تازہ ترین

ہمیں ایک دوسرے کےساتھ میچز کھیلنے چاہئیں، پاکستانی شائقین

اسلام آباد (سپورٹس ڈیسک)پاکستان اور بھارت کے شائقین نے دونوں ایشیائی ممالک سے امن کے قیام اور دونوں ٹیموں میں مزید کرکٹ میچوں کے انعقاد کا مطالبہ کیا۔تفصیلات کے مطابق دونوں ممالک کے درمیان میچوں میں شائقین کی دلچسپی کے باوجود دونوں ٹیموں میں انتہائی کم میچ کھیلے گئے اور 2007 سے اب تک ایک بھی مکمل ٹی20 سیریز نہیں کھیلی گئی۔2012-13 میں دونوں ٹیموں کے درمیان آخری ٹی20 سیریز کھیلی گئی تھی لیکن بھارت میں وزیراعظم نریندر مودی کی حکومت کے برسر اقتدار آنے کے بعد سے دونوں ممالک کے درمیان تعلقات ہر گزرتے دن کے ساتھ خراب ہوتے رہے ہیں اور اب دونوں کے درمیان صرف آئی سی سی مقابلوں میں میچز کھیلے جاتے ہیں۔متحدہ عرب امارات میں کام کرنے والے پاکستانی شہری محمد اشرف نے غیر ملکی میڈیا گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ہمیں ایک دوسرے کے ساتھ زیادہ میچز کھیلنے چاہئیں، دونوں ٹیموں کو کرکٹ کے میدان پر کھیلتے ہوئے دیکھنا بہت اچھا لگتا ہے۔انہوں نے کہا کہ ویرات کوہلی بمقابلہ حسن علی، کیا مقابلہ ہو گا! سیاستدانوں کو اپنے مفادات کےلئے یہ سب کچھ خراب نہیں کرنا چاہیے، انہیں کرکٹ کھیلنے دیں، میں دونوں ممالک کے درمیان امن کے لیے دعاگو ہوں۔پاکستان اور بھارت کے درمیان آخری میچ مانچسٹر میں 2019 میں ورلڈ کپ کے دوران کھیلا گیا تھا۔ابوظبی میں 2017 سے کام کرنے والی بھارتی شائق پنکھوری راج مہتا نے کہا کہ جیسے ہی ٹکٹ کو آن لائن فروخت کے لیے پیش کیا گیا تو میں اسے خرید لیا تھا، ہماری نگاہیں ان مقابلوں پر مرکوز ہوتی ہیں خصوصاً جب ہم اپنے گھر سے دور رہتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ میں جانتی ہوں کہ پاکستان کے ساتھ ہمارے تعلقات خراب چلتے رہتے ہیں اور ہمیں ان سے مسئلہ ہے، لیکن سیاستدانوں کو اسے حل کرنا چاہیے، میں اپنے شوہر کے ساتھ کھیل سے لطف اندوز ہوں گی۔اس میچ کے ٹکٹ آن لائن فروخت کے لیے پیش ہونے کے چند گھنٹے بعد ہی بک گئے تھے اور کچھ آن لائن پلیٹ فارم حد سے زیادہ بلند قیمتوں پر انہی ٹکٹوں کو دوبارہ فروخت کررہی ہیں۔دبئی میں جوش و خروش قابل دید رہا تاہم کچھ لوگ دونوں ممالک کے درمیان کشیدگی کی وجہ سے میچ کے انعقاد کو درست نہیں سمجھتے۔دبئی میں نمائش میں شرکت کے لیے آنے والے بھارتی شہری رگھوویر سنگھ نے میچ کو بے معنی قرار دیتے ہوئے کہا کہ سرحد پر لوگ مارے جا رہے ہیں اور ہم کرکٹ کھیل رہے ہیں۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*