وفا قی کا بینہ میں بڑی تبد یلیاں

وزیر اعظم عمر ان خان نے ایک با ر پھر وفا قی کا بینہ میں بڑے پیمانے پر ردو بد ل کیا ہے کیونکہ اس سے قبل بھی وفاقی کا بینہ میں ردو بد ل ہو چکی ہے لیکن افسو س کی با ت یہ ہے کہ حکومت اب تک وہ کا میا بی حاصل نہ کر سکی جس کی عو ام کو تو قع تھی اب وزیر اعظم عمر ان خان نے وزر اءکی کا رکر د گی کو بہتر کرنے کے لیے مذکو رہ تبد یلیاں کی ہیں جن سے حکومتی امو ر بہتر ہونے کی تو قع ہے۔
شو کت تر ین کو وزا رت خزانہ کا قلمد ان دے کر حکومت نے ایک اچھا فیصلہ کیا ہے کیو نکہ شو کت تر ین بڑے ما ہر معا شیا ت ہیں جن سے وزا رت خزانہ میں بہتر ی کی امید ہے اس سے قبل اس وزا رت کے 3 وزر اءتبد یل ہو چکے ہیں جہاں تک وز ارت اطلا عا ت کا تعلق ہے تو اس کو فو اد چو ہد ری کے حوالے کیا گیا ہے جوکہ پہلے بھی ان کے پاس رہی ہے ۔
اس لیے یہاں ضرورت اس امر کی ہے کہ ان کو اخبا ری ما لکا ن اور صحا فیوں سب کے مسائل حل کرنے کے لیے احسن اقد اما ت کر نے چاہئیں کیو نکہ اس وقت ملک میں میڈیا کے ادا روں اور کا رکنو ں کو شد ید مشکلا ت کا سا منا ہے اور جن کا ازا لہ کرنا انتہائی نا گز یر ہے کیونکہ ان کا ملک میں ایک بڑ ا اور اہم کر دا ر ہے امید ہے کہ فو اد چو ہد ری مذکو رہ سفا ر شا ت کا بڑے غو ر سے جا ئز ہ لیں گے ۔
اس کے سا تھ سا تھ با قی جو وفا قی کا بینہ میں وز ر اءکا ردو بد ل کیا گیا ہے اس سلسلے میں بھی اس با ت کا ذکر کرنا از حد ضروری ہے چو نکہ اس وقت حکومت کا عو ام کو ریلیف نہ دینے کی وجہ سے اس کی مقبو لیت کا گر اف کم ہو رہا ہے کیو نکہ اس وقت ملک میں سب سے بڑا بحران مہنگائی کاکئی گنا بڑھ جا نا ہے لیکن وز ارت خزانہ میں 3 وزر اءکی تبد یلی کے با وجو د حکومت اس اہم مسئلے کو حل کرنے میں نا کام رہی ہے کیو نکہ اس دور ان حکومت کو بحرانوں کا سا منا رہا جن میں شو گر ،آٹا اور دیگر اشیاءخو ر د و نو ش کے بحران رہے ہیں اور ان بحرانوں کی وجہ سے مہنگائی میں تا ریخی اضا فہ ہو ا جہاں تک وزارت تو انائی کا تعلق ہے تو اس میں بھی حکومت بحرا نوں سے دو چا ر رہی ہے جس میں بجلی اور گیس کی لو ڈ شیڈنگ جیسے بڑے مسائل شا مل ہیں جن پر حکومت قا بو نہیں پا سکی اس کے سا تھ سا تھ پٹرولیم مصنو عا ت کی قیمتوں میں ریکا رڈ اضا فہ ہو ا اور اس دو ران پاکستانی روپے کی قدر بھی کم ہوئی اور ڈالر اونچی اڑا ن بھر گیا۔
اب ہم امید کر تے ہیں کہ وزیر اعظم عمر ان خان کی نئی کابینہ ملک کے تما م بحرانوں پر قا بو پانے میں کا میا ب ہو جائے گی اور وہ عو ام کو ریلیف دے گی جوکہ عوام کاحق ہے اورحکومت نے اس سلسلے میں اس سے وعد ے بھی کئے ہیں لیکن ڈھا ئی سا ل گز رنے کے با وجو د وہ ان پر عمل در آمد کرانے میں کا میا ب نہیں ہوئی جوکہ بلا شبہ ایک بہت بڑ ا لمحہ فکر یہ ہے۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*