تازہ ترین

پسما ند ہ طبقے کیلئے صحت اور احسا س کا ر ڈ بڑ ا ریلیف

وفا قی حکومت کو قائم ہوئے تین سال کا عر صہ گز ر گیا مگر اس نے اقتدا ر میں آنے سے قبل اور اس کے بعد مسلسل عو ام کو ریلیف دینے کے متعد دبا ر دعو ے اور وعد ے کئے مگر افسوس کی با ت یہ ہے کہ حکومت اب تک یہ وعد ے اور دعوے پورے نہیں کر سکی ہے عو ام کو مہنگائی سمیت دیگر معاملا ت میں بھی بڑ ی مشکلا ت کا سا منا کرنا پڑ رہا ہے لیکن اس کے با وجو د ان کو حکومت کی جا نب سے کوئی ریلیف نہیں مل رہا ہے جوکہ بلا شبہ ایک بہت بڑ ا لمحہ فکر یہ ہے کیونکہ عو ام نے مو جو دہ حکومت کو اس کے ان ہی دعو ﺅ ں او روعد و ں کی وجہ سے بھا ری مینڈ یٹ دے کر اقتد ار دیا لیکن حکومت نے ان کے اعتما د کو ٹھیس پہنچا کر ا ن کے مینڈ یٹ کا احتر ام نہیں کیا ہے۔
گذشتہ رو ز کسا ن ہیلتھ اور احسا س کار ڈ با رے منعقد ہ اجلاس سے خطاب کر تے ہوئے ایک با ر دو بارہ عو ام سے وعدہ کیا ہے کہ پسما ند ہ طبقے کیلئے صحت اور احسا س کا ر ڈ کا بڑا ریلیف فر اہم کر یں گے پنجا ب اور کے پی کے میں اس با ر تے خصو صی سیل بنا کر کام میں تیز ی لا ئی جارہی ہے لاہو ر میں تکمیل کے بعد صحت کار ڈ کی تقسیم پو رے پنجا ب میں یقینی بنا ئی جا ئے گی حکومت کا صحت کا ر ڈ نہ صر ف پاکستان بلکہ پوری دنیا میں عو ام کو صحت کی مکمل سہو لیا ت کی مفت فر اہمی با رے منفر داقد ام ہے ۔
وزیر اعظم عمر ان خان کا ایک با ر دو بارہ عو ام سے مذکو رہ وعدہ تو اچھا اقد ام ضرور ہے بشر طیکہ اس پر عمل در آمد کیا جائے یہ وعد ہ بھی ما ضی کی وعد و ں کی طرح نہ ہو کیونکہ عو ام کو علا ج معالجہ کی سہو لتیں فراہم کرنا ریا ست کی ذمہ دا ری ہے اس کو اس سلسلے میں احسن اقد اما ت کرنے کی اشد ضرورت ہے جس کا ملک میں اب شد ید فقد ان ہے اس وقت ملک میں ادو یا ت کی قیمتیں بہت ہی زیا دہ ہیں اس کے سا تھ سا تھ پر ائیو یٹ ڈاکٹر و ں کی بھا ری بھر کم فیسیں اور سر کا ری ہسپتا لو ں میںا دویا ت کی عد م فر اہمی ،ٹیسٹو ں کا مکمل نہ ہونے جیسے دیگر مسائل مو جو د ہیں جن کو فو ری طو ر پر حل کرنا ضروری ہے جن کا حل ہونے کی بجا ئے ان میں اضا فہ ہو رہا ہے۔
حکومت نے اگر اب صحت کار ڈ کا سلسلہ شر وع کیا ہے تو اس کو پو رے ملک میں رائج کرنا چا ہیئے کیونکہ وز یر اعظم عمران خان نے مذکو رہ اجلا س سے خطا ب کے دو ران ملک کے دیگر صو بو ں کا ذکر تو کر دیا ہے لیکن شا ید وہ بلوچستان جو صو بے کا رقبے کے لحاظ سے سب سے بڑ ا صو بہ ہے کو بھو ل گئے ہیں ا س کو ذکر انہوں نے نہیں کیا ہے ایسا کرنا بلوچستان کے زیا دہ زیا د تی کے متر ادف اقد ام ہے ان کو اس سلسلے میں بلوچستان کو بھی اہمیت دینی چا ہیئے جوکہ پہلے سے نظر اند از کر نے کی وجہ سے پسما ند گی کا شکا ر ہے مو جو دہ حکومت کو اس صو بے کے مسائل کو سنجید گی سے لینا چا ہیئے تا کہ یہ صو بہ بھی ملک کے دیگر تر قیا تی یا فتہ صو بوں کے بر ابر آسکے اس کے سا تھ سا تھ حکومت کو احسا س کا رڈ کی سہو لت بھی پو رے ملک میں نافذ کرنی چا ہیئے کیونکہ اس پر بھی پورے ملک کی عو ام کا حق ہے حکومت کو کو شش کر نی چا ہیئے کہ یہ صر ف حق دا رو ں کو ہی ملنا چا ہیئے۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*