تازہ ترین

کشمیر کےلئے ہر حد تک جائینگے فوج تیار ہے ،وزیراعظم کا دوٹوک اعلان

PM Imran Khan

وزیراعظم عمران خان نے دو ٹو ک اعلان کرتے ہوئے کہا ہے کہ کشمیر کےلئے ہر حد تک جائیں گے ،فوج تیار ہے ،دنیا ساتھ دے یا نہیں ہم آخری سانس تک کشمیر کے ساتھ ہیں،اگر بات جنگ کی طرف جاتی ہے، تو صرف ہم پر ہی نہیں بلکہ دنیا پر اثرات ہوں گے، میڈیا کا شکریہ ،عوام یک جان ہو کر کھڑی ہومیں کشمیر کا سفیر ہوں،پاکستان کی کشمیر پالیسی پر فیصلہ کن وقت آگیا ہے اور مودی کی غلطی سے کشمیر کے لوگوں کو آزاد ہونے کا تاریخی موقع مل گیا ہے، اقوام متحدہ بدقسمتی سے طاقتوروں کا ساتھ دیتا ہے، اقوام متحدہ سے کہتا ہوں کہ سوا ارب مسلمان آپ کی طرف دیکھ رہے ہیں اور بڑے بڑے ممالک کی طرف بھی جو صرف اپنی مارکیٹ کی طرف دیکھ رہے ہیں، دنیا جان لے گی کہ دونوں ممالک ایٹمی ممالک ہیں۔پیر کو قوم سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ آج صرف کشمیر پر بات کرنا چاہتا ہوں، قوم کو بتانا چاہتا ہوں کہ اب تک حکومت نے کیا کیا ہے اور کیا کرنے جا رہی ہے، کشمیر پالیسی کے حوالے سے فیصلہ کن مرحلہ آ گیا ہے، ہماری حکومت نے آغاز میں عوامی مسائل اور فلاح و بہبود ترجیحات تھی، پاکستان کے جو مسائل تھے جو مسائل ہندوستان کے ملکی مسائل ہیں، ہم نے ڑوسیوں کے ساتھ دوستی کا ہاتھ بڑھانے کی کوشش کی، افغان امن عمل میں کردار ادا کیا، بھارت سے کہا کہ اگر وہ ایک قوم آگے آئیں تو پاکستان دو قدم آگے بڑھے گا، ہماری کوشش تھی کہ سب سے دوستی کی، پاکستان کی حکومت بھارت کے الیکشن کا انتظار کیا، لیکن انہوں نے پھر اور واقعے کو لے کر پاکستان کو کہا کہ پاکستان دہشت گردی کراتا ہے، بھارت چاہتا تھا کہ سارا ملبہ پاکستان پر ڈالے، الیکشن کے بعد بھارت نے ایف اے ٹی ایف میں پاکستان کے خلاف لابنگ کی اور ہماری معیشت کو تباہ کرنا چاہا، تب پاکستان نے اس سے بات کرنا چھوڑ دی، بھارت نے پکستان کو بلیک لسٹ کرانے کی کوشش کی،بھارت نے سیکولر ازم کو ختم کر دیا ہے، بھارت نے 5 اگست کو بتا یا کہ ہندوستان صرف ہندوﺅں کا ہے، بھارت میں آر ایس ایس کا نظریہ مودی لے کر چل رہا ہے، بھارت نے پاکستان پر دہشت گردی کے الزامات لگائے، کشمیر پر مذاکرات کی دعوت پاکستان نے بھارت کو دی، بی جے پی کی انتخابی مہم مسلمانوں کے خلاف تھی، پاکستان کا نظریہ اسلام کا اور امن کا ہے، بھارت کا نظریہ آر ایس ایس کا ہے، نریندر مودی نے بڑی غلطی کر دی ہے اور اب تاریخی وقت آ گیا ہے کہ کشمیر کو آزاد کیا جائے، مودی سے غلطی تکبر کی وجہ سے ہوئی، مودی نے سوچا کشمیریوں پر ظلم کر کے چپ کر دیں وقت ثابت کرے گا کہ کشمیر آزاد ہو گا، کشمیر کا مسئلہ بین الاقوامی مسئلہ بن گیا ہے، حکومت نے پوری دنیا کے سربراہان کو اس سے آگاہ کیا ہے، انٹرنیشنل میڈیا کو بھی کشمیر کے حوالے سے آگاہ کیا ہے، اب ساری دنیا میں کشمیر کے مسئلے پر آواز اٹھائی جا رہی ہے، پاکستان کی فوج مکمل تیار ہے ،آزاد کشمیر میں کسی بھی بھارتی جارحیت کا مقابلہ کرنے کو تیار ہیں، کشمیر کی آواز اٹھانے کےلئے میڈیا کا بھی شکریہ ادا کرتا ہوں، کشمیر کے مسئلے پر کشمیریوں کا سفیر بنوں گا، بھارت کی حکومت عام حکومت نہیں ہے، یہ آر ایس ایس کے نظریہ والی خطرناک حکومت ہے، یو این میں بھی مسئل کشمیر کے مسئلے کو اٹھاﺅں گا، لوگ مایوس ہو جاتے ہیں کہ کاروبار کی وجہ سے بہت سے مسلم ممالک آج کشمیر کے مسئلے میں ساتھ نہیں ہیں لیکن ہمیں مایوس نہیں ہونا چاہیے، انشاءاللہ ضرور تمام مسلمان ممالک ہمارے ساتھ آ جائیں گے، بوسنیا میں بھی مسلم ممالک ساتھ نہیں تھے لیکن جب وقت آیا سارے ساتھ ہوئے، پوری دنیا کے سربراہوں کو میں کشمیر کے مسئلے سے آگاہ کروں گا، کشمیر کے مسئلے میں دنیا کھڑ ہو کر نہیں پاکستانی قوم اور حکومت اس کے ساتھ ہے، آج بھارت میں بھی میڈیا حکومتی اقدامات کے خلاف آواز اٹھا رہی ہے، پاکستان کی قوم کو ہفتے میں ایک روزکشمیر کے ساتھ یکجہتی کےلئے باہر نکلنا ہے، اس ہفتے جمعہ کے روز گیارہ سے ساڑھے گیارہ بجے تک کشمیریوں کےلئے باہر نکلنا ہے اور ان کے ساتھ اظہار یکجہتی کرنا ہے، بھارت نے کشمیریوں کو آزاد ہونے کا موقع دے دیا ہے، پاکستانی قوم 27ستمبر کو یو این کے اجلاس تک کشمیریوں کے ساتھ اظہار یکجہتی کےلئے نکلے گی۔ انہوں نے کہا کہ اقوام متحدہ بدقسمتی سے طاقتوروں کا ساتھ دیتا ہے، اقوام متحدہ سے کہتا ہوں کہ سوا ارب مسلمان آپ کی طرف دیکھ رہے ہیں اور بڑے بڑے ممالک کی طرف بھی جو صرف اپنی مارکیٹ کی طرف دیکھ رہے ہیں، دنیا جان لے گی کہ دونوں ممالک ایٹمی ممالک ہیں،پاکستان کشمیر کےلئے آخری حد تک جائے گا اور آخری سانس تک لڑے گا اور ساتھ دے گا چاہے دنیا ساتھ دے یا نہ دے،اگر جنگ ہوئی تو سب متاثر ہوں گے،اس کے اثرات ساری دنیا پر پڑیں گے ۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*