بلوچستان میں بڑی قربانیوں کے بعد امن آچکا ہے ،آئی جی پولیس بلوچستان

خضدار(خ ن) انسپکٹرجنرل بلوچستان پولیس محسن حسن بٹ نے کہاہے کہ بلوچستان پُرامن صوبہ بن چکاہے، یہاں کاروبار، و تجارت کا سلسلہ پہلے سے زیاد ہ آب و تاب کے ساتھ جاری ہے، صوبے میں قیامِ امن میں دیگر فورسز کی طرح پولیس جوانوں کی قربانی بھی شامل ہے،اس جدوجہد اور قربانیوں کے بعد آج صوبے میں سکون کا ماحول ہے قیام امن کو اسی طرح برقرار رکھنے کے لئے پولیس آئندہ بھی جانفشانی کے ساتھ اپنی ذمہ داری نبھا تی رہے گی اور آئندہ بھی مستقبل کے کسی بھی چیلنج سے نمٹنے کے لئے پولیس کے بہادر جوان کمر بستہ اور تیار ہیں، ان خیالات کا اظہار انہوں نے ڈی آئی جی آفس خضدار میں پولیس دربار سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پرڈی آئی جی خضدار رینج آغامحمد یوسف، ایس پی خضدار سید جاوید غرشین، ایس پی لسبیلہ محمد رمضان ودیگر پولیس آفیسرز اور ایس ایچ اوز موجود تھے۔ اس سے قبل ڈی پی او خضدارسید جاوید غرشین نے آئی جی پولیس بلوچستان محسن حسن بٹ کو خضدارمیں پولیس فورس کی تعداد، اہداف اور ضروریات سے متعلق بریفنگ دی، اور ضلع خضدار میں پولیس محکمہ کو درپیش مسائل کے بارے میں انہیں آگاہ کیا۔ پولیس دربارمیں شریک پولیس اہلکاروں نے اپنے پروموشن و دیگر مسائل کے حوالے سے آئی جی پولیس کو بتایا۔ جنہیں آئی جی نے مروجہ طریقہ کار کے تحت حل کرنے کی یقین دھانی کرادی۔ آئی جی پولیس بلوچستان محسن حسن بٹ نے کہاکہ بلوچستان میں بڑی قربانیوں کے بعد اب امن آچکا ہے اور صوبے میں اس وقت امن و سکون کا ماحول ہے، لوگ آزادی کے ساتھ تجارت کررہے ہیں سفر کررہے ہیں، سیاح بڑی تعداد میں بلوچستان آتے ہیں، اس امن میں دیگر سیکورٹی فورسز کی طرح بلوچستان پولیس کی بھی بڑی قربانی شامل ہے، انہوں نے پولیس کے جوانوں کو مخاطب کرتے ہوئے کہاکہ جو وردی آپ نے پہنی ہوئی ہے اس وردی کے پہننے کے بعد پولیس اہلکار پر بہت بڑی ذمہ داری عائد ہوتی ہے،اس وردی کو تکبر اور رعونت نہ سمجھا جائے بلکہ اس وردی کو پہننے کے بعد پولیس والے اپنے آپ کو خادم سمجھ کر عوام کی خدمت کریں، دیانتداری اور فرض شناسی کے ساتھ اپنی ذمہ داری نبہانے سے نہ صرف پولیس والے کی عزت و توقیر اس دنیاءمیں بڑھے گی بلکہ آخرت میں بھی اللہ تعالیٰ کے ہاں اس کا بہت بڑا اجر ہے۔ آئی جی بلوچستان محسن حسن بٹ نے کہاکہ پولیس اہلکار اپنی صحت کا خیال رکھیں، تندرست و چاک و چوبند رہیں، جب بھی انہیں کسی مشن پر بھیجاجائے تو وہ بغیر کسی سستی کے اپنے آپ کوفوری طور پر پیش کردیں۔ پولیس یا پولیس فورس کے اسٹاف کے جتنے بھی مسائل ہیں انہیں بتدریج حل کیا جائیگا۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*