تازہ ترین

کمز ور طبقے کو نظر اند از کرنیو الا ملک تر قی نہیں کر سکتا

وزیر اعظم عمر ان خان نے گذشتہ روز ایک تقر یب سے خطا ب اور اسلامی نظر یا تی کو نسل کے چیئر مین اور ارا کین کے وفد سے با ت چیت کر تے ہوئے کہا ہے کہ کمز ور طبقے کو نظر اند از کرنیو الا ملک تر قی نہیں کر سکتا ریا ست مد ینہ کا قیام ایک جہد مسلسل سے عبا ر ت ہے میں نے صر ف غر یبو ں کی خد مت کیلئے سیا ست میں قد م رکھا ہے ریا ست مد ینہ کے دو سنہر ے اصول انصا ف اور عوامی فلا ح ہما ری تر قی کا ضا من بن سکتے ہیں بد قسمتی سے پاکستان کو حقیقی اسلامی فلا حی ریا ست بنا نے کے با ر ے میں کبھی کسی لیڈ ر نے نہیں سو چا کو رونا کے دوران احسا س پر و گر ام کو چو تھا کا میا ب پر و گر ام سمجھا گیا احسا س پر و گر ام کی ٹیم کو بہتر ین کا ر کر د گی پر خر اج تحسین پیش کر تا ہو ں احسا س پر و گر ام کی کا میا بی کی وجہ شفا قیت ہے۔
وزیر اعظم عمر ان خان کا مذکو رہ بیان حیر ان کن معلو م ہو تا ہے کیو نکہ وہ کہتے ہیں کہ انہوں نے غر یبو ں کی خد مت کیلئے سیا ست میں قد م رکھا ہے یہاں تو معا ملہ اس کے با لکل بر عکس جا رہا ہے یہاں غر یبو ں کی خد مت نہیں بلکہ ان کا معا شی قتل کیا جا رہا ہے اس وقت ملک میںتا ریخی مہنگائی ہے جس کی وجہ سے غر یب دو وقت کی رو ٹی کے حصول کے لیے شد ید پر یشا ن ہے اس کو کما نے کے لالے پڑ ے ہوئے ہیں حکومت کو ان کو کسی بھی قسم کی کو ئی ریلیف نہیں دے پا رہی بلکہ مو جو دہ حکومت جب سے بر سر اقتدار آئی ہے اس عر صے میں ملک میں اتنی زیادہ مہنگا ئی ہوئی ہے جتنی شا ید ملک کی تا ریخ میں کبھی نہیں ہوئی اس وقت گھمبیر صو ر تحال یہ ہے کہ یہ مہنگائی رکنے کا نام نہیں لے رہی بلکہ تیز ی سے مز ید بڑھ رہی ہے جو کہ بڑی تشو یش کی با ت ہے جہاں تک کمز ور طبقے کو نظر اند از کرنے والے ملک کی تر قی نہ ہونے والی با ت ہے تو اس وقت ظا ہر ی طو ر پر یہی نظر آرہی ہے کہ یہاں کمز ور طبقہ نظر اند از ہو رہا ہے کیونکہ ان کی معا شی مشکلا ت میں بہت زیا دہ اضا فہ ہو چکا ہے اور اگر یہ ایسا ہی ہو تا رہا کمز ور طبقہ مز ید دب جا ئے گا جو بلا شبہ تشو یشنا ک با ت ہے اور اگر یہ طبقہ دب گیا تو پھر ملک تر قی نہیں کر سکے گا ۔
وزیر اعظم عمر ان خان نے احسا س پر و گر ام کی کا رکر د گی کو جو خر اج تحسین پیش کیا ہے تو اس سلسلے میں اس پر و گر ام کو مز ید وسعت دینے کی ضرورت ہے کیو نکہ اس سے غر یب طبقے کی بھر پو ر امد اد کی جا سکتی ہے اس لیے اس میں شفا فیت لا تے ہوئے اصل حقد ار و ں کو مد نظر رکھا جا ئے جو کہ نہا یت نا گز یر ہے ۔
اس سے قبل کسی لیڈ رکا پاکستان کو حقیقی اسلامی ریا ست بنا نے کے با رے نہ سو چنا اچھی با ت نہیں ہے کیو نکہ اس ملک کی بنیا د ہی اسلام کے نا م پر رکھی گئی تھی مگر اب تک اس میں اسلامی نظام کا نا فذ نہیں ہو سکا اس لیے اب وزیر اعظم عمر ان خان کو ملک میں اسلامی ریا ست بنا نے کیلئے اقد اما ت کرنے چا ہئیں کیونکہ انہوں نے اقتد ار میں آنے کے بعد اس کا وعدہ بھی کیا ہے جو ان کو پو ر ا کرنا چا ہیئے اگر وہ اس میں کامیا ب ہو جا تے ہیں تو یہ بلا شبہ ان کی بہت بڑی کا میا بی ہو گی۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*