ناقص پرفارمنس ،اسد شفیق اور اظہر علی کے مستقبل پر سوالیہ نشان

جوہانسبرگ(سپورٹس نیوز)بیٹنگ لائن کی ناقص کارکردگی کے بعد پاکستانی ٹیم کو ٹیسٹ سیریز میں مسلسل تیسری شکست کا سامنا ہے اور جنوبی افریقا سیریز میں وائٹ واش کی جانب بڑ رہا ہے۔2013کے بعد پاکستانی ٹیم کو مسلسل دوسری سیریز میں جنوبی افریقا کے ہاتھوں کلین سوئپ کا امکان ہے۔ جنوبی افریقا کے خلاف ٹیسٹ سیریز میں پاکستانی کرکٹ ٹیم کے سب سے تجربہ کاربیٹسمین اور مضبوط ستون تصور کیے جانے والے اظہر علی اور اسد شفیق بری طرح ناکام رہے ہیں اور دونوں کی کارکردگی نے ان کے مستقبل پر سوالیہ نشان لگادیا ہے۔سیریز میں بیٹنگ لائن کی کارکردگی نے بیٹسمینوں کی تکنیک کی قلعی کھول دی ہے اور ساڑھے چار سال سے بیٹنگ کوچ گرانٹ فلاور کی اہلیت پر بھی سوالات کھڑے کر دیے ہیں۔33سالہ اظہر علی اپنے 73ویں ٹیسٹ کی پہلی اننگز میں صفر پر آوٹ ہوئے۔ دوسرے میچ میں انہوں نے مسلسل دوسری اننگز میں کھاتا کھولے بغیر وکٹ گنوادی۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*