تازہ ترین

ہم اس کٹھن وقت میں اپنے کشمیری بھائیوں کے شانہ بشانہ کھڑے ہیں ،جام کمال

کوئٹہ(خ ن)وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال خان نے کہا ہے کہ ہم اس کٹھن وقت میں اپنے کشمیری بھائیوں کے شانہ بشانہ کھڑے ہیں، آج قوم کا ہر بچہ، جوان اور بوڑھا بھی یہی پیغام دے رہا ہے کہ بھارتی مظالم وبربریت کی اس مشکل گھڑی میں وہ اپنے کشمیری بھائیوں کو نہیں بھولا، ہم دنیا کو یہ واضح پیغام دینا چاہتے ہیں کہ کشمیر پاکستان کی شہ رگ ہے اور کشمیریوں اور پاکستانیوں کا رشتہ روز اول سے قائم ہے جسے کسی صورت ختم نہیں کیا جاسکتا، ان خیالات کا اظہارانہوں نے کشمیریوں سے اظہاریکجہتی کے لئے نکالی گئی ایک بہت بڑی ریلی سے خطاب کرتے ہوئے کیا،گورنر بلوچستان جسٹس ریٹائرڈامان اللہ خان یاسین زئی بھی ریلی میں شریک تھے جبکہ دیگر شرکاءمیں اسپیکر صوبائی اسمبلی میر عبدالقدوس بزنجو، ڈپٹی اسپیکر صوبائی اسمبلی، کابینہ کے اراکین، اراکین صوبائی اسمبلی اور عوام کی کثیر تعداد شامل تھی، ریلی کے آغاز سے قبل تمام ٹریفک کی روانی معطل کرکے سائرن بجا کر چند لمحات کے لئے خاموشی اختیار کی گئی جس کے بعد پاکستان اور کشمیر کا قومی ترانہ پڑھاگیا، بعدازاں صوبائی اسمبلی تا سیرینا چوک وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال خان کی زیرقیادت کشمیری عوام کے ساتھ اظہار یکجہتی کے لئے ریلی نکالی گئی، ریلی کے شرکاءنے کشمیر بنے گا پاکستان کے فلک شگاف نعرے بلندکئے، ریلی سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعلیٰ نے کہا کہ بھارتی فوج کی طرف سے کی جانے والی انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں کا اقوام متحدہ نوٹس لے، اقوام متحدہ کی قرارداد کی روشنی میں بھارت کشمیریوں کے حق خودارادیت کو تسلیم کرے، انہوں نے کہا کہ ستر سال سے زائد کے عرصے پر محیط کشمیریوں کی نسل کشی اب ختم ہونی چاہئے،انہوں نے کہا کہ جب کشمیری عوام کی بات آتی ہے تو پورا پاکستان متحد ہوجاتا ہے، ہمارے دشمن یہ بات نہ بھولیں کہ کشمیریوں پر ظلم وجبر کے خلاف پوری قوم یکجہت ہے، مودی سرکار اور ہندو انتہا پسند آر ایس ایس نے دنیا کے سامنے واضح کردیا کہ بھارتی جمہوریت صرف لفاظی کی حد تک محدود ہے، بھارت جمہوریت کا علمبردار بنتا ہے لیکن موجودہ بھارتی حکومت خود بھارت میں بھی سنگین انسانی خلاف ورزیوں میں ملوث ہے جس کی وجہ سے آج بھارت کے اندر سے بھی ہندو انتہا پسند سوچ کے خلاف آواز اٹھ رہی ہے، بھارت کشمیر میں اب تک دو لاکھ سے زائد کشمیریوں کو شہید کرچکا ہے اور بھارتی فوج سینکڑوں خواتین کی عصمت دری کی بھی مرتکب ہوئی ہے، بھارت یہ بات سمجھ لے کہ ظلم وجبر، پیلٹ گنز کا استعمال اور کشمیری نوجوانوں کی جبری گمشدگی سے آزادی اور حق خودارادیت کی آواز کو دبایا نہیں جاسکتا۔وزیراعلیٰ نے کہا کہ ہم سب کی ذمہ داری ہے کہ کشمیریوں پر ظلم کی اس گھڑی میں ان کا بھرپور ساتھ دیں تاکہ دنیا کے سامنے بھارت کا ریاستی جبر نمایاں ہوسکے اور عالمی سطح پر کشمیریوں کے حق خودارادیت کو تسلیم کیا جائے۔ واضح رہے کہ وزیراعظم عمران خان کی ہدایت کے تحت ملک کے دیگر حصوں کی طرح صوبائی دارالحکومت کوئٹہ سمیت صوبہ بھر میں کشمیری عوام کے ساتھ اظہار یکجہتی کے لئے ریلیوں کا انعقاد کیا گیا جس میں بلوچستان کے عوام نے بھرپور شرکت کرکے دنیا کو واضح پیغام دیا کہ کشمیری تنہا نہیں بلکہ پاکستانی قوم ان کے ساتھ کھڑی ہے۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*