مذہبی انتہا پسندی عالمی مسئلہ ہے، چین

china

بیجنگ(م ڈ)چین کے آزاد اور کودمختار علاقے سنکیانگ کی علاقائی حکومت کے چئیرمین شہرت ذاکرنے کہا ہے کہ مذہبی انتہا پسندی ایک عالمی مسئلہ ہے، پیشہ وارانہ تعلیم کے سنکیانگ میں مراکز اس پر قابو پانے میں اہم کردار ادا کر رہے ہیں،مراکز ملکی زبان پر مفت کلاسیں دے رہے ہیں،شرعی علوم، پیشہ وارانہ مہارت اور انتہا پسندی کےلئے سے متاثرہ افراد کی ذہن سازی کی جارہی ہے، کچھ لوگ مذہبی انتہا پسندی کو فروغ دیکر کر عوامی جذبات کو ابھارتے ہیں، چینی صدر شی جن پھنگ نے مذہبی انتہا پسندی پر کنٹرول کرنے کےلئے ووکیشنل ٹریننگ انسٹیٹیوٹ کے مراکز قائم کئے ہیں، شی کی قیادت میں ایسے معاملات سے نپٹا جائے گا۔ تفصیلات کے مطابق چین کے آزاد اور کودمختار علاقے سنکیانگ کی علاقائی حکومت کے چئیر مین شہرت ذاکرنے کہا ہے کہ مذہبی انتہا پسندی ایک عالمی مسئلہ ہے، پیشہ وارانہ تعلیم کے سنکیانگ میں مراکز اس پر قابو پانے میں اہم کردار ادا کر رہے ہیں۔ انہوں مے کہا کہ چین کے صدر شی جن پھنگ نے مذہبی انتہا پسندی پر کنٹرول کرنے کےلئے ووکیشنل ٹریننگ انسٹیٹیوٹ کے مراکز قائم کئے ہیں۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*