تازہ ترین

ہم سیاست کو عبادت سمجھتے ہیں،محمود خان اچکزئی

Mehmood_Khan_Achakzai

اسلام آباد (این این آئی) ہم سیاست کو عبادت سمجھتے ہیں لفظ سیاست کو دروغ گوہی سے تعبیرکرنا قبضہ گر انگریز حکمرانوں نے اپنے ناروا خارجی قبضے کو جاری رکھنے کیلئے شروع کیا تھا۔ پی ڈی ایم ملک کو آئینی،سیاسی، معاشی اور معاشرتی بحرانوں، خارجی تنہائی،عوام کو تاریخ کی بدترین مہنگائی سے چھٹکارا اورملک میں آئین کی بالادستی، پارلیمنٹ کی خودمختاری،عدلیہ ومیڈیا کی آزادی، جمہور کی حکمرانی کیلئے شفاف اور اسٹیبلشمنٹ کی مداخلت کے بغیر انتخابات کو ضروری سمجھتی ہے، خطے پر جنگ کے خطرناک بادل منڈلا رہے ہیں ہمارے فہم کا امتحان ہے،اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل نے افغانستان میں پاکستان،ایران اور تمام ہمسایوں کی مداخلت کو روکنا ہوگااور افغانستان کی استقلال کی ضمانت دینی ہوگی۔ ان خیالات کا اظہار پشتونخواملی عوامی پارٹی کے چیئرمین پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ کے مرکزی نائب صدر محمود خان اچکزئی نے اسلام آبادپشتونخوا اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن نمل اور دیگر یونیورسٹیوں کے طلباء سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر پارٹی کے سینئر ڈپٹی چیئرمین مختار خان یوسفزئی، پارٹی کے مرکزی سیکرٹری عبدالرحیم زیارتوال بھی موجود تھے۔ انہو ں نے کہا کہ فرنگی سامراج نے برصغیر اور پشتونخوا وطن کے عوام میں لفظ سیاست کو چال بازی،دروغ گوہی کے تعبیر کے طور پر پیش کرتے رہے تاکہ برصغیر اور پشتونخوا وطن میں اپنے قبضے کو جاری رکھ سکیں۔ ہم سیاست کوعبادت سمجھتے ہیں سیاست قومی اور عوامی خدمت کا نام ہے۔ ہم نے سیاسی خدمت کے ذریعے اپنے محکوم اور مظلوم عوام کو اپنے حقوق کا شعور دیا ہے اور اپنے مثبت سیاسی جمہوری جدوجہد سے عوام کے قومی اور عوامی حقوق انہیں حاصل کرکے دینگے۔ ملک کو آئینی،سیاسی،معاشی اور معاشرتی بحرانوں سے نکالنے، خارجی تنہائی کا خاتمہ کرنے،ملک کے 22کروڑ عوام کو بدترین مہنگائی سے چھٹکارے، ملک میں آئین کی بالادستی، پارلیمنٹ کی خودمختاری،عدلیہ ومیڈیا کی آزادی، جمہور کی حکمرانی کیلئے شفاف غیر جانبدار اور اسٹیبلشمنٹ کی مداخلت کے بغیر انتخابات کو ضروری سمجھتے ہیں۔ ہمارے خطے پر جنگ کے خطرناک بادل منڈلارہے ہیں ہمارے فہم کا امتحان ہے ذرا سی غلطی سے جنگ بھڑک سکتی ہے۔ آج بھی ایسی ناعقوبت اندیش موجود ہیں جو افغانستان کے استقلال، ملی حاکمیت اور ارضی تمامیت کیخلاف سازشوں میں مصروف ہیں ان سازشوں کا خاتمہ اقوام متحدہ اور دنیا کے سیاسی جمہوری قوتوں کی ذمہ داری ہے۔انہوں نے کہا کہ نااہل ناکام سلیکٹڈ اور مسلط حکمرانوں نے ملک کو بدترین مہنگائی،سخت ترین بیروزگاری سے دوچار کیاہے۔روپے کی قدر میں مسلسل کمی کاسلسلہ بدستور جاری ہے جس کی تدارک کانوٹس لینا اور اس سے عوام کو نجات دلانا ملک کی سیاسی جمہوری وطن دوست قوتوں کی ذمہ داری ہے اور اس بحرانی صورتحال کا خاتمہ کرنا ہوگا۔ پشتون کو دہشتگرد پیش کرنیوالے عناصر اور قوتیں دہشتگردی میں ملوث رہے ہیں اور پشتونوں پر دہشتگردی مسلط کی گئی ہے پشتون دہشتگردنہیں البتہ دہشتگردی کے شکار ہوئے ہیں جس میں لاکھوں پشتون اپنی زندگی سے ہاتھ دھو بیٹھے ہیں۔

 

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*