پاکستان کی مسلح افواج ملکی سرحدوں کا دفاع کرنےکی بھرپور صلاحیت رکھتی ہیں، وزیراعلیٰ بلوچستان

Chief Minister Balochistan, Mir Jam Kamal

کوئٹہ(خ ن) وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال خان نے قوم کو یوم آزادی کی مبارکباد دیتے ہوئے کہا ہے کہ آزادی ایک ایسی نعمت ہے جس کے حصول کے لئے دنیا کی تاریخ میں قوموں نے ہمیشہ جدوجہد کی اور قربانیاں دیں۔برصغیر کے مسلمانوں نے 14اگست کو ایسی ہی جدوجہد سے ہوتے ہوئے ایک آزاد اسلامی ریاست حاصل کی، آزادی کی قدروقیمت کا اندازہ غلام اقوام ہی لگاسکتی ہیں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے یوم آزادی کی مناسبت سے صوبائی اسمبلی کے سبزہ زار میں قومی پرچم لہرانے کی روایتی اور پروقار تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اسپیکر صوبائی اسمبلی میر عبدالقدوس بزنجو، ڈپٹی اسپیکر قومی اسمبلی قاسم خان سوری، صوبائی وزراءوارکین پارلیمنٹ، چیف سیکریٹری بلوچستان ڈاکٹر اختر نذیر، آئی جی پولیس، آئی جی ایف سی (نارتھ)، سیاسی وقبائلی عمائدین، علماءکرام، صوبائی سیکریٹریز ، زندگی کے مختلف شعبوں سے تعلق رکھنے والے افراد اور خواتین اور بچوں کی بڑی تعداد تقریب میں شریک تھی۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ پاکستان کوہمیشہ ہر دور میں ہر قسم کی مشکلات کا سامنا کرنا پڑا لیکن اللہ کی مدد اور ہر پاکستان کے جذبہ حب الوطنی نے مشکل وقت کو شکست دی۔ انہوں نے کہا کہ آج ہم ایک ایسے وقت میں جشن آزادی منارہے ہیں جب ہمارے ملک کو بڑے بیرونی اور اندرونی چیلنجوں کا پھر سے سامنا ہے لیکن یہ امر باعث اطمینان ہے کہ ہم ایک زندہ قوم ہیں اور ہم نے جرا¿ت اور حوصلے کے ساتھ ان مشکلات کو اللہ کی مدد سے عبور کیا ہے۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ آج کا یوم آزادی کشمیری عوام کی جدوجہد سے اظہار یکجہتی کے طور پر منایا جارہا ہے، بھارت میں قائم ایک انتہا پسند حکومت نے پورے بھارت اور خاص طور سے کشمیر میں مسلمانوں کے خلاف ظلم وجبر کا سلسلہ جاری کیا ہے لیکن ہمیں یقین ہے کہ بھارتی حکومت کے ظالمانہ اقدامات حریت پسند کشمیریوں کے حوصلے کبھی پست نہیں کرسکتے۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ ہم اقوام متحدہ کی قراردادوں اور کشمیر کے عوام کی مرضی اور خواہش کے مطابق تنازعہ کشمیر کے حل کی اصولی حمایت جاری رکھیں گے۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ لائن آف کنٹرول پر بھارتی جارحانہ کاروائیوں خاص طور سے سویلین آبادی پر کلسٹر بموں کے حملے قابل مذمت ہیں، تاہم پاکستان کی مسلح افواج ملکی سرحدوں کا دفاع کرنے کی بھرپور صلاحیت رکھتی ہیں اور پوری پاکستانی قوم اپنی بہادر مسلح افواج کے ساتھ کھڑی ہے۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ سبز ہلالی پرچم ہماری عزت اور حرمت کا نشان ہے، ہم اس کی عزت کو برقرار رکھیں گے تو دنیا بھر میں ہماری عزت ہوگی اور اگر ہم اپنے پرچم کو عزت نہ دی تو ہماری اپنی عزت بھی نہیں رہے گی۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ آج ہم جن آزاد فضا¶ں میں سانس لے رہے ہیں وہ سیکیورٹی فورسز اور شہریوں کی شہادت کی بدولت ہے اور اپنے ان شہداءکو آج کے دن قومی پرچم کے تلے کھڑے ہوکر سلام پیش کرتے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ ہمیں دہشت گردی کے انسداد کے لئے اپنے سیکیورٹی اداروں کی شاندار کارکردگی پر فخر ہے اور ماضی کے مقابلے میں آج