مابین افغان امن عمل میں قریبی رابطہ استوار رکھنے پر اتفاق

اسلام آباد (آئی این پی ) وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی اور روسی فیڈریشن کے وزیر خارجہ سرگئی لاوروف نے ٹیلی فون پر گفتگو کی اور باہمی دلچسپی کے موضوعات، کورونا وبا، مختلف فورمز پر مل کر چلنے، دوطرفہ تعلقات میں تعاون مزید بڑھانے کے امکانات اور علاقائی امور پر تبادلہ خیال کیا۔ وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی نے زوردیا کہ پاکستان روس کو اپنا ایک اہم شراکت دار سمجھتا ہے اور روس کے ساتھ طویل المدتی اور کثیر الجہتی شراکت داری کا خواہش مند ہے۔ وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی نے کورونا وبا سے روس میں ہونے والی اموات پر اظہار تعزیت کیا۔ دونوں وزراء خارجہ نے کورونا وباءکے تناظر میں سماجی ومعاشی منفی اثرات پر تبادلہ خیال کیا۔ وزیر خارجہ لاوروف نے کورونا کے خلاف جنگ میں پاکستان کے ساتھ یک جہتی کا اظہار کیا۔ وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی نے اپنے روسی ہم منصب کو وزیراعظم عمران خان کے ترقی پزیر اور غریب ممالک کے ذمے ”قرض میں ریلیف دینے کے عالمی اقدام“ کے بارے میں آگاہ کیا۔ انہوں نے کہاکہ اس ضمن میں مشترکہ اور جامع اقدامات ضروری ہیں تاکہ غریب ممالک کے پاس اتنے وسائل میسرآسکیں کہ وہ کورونا وباءکے اپنے معاشروں اور معیشت پر ہونے والے سنگین منفی اثرات کا مقابلہ کرنے کے قابل ہوسکیں۔ روسی وزیر خارجہ نے ترقی پزیر ممالک کے قرض میں ریلیف سے متعلق اقدام کی حمایت کا اظہار کرتے ہوئے اس ضمن میں مثبت کردار ادا کرنے کی یقین دہانی کرائی۔ بھارت کے زیرقبضہ جموں وکشمیر کے تناظر میں وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی نے جاری مسلسل لاک ڈاون، بھارتی قابض افواج کی فوجی کارروائیوں، چھاپوں میں اضافے اور متنازعہ خطے میں آبادی کا تناسب تبدیل کرنے کی کوششوں پر گہری تشویش کا اظہار کیا۔ دونوں وزراءخارجہ نے حالیہ پیش ہائے رفت کے تناظر میں افغانستان کی صورتحال پر بات چیت کی۔ وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے افغانوں کی قیادت میں افغانوں کو قبول ان کے اپنے امن عمل کے لئے پاکستان کی حمایت کا اعادہ کرتے ہوئے امر یکہ طالبان امن معاہدے میں پاکستان کی مثبت کاوشوں کو بیان کیا۔ انہوں نے بین الافغان جامع مذاکرات کی اہمیت پر زور دیا اور اسے افغانستان میں پائیدار امن وسلامتی کے لئے واحد راستہ قرار دیا۔دونوں وزراء خارجہ نے افغان امن عمل میں خطے کی سطح پر کوششوں کے حصے کے طورپر قریبی رابطہ استوار رکھنے پر اتفاق کیا۔ دونوں وزراءخارجہ نے اہم دوطرفہ ایجنڈے میں پیش رفت اور علاقائی تناظر میں قریبی تعاون کے لئے قریبی رابطے میں رہنے پر اتفاق کیا۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*