تازہ ترین

وزیر اعظم ہاتھ سے بنے قالینوں کی صنعت کے دیرینہ مسائل حل کرنے کےلئے کردار ادا