تازہ ترین

کشمیر پاکستان کی بقاءکا مسئلہ ہے ،شاہ محمود قریشی

اسلام آباد(نیوز ایجنسی) وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہاکہ کشمیر پرعا لمی عدالت انصاف میں جانے کیلئے قانونی ماہرین سے مشاورت کر رہے ہیں،مسئلہ کشمیر کے تین فریقوں میں سے کشمیریوں اور پاکستانیوں نے پانچ اگست کے بھارتی یکطرفہ اقدامات کو اقوام متحدہ سیکورٹی کونسل کی قراردادوں اور بین الاقوامی قوانین کے منافی سمجھتے ہوئے یکسر مسترد کر دیا ہے،اس وقت بھارت ایک پلیٹ فارم پر نہیں ہے،بھارتی سپریم کورٹ میں ان بھارتی اقدامات کے خلاف چودہ پیٹشنز داخل کی گئیں ہیں،اسوقت بھارتی سپریم کورٹ پر ہندوتوا کا دباو¿ ہے،میں قوم کو پیغام دینا چاہتا ہوں کہ مایوس ہونے کی ضرورت نہیں،چون سالوں کے بعد ہمارا مقدمہ سیکورٹی کونسل اقوام متحدہ میں گیا اور بھارت کا موقف کہ یہ ہمارا اندرونی مسلہ ہے، اسے شکست ہوئی،بھارت یہ ناٹک کر رہا ہے کہ پاکستان میں بات کس سے کریں دنیا کو گمراہ کرنا چاہتا ہے کیونکہ نیشنل سیکورٹی کمیٹی کے اجلاس میں سول اور عسکری قیادت ایک پیج پر تھی ہندوستان کی نیت درست نہیں،برطانوی پارلیمان کے پچاس ممبران نے اقوام متحدہ کو مقبوضہ جموں و کشمیر میں جاری انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں پر خط لکھا ہے،3 ستمبر کو جو جلوس ہائیڈز پارک سے نکلے گا اور انڈین ہائی کمیشن تک جائے گا اور ایک تاریخ رقم کرے گا،کشمیر پاکستان کی بقاءکا مسئلہ ہے ہم سب مل کر آواز اٹھائیں گے تو یہ موثر ہو گی۔ امید ہے او آئی سی اپنا بھرپور کردار ادا کرے گا۔ جمعرات کو و زیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے سینیٹ میں مقبوضہ کشمیر میں حالیہ پیش رفت کے حوالے سے پیش کی گئی تحریک پر بحث سمیٹتے ہوئے کہا کہ سیاسی اختلافات کے باوجود کشمیر کے ایشو پر پوری قوم یکجا ہے۔ مسئلہ کشمیر پر تین فریقوں میں سے 2 فریقوں پاکستان اور کشمیریوں نے 5 اگست کے بھارت کے اقدامات کو مکمل طورپر مسترد کر دیا ہے۔ اس قدم پر بھارت ایک پیج پر نہیں ہے بھارتی اپوزیشن جماعتوں کے وفد کو گورنر کی دعوت کے باوجود سرینگر ایئرپورٹ سے واپس بھیج دیا گیا۔ انہوں نے کہا کہ اس قدغن نے ثابت کیا کہ بھارت کے پاس چھپانے کو بہت کچھ ہے۔ وزیر خارجہ نے کہا کہ اس قدم کیخلاف بھارت کی سپریم کورٹ میں 14 پٹیشنز داخل ہو چکی ہیں اب یہ سپریم کورٹ پر امتحان ہے۔ آر ایس ایس کا بھارتی سپریم کورٹ پر دباﺅ ہے۔ ہماری اپوزیشن جماعتوں نے مسئلہ کشمیر کے حوالے سے بڑے پن کا مظاہرہ کیا اور مکمل اتحاد کا ثبوت دیا۔ ان سے کہتا ہوں کہ مایوسی کی ضرورت نہیں ‘ آزمائش کا وقت آتا رہتا ہے۔ دشمن نے کمزور معاشی حالات اور ایف اے ٹی ایف کی صورتحال دیکھ کر وار کیا ہے ہم کشمیر کے حوالے سے سیاسی ‘ سفارتی اور قانونی سمیت ہر آپشن پر غور کر رہے ہیں ۔ سفارتی سطح پر 72 گھنٹوں میں سلامتی کونسل کا اجلاس کرانے میں ہمیں کامیابی نصیب ہوئی اور بھارت کا موقف مسترد ہوا کہ یہ بھارت کا اندرونی معاملہ نے مسئلہ کشمیر اب انٹرنیشنلائز ہوگیا ہے ۔ وزیر خارجہ نے کہا کہ مودی کی حماقت کی وجہ سے ایک موقع پیدا ہوا ہے اس سے ہمیں فائدہ اٹھانا چاہیے۔ مسئلہ کشمیر پر اقوام متحدہ کی قراردادوں کی تجدید ہو گئی ہے ۔پاکستان کا ہر شہر اور قصبہ کشمیر کے ساتھ یکجہتی کا اظہار کر رہا ہے۔ لندن میں بھی ہزاروں لوگوں نے مظاہرہ کیا ہے۔ اقوام متحدہ کے اجلاس کے د وران کشمیر پاکستان ‘ مسلم ممالک سمیت دیگر ممالک کے لوگ بھی مظاہرے میں شامل ہوئے ہیں۔ تارکین وطن مسئلہ کشمیرپر بھرپور کردار ادا کر رہے ہیں۔ یورپین پارلیمنٹ میں اس پر بحث ہو رہی ہے۔ 50 ارکان نے اقوام متحدہ کو کردار ادا کرنے کیلئے خط لکھا ہے۔ہومین رائٹس کونسل کا اجلاس نو اگست کو جنیوا میں شروع ہو رہا ہے جہاں میں خود جاو¿ں گا اور مودی کی صورت میں فسطائیت کا چہرہ بے نقاب کریں گے۔ اجلاس میں بھرپور شرکت کروں گا اور بھارت کا فاشٹ چہرہ بے نقاب کروں گا۔ وزیر خارجہ نے کہا کہ کشمیر پر قانونی آپشن کا مطالعہ کر رہے ہیں اور عالمی قانونی ماہرین سے عالمی عدالت انصاف میں جانے کیلئے مشاورت کر رہے ہیں۔ وزیر اعظم نے عرب ممالک سمیت دنیا کے مختلف ممالک کے سربراہوں سے کشمیر کے حوالے سے بات چیت کی ہے اور میں وزرائے خارجہ سے رابطہ کر کے کشمیر کی صورتحال سے آگاہ کر رہاہوں اور پاکستان کا پیغام پہنچا رہا ہوں۔ انہوں نے کہا کہ کرفیو کی وجہ سے مقبوضہ کشمیر کی اصل صورتحال ابھی وا ضح نہیں ۔ مودی کو اگر غلط فہمی ہے کہ پاکستان جھک جائے گا یہ خیال دل سے نکال لے پاکستان کبھی بھی نہیں جھکے گا۔ بھارت کے ایک طبقے نے پاکستان کو کبھی دل سے تسلیم نہیں کیا۔ ا ن کی نظر پاکستان پر ہے آج نہرو اور گاندھی کا ہندوستان دفن ہو گیا ہے اور آر ایس ایس کا ہندوستان بن گیا ہے۔ کشمیر پاکستان کی بقاءکا مسئلہ ہے ہم سب مل کر آواز اٹھائیں گے تو یہ موثر ہو گی۔ امید ہے او آئی سی اپنا بھرپور کردار ادا کرے گا۔ انہوں نے کہا کہ روس کی سوچ بھی بھارت کے حوالے سے کشمیر کے معاملے پر مختلف ہے آج پورا پاکستان کشمیر کیلئے آدھا گھنٹہ احتجاج کرے گا اور دنیا کو پیغام دے گا کہ پوری پاکستانی قوم کشمیر پر یکجا ہے۔ انہوں نے کہاکہ 3 ستمبر کو لندن میں ایک تاریخی احتجاجی جلوس منعقد ہو گا ۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*