تازہ ترین

کوئٹہ شہر کی تعمیر و ترقی کی ضروریات دیکھتے ہوئے منصوبے مرتب کئے جائیں، جام کمال

کوئٹہ(خ ن)وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال خان کی زیر صدارت پی ایس ڈی پی 22-2021 کے لیے کوئٹہ ڈویڑن کی مجوزہ ترقیاتی اسکیموں اور جنوبی بلوچستان ترقیاتی پروگرام پر پیشرفت سے متعلق اجلاس منعقد ہوا۔اجلاس میں ایڈیشنل چیف سیکریٹری منصوبہ بندی و ترقیات، وزیراعلی کے پرنسپل سیکرٹری، سیکرٹری بلڈنگ، سیکرٹری آبپاشی، سیکرٹری کھیل، سیکرٹری لوکل گورنمنٹ، سیکرٹری اربن پلاننگ،اسپیشل سیکرٹری فنانس، سیکرٹری اطلاعات اور دیگر متعلقہ حکام نے شرکت کی۔ اجلاس کو ایڈیشنل چیف سیکریٹری منصوبہ بندی و ترقیات نے جنوبی بلوچستان ترقیاتی پروگرام پر پیشرفت سے متعلق بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ منصوبہ میں 199 ترقیاتی منصوبے شامل ہیں جس میں سے 119 نئے اور 80 جاری ترقیاتی منصوبے شامل کیے گئے ہیں۔ ترقیاتی پیکیج کے تحت صحت، انفراسٹرکچر، ڈیمز، سٹرکوں کی تعمیر سمیت دیگر مفاد عامہ کے منصوبوں پر توجہ دی گئی ہے۔اس موقع پر کمشنر کوئٹہ کی جانب سے کوئٹہ ڈویڑن کی نئے مالی سال کےلئے مجوزہ ترقیاتی اسکیمات کے حوالے سے تفصیلی بریفنگ بھی دی گئی اور بتایا گیا کہ نئے سالانہ ترقیاتی پروگرام میں 5 بڑے اسپورٹس کمپلیکس اور منی اسپورٹس کمپلیکس تعمیر کرنے کا منصوبہ تجویز کیا گیا ہے۔اس طرح کوئٹہ کے مختلف ایریاز میں تفریحی پارک بنانے کا مجوزہ منصوبہ نئی پی ایس ڈی پی میں شامل کیا جائے گا۔ انہوں نے مزید بتایا کہ اسپن کاریز میں 15ایکڑز پر مشتمل تفریحی پارک کے قیام کا منصوبہ تجویز کیا گیا ہے۔ اس کے علاوہ کوئٹہ میں اربن فاریسٹ پارک تعمیر کیا جائے گا۔ آئندہ مالی سال کےلئے کچلاک میں پبلک پارک کے قیام کا منصوبہ تجویز کیا گیا ہے۔ کمشنر کوئٹہ نے بتایا کہ پشین، بوستان، خانوزئی میں بھی پارک قائم کرنے کا منصوبہ نئی پی ایس ڈی پی میں تجویز کیا گیا ہے اور نئی پی ایس ڈی پی میں سریاب اور کچلاک میں ایجوکیشن اور ہیلتھ اینکلوز کے قیام کا منصوبہ تجویز کیا گیا ہے۔ اسی طرح سڑکوں اور صحت کی بہتری کے منصوبے تیار کئے گئے ہیں۔آئندہ مالی سال کے لئے فوڈ اسٹریٹ اور اسٹریٹ لائٹس کی تنصیب کا منصوبے تجویز کیے گئے ہیں۔ جبکہ کوئٹہ پنجپائی روڈ کی تعمیر کا منصوبہ بنایا گیا ہے۔ وزیر اعلی بلوچستان نے اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ کوئٹہ شہر کی تعمیر و ترقی کی ضروریات کو دیکھتے ہو? منصوبے مرتب کئے جائیں۔شہریوں کو تفریحی سہولیات کی فراہمی کے لیے تمام دستیاب وسائل کو بروئے کار لایا جائے۔ وزیراعلی نے ہدایت کی کہ نئی پی ایس ڈی پی میں کوئٹہ شہر کی تعمیر وترقی کے لیے جامع حکمت عملی کے تحت ڈیولپمنٹ پلان مرتب کیا جائے۔وزیراعلی بلوچستان نے میٹرو پولیٹن اور کارپوریشنز کو اپ گریڈ کرنے کی بھی ہدایت کی۔ وزیراعلی نے کہا کہ کوئٹہ شہر میں مزید کالجز کے قیام کا منصوبہ نئی پی ایس ڈی پی میں شامل کیا جائے۔ کوئٹہ شہر ہم سب کا گھر ہے اسکی مربوط اور متوازن ترقی کیلئے ٹھوس اقدامات کیے جائیں۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*