خاص طور سے بلوچستان کے سیکیورٹی کے حالات اور ترقیاتی عمل اطمینان بخش ہیں، یقینا اس میں بلوچستان کے محب وطن اور امن پسند عوام کے تعاون کا اہم کردار ہے، آج صوبے میں سرمایہ کاری ہورہی ہے اور ہم بلوچستان کو امن اور ترقی کا گہوارہ بنانے میں کامیاب ہوں گے، وزیراعلیٰ نے کہا کہ زندہ قوموں کی طرح پاکستان کے عوام بھی اپنا جشن آزادی نہایت جوش وخروش، تعمیروترقی اور دفاع وطن کے پختہ عزم کے ساتھ منارہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ آج کا دن تجدید عہد کا دن ہے، ہمیں اپنی کارکردگی کا جائزہ لینے اور مستقبل کی تعمیر کے اپنے عزم کے اعادہ کی ضرورت ہے۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ موجودہ حکومت اپنی ایک سال کی مدت پوری کررہی ہے، حکومتی کارکردگی کا تعین کرنے کے لئے یہ مدت کافی نہیں لیکن اپنے پہلے سال میں حکومت بلوچستان نے صورتحال کی بہتری کے لئے اچھے حکومتی طرز عمل ، مالی ومعاشی بہتری، روزگار، تعلیم اور صحت کے اداروں کی بہتری، صوبے کے ترقیاتی فنڈز کو عملی طور زمین پر لگانا اور مانیٹرنگ، عام لوگوں کی صحت کے لئے خطرناک امراض کا علاج کے اقدامات کئے، انہوں نے کہا کہ ہم نے پہلے سال میں ایک متوازن بجٹ کی تشکیل اور صحیح وقت پر اس پر عملدرآمد کا آغاز کیا اور بلوچستان کے تحفظ کے لئے لینڈ لیز ایکٹ ، منرل پالیسی، عوام کی صحت کے لئے فوڈ اتھارٹی کا قیام، کھیلوں کے لئے ہر ضلع میں سہولیات اور اسی طرح قانون سازی جیسے اقدامات کئے۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ ہماری مخلوط حکومت نے احتساب، اہلیت، ساکھ اور شفافیت کے بنیادی اصولوں کو پیش نظر رکھتے ہوئے ایک سال کے دوران اہم فیصلے اور اقدامات کئے۔ انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت نے ورثے میں ملنے والے نامساعد حالات کے باوجود دن رات محنت کرکے اس سال کا بجٹ تیار کیا جس میں تعلیم اور صحت کے شعبو ں کو خصوصی اہمیت حاصل ہے، بلوچستان عوامی انڈومنٹ کا قیام عمل میں لایا گیا جس کے ذریعہ غریب اور ضرورت مند عوام کو طبی معاونت فراہم کی جارہی ہے، وزیراعلیٰ نے کہا کہ امن وامان کو مزید بہتر بنانے کے لئے لیویز فورس میں اصلاحات اور اس کی بہتری کے لئے جامع منصوبہ بندی، پولیس کے بجٹ کی بہتری اور شہر میں نئی پولیس فورس کے علاوہ کوئٹہ سیف سٹی جیسے پروگرام شامل ہیں۔ وزیراعلیٰ نے کہ وہ پوری ذمہ داری کے ساتھ کہہ سکتے ہیں موجودہ صوبائی حکومت اپنے مینڈیٹ کے مطابق پوری دیانت داری، دن رات محنت اور لگن کے ساتھ اپنے فرائض انجام دے رہی ہے اور یہ بھی ایک حقیقت ہے کہ ہمیں وفاقی حکومت خاص طور سے وزیراعظم عمران خان کا تعاون حاصل ہے۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ انہیں یقین ہے کہ صوبے کی ترقی، عوام کی خوشحالی اور پاکستان کے استحکام کے لئے ہم اپنے مقاصد حاصل کرلیں گے۔ انہوں نے کہا کہ بحیثیت وزیراعلیٰ یہ ان کی ذمہ داری ہے کہ وہ دن رات محنت، لگن، بہتری، نیک نیتی، شفافیت اور عمدہ کارکردگی کو ہمیشہ اپنائے رکھیں۔ وزیراعلیٰ نے دعا کی کہ اللہ تعالیٰ ہمیں اپنے ان عظیم مقاصد میں کامیابی عطا کرے، قبل ازیں تقریب کے آغاز میں سائرن بجایا گیا اور خاموشی اختیار کی گئی، وزیراعلیٰ نے قومی پرچم سربلند کیا، اس موقع پر اسکولوں کے بچوں اور بچیوں نے قومی ترانہ اور ملی نغمے پیش کئے۔ اسپیکر صوبائی اسمبلی نے بچوں کے لئے ایک لاکھ روپے کے انعام کا اعلان کیا۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*