امن و امان خراب کرنیوالوں سے سختی سے نمٹا جائیگا،علاﺅ الدین مری

کوئٹہ(خ ن)نگران وزیراعلیٰ بلوچستان علا¶الدین مری نے کہا ہے کہ عوام کے جان ومال کے تحفظ اور عام انتخابات کے دوران امن وامان برقرار رکھنے میں کسی قسم کی کوتاہی برداشت نہیں کی جائے گی۔ سماج دشمن عناصر اور امن و امان خراب کرنے والوں سے سختی سے نمٹا جائے گا ۔ پولیس اورقانون نافذ کرنے والے ادارے امن وامان کی صورتحال کی مزید بہتری کے لئے مربوط حکمت عملی وضع کرتے ہوئے اس پر عملدرآمد کریںاور انتخابات کے انعقاد کے لئے م¶ثر سیکیورٹی پلان تیار کیا جائے ان خیالات کا اظہار انہوں نے آئی جی پولیس محسن بٹ سے بات چیت کرتے ہوئے کیا جنہوں نے بدھ کے روز ان سے یہاں ملاقات کی۔ آئی جی پولیس نے وزیراعلیٰ کو امن وامان کی مجموعی صورتحال، انتخابات کے لئے مجوزہ سیکیورٹی پلان کے علاوہ مستونگ کے علاقے دشت میں دہشت گردوں کے خلاف سی ٹی ڈی اور دیگر سیکیورٹی اداروں کی مشترکہ کامیاب کاروائی کے بارے میںتفصیلات سے آگاہ کیا۔ وزیراعلیٰ نے دہشت گردوں کے خلاف کامیاب کاروائی کرنے پر پولیس اور سیکیورٹی اداروں کی کارکردگی کو سراہتے ہوئے اسے دہشت گردی کے خاتمے میں اہم پیشرفت قرار دیا۔ انہوں نے دہشت گردی کی جنگ میں سیکیورٹی فورسز کی قربانیوں کی تعریف کرتے ہوئے اس یقین کا اظہار کیا کہ ان قربانیوں کی بدولت جلد صوبے میں مکمل امن قائم ہوگا وزیراعلیٰ نے مزید کہا کہ پرامن ماحول میں عام انتخابات کا انعقاد نگران حکومت کی اولین ذمہ داری ہے اور حکومت اپنی اس ذمہ داری سے احسن طریقے سے عہدہ برا ہونے کے لئے پوری طرح پر عزم ہے۔ آئی جی پولیس نے وزیراعلیٰ کو یقین دلایا کہ ان کی رہنمائی میں صوبے میں پرامن ماحول میں انتخابات کے انعقاد کو یقینی بنایا جائے گا دریں اثناءنگران وزیر اعلیٰ بلوچستان علا¶ الدین مری نے کہا ہے کہ نگران حکومت آزادانہ ، منصفانہ اور بروقت انتخابات کو یقینی بنانے کے لئے پر عزم ہے ۔ انہوںنے مختلف وفود سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ حکومت اپنے مینڈیٹ کے مطابق اپنا حق رائے دہی پر امن اور خوشگوار ماحول میں استعمال کرنے کیلئے عوام کو تمام ممکنہ سہولیات فراہم کرے گی ۔ وزیر اعلیٰ نے کہا کہ ملک و قوم کی تعمیر و ترقی میں انتخابی عمل کو کلیدی اہمیت حاصل ہوتی ہے کیونکہ اسی طرح عوام اپنے مستقبل کا فیصلہ کرتے ہیں اور ملک کی باگ ڈور اپنے ضمیر اور ضروریات کے مطابق اپنے اہل نمائندوں کے سپرد کرتے ہیں انہوںنے کہا کہ آئین کے مطابق اپنے نمائندے آزادانہ طور پر منتخب کرنا عوام کا بنیادی حق ہے ۔ اور نگران حکومت اس حق کا بھر پور تحفظ کرے گی انہوں نے کہا کہ آزادانہ اور منصفانہ انتخابات کے انعقاد کو یقینی بنانے کیلئے پر امن اور خوشگوار فضا اولین شرط ہے اور نگران حکومت متعلقہ اداروں کے تعاون سے امن و امان برقرار رکھنے کو ہر قیمت پر یقینی بنائے گی انہوںنے تمام سیاسی جماعتوں معززین اور مختلف مکاتب فکر سے تعلق رکھنے والے علماءکرام سے بھی اپیل کی کہ وہ اپنی تاریخی ذمہ داریاں نبھائیں اور امن اور خوشگوار ماحول کو برقرار رکھنے میں اپنا کردارادا کرنے کے ساتھ ساتھ حکومتی اقدامات میں بھر پور تعاون کریں دریں اثناءنگران وزیراعلیٰ بلوچستان علا¶الدین مری نے کہا ہے کہ وسائل کے درست استعمال سے ہی ہم صوبے سے غربت اور پسماندگی کا خاتمہ کیا جاسکتا ہے، صوبے کی معیشت کو بہتر بنانے کے لئے ہمیں ایسے تمام شعبوں کو جدید خطوط پر استوار کرنا ہوگا جو صوبے کے لئے زیادہ سے زیادہ ریونیو پیدا کرسکیں، نئے منصوبوں کے ساتھ ساتھ جاری منصوبوں کی بروقت تکمیل کو یقینی بنایا جائے تاکہ لوگوں کو ان منصوبوں سے زیادہ اور بروقت فائدہ حاصل ہوسکے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے بدھ کے روز محکمہ منصوبہ بندی وترقیات کی جانب سے صوبے میں جاری اسکیمات، منصوبوں کی پیشرفت سمیت مختلف امور سے متعلق اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا۔ چیف سیکریٹری بلوچستان ڈاکٹر اختر نذیر، ایڈیشنل چیف سیکریٹری منصوبہ بندی و ترقیات حافظ عبدالباسط،سیکریٹری خزانہ قمر مسعود اور دیگر متعلقہ حکام بھی اجلاس میں موجود تھے۔ ایڈیشنل چیف سیکریٹری حافظ عبدالباسط نے اجلاس کو پی ایس ڈی پی 2018ءمیں شامل اسکیمات، فنڈز کے اجرائ، اسکیمات کی پیشرفت سمیت صوبے میں جاری میگا پروجیکٹس اور سی پیک میں شامل مختلف منصوبوں کے بارے میں تفصیلی بریفنگ دی۔ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعلیٰ نے کہا کہ بلوچستان قدرتی وسائل، وسیع رقبہ اور طویل ساحل رکھنے والا انتہائی اہمیت کا حامل صوبہ ہے، تاہم ہمیں اپنے وسائل کے درست استعمال کو یقینی بنانے کے ساتھ ساتھ صوبے کے ان تمام شعبوں پر زیادہ توجہ دینا ہوگی جن سے صوبہ زیادہ سے زیادہ ریونیو حاصل کرسکے۔ وزیراعلیٰ نے صوبے میں بچوں اور ما¶ں کی شرح اموات پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے ہدایت کی کہ صوبے کے تمام دور دراز علاقوں میں صحت و علاج معالجے کی سہولیات کی فراہمی اورصحت سے متعلق اسکیمات کی بروقت تکمیل کو یقینی بنایا جائے۔ وزیراعلیٰ نے ہدایت کی کہ صوبے میں جاری اسکیمات کی بروقت تکمیل سے وسائل کے ضیاع کو بچایا جاسکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ماہی گیری کے شعبہ کو ترقی دینے سے غیر معمولی زرمبادلہ کمایا جاسکتا ہے۔ وزیراعلیٰ نے ہدایت کی کہ بلوچستان کی سمندری حدود میں غیرقانونی طور پر ماہی گیری کرنے والے ٹرالرز کی مکمل حوصلہ شکنی کی جائے،بلوچستان میںسرمایہ کاری کے وسیع مواقع موجود ہیں جبکہ صوبے میں امن وامان کی صورتحال بھی تسلی بخش ہے، ہمیں زیادہ سے زیادہ تکنیکی تربیت یافتہ افرادی قوت کی ضرورت ہوگی۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ ہماری بھرپور کوشش ہونی چاہئے کہ قلیل مدت میں عوام کی زیادہ سے زیادہ خدمت کرسکیں۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*