وفا قی حکومت کی چینی بحر ان کی فو ر نز ک ر پورٹ پبلک

وفا قی حکومت نے چینی بحران فو ر نز ک رپورٹ پبلک کر تے ہوئے کہا ہے کہ چینی کی پید ا وا ر میں 51 فیصد حصہ رکھنے والے 6 گر وہ کا آڈ ٹ کیا گیا جن میں سے
الا ئنس ملز ،جے ڈی ڈبلیو گر و پ اور العر بیہ مل اوور انو ئسنگ دو کھا تے رکھنے اور بے نا می فر و خت میں ملو ث پا ئے گئے اس سلسلے میں شہز اد ا کبر نے وفا قی وزیر اطلا عا ت و نشر یا ت سینیٹر شبلی فر از کے ہمر اہ پر یس کا نفر نس میں تفصیلا ت بتا تے ہوئے کہا کہ شو گر ملز گنا فر اہم کر نیو الے کسا نو ں کو انتہا ئی کم قیمت پر ادا کرتی ہیں کسا نو ں کوتسلسل کیسا تھ نقصا ن پہنچا یا گیا اور اسے لو ٹا گیا کٹو تی کے نا م پر کسا نو ں کے سا تھ زیا دتی کی نشا ند گی کی گئی کچھ ملز میںکچی پر چی کا نظام ہے گنے کی
خر ید اری کیلئے سی پی آر کے بجا ئے کچی پر چو ں پر ادا ئیگیا ں کی جا تی ہیں جہا ں قیمت 140 رو پے سے کم ہے پید ا وا ری لا گت میں ہیر ا پھیر ی ہے کمیشن نے اپنی رپورٹ میں یہ بتایا ہے کہ ایک کلو چینی کتنے میں بنتی ہے اس سے آج سے پہلے آزا د آڈٹ نہیں کیا گیا اصل قیمت اور شو گر ملز ایسو سی ایشنز کی دی گئی قیمتوں میں وا ضح فر ق پا یا گیا کمیشن کو مل ما لکا ن کی
جا نب سے 2،2 کھا تے رکھنے کے شو اہد ملے ہیں۔
وفا قی حکومت کی جا نب سے چینی بحران فو ر نز ک رپورٹ پبلک کرنا بلا شبہ قا بل تعر یف عمل ہے وزیر اعظم
عمر ان خان نے ملک میں چینی بحران کے وقت یہ وعد ہ کیا تھا کہ وہ اس میں ملو ث افر اد کو بے نقا ب کریں گے اس طرح انہو ں نے اپنا یہ وعد ہ پو را کر کے یہ ثا بت کر دیا ہے کہ وہ عوامی نما ئند ہ ہیں اور عوا م کے خلا ف کام کرنے والوں کو
چا ہے وہ کوئی بھی ہو ں کے خلا ف کا روائی کریں گے اس طرح انہو ں نے اپنی ہی حکومت میں شا مل لوگوں کا احتسا ب کر کے ایک مثا ل قا ئم کی ہے کیونکہ مذکو رہ رپورٹ میں پا کستا ن تحریک انصا ف کے اہم رہنما جہا نگیر ترین کا نا م بھی آرہا ہے جو وزیر اعظم عمر ان خان کے بہت ہی قر یبی سا تھی ہیں اور ان کا پا رٹی میں بہت بڑ ا رو ل ہے۔
ہم سمجھتے ہیں کہ وزیر اعظم عمر ان خان نے اس سلسلے میں کسی بھی چیز کی پر وا ہ نہ کر تے ہوئے چینی سیکنڈ ل کی تحقیقا ت کر وا ئیں اوریہ ثا بت کر دیا کہ وہ عوامی مفا د کے خلا ف کوئی کام نہیں کریں ۔
وفا قی حکومت نے مذ کو رہ قا بل تعر یف اقد ام کیا ہے اس لیے یہا ں ضرورت اس امر کی ہے کہ اب حکومت عوام سے کئے گئے اپنے وعد ے کو پا یہ تکمیل تک پہنچا نے کے لیے اس میں ملو ث افر اد کے خلا ف سخت کا رو ائی کر ے تا کہ وہ دوسر وں کے لیے عبر ت ہو رپورٹ میں جس طر ح شو گر ملز ما لکا ن کے کا ر نامے بتا ئے گئے ہیں وہ قا بل افسو س ہیں اس سے ایسا لگتا ہے کہ انہو ں نے اپنے ما لی فو ائد کے لیے عوام زمیند ا رو ں سمیت کسی کا کوئی خیال نہیں کیا انہو ں نے یہا ں صر ف پیسے بنا نے کا مقصد سر فہر ست رکھا اس لیے ان کے خلا ف کاروائی کے سلسلے میں کسی بھی قسم کا کوئی کمپر و ما ئز نہیں کر نا
چا ہیئے کیونکہ عوام کو اپنی دولت بڑ ھانے کے لیے لو ٹنا ایک بہت بڑ ا جرم ہے جس کی سز ا ان لو گوں کو ضرور دینی چا ہیئے۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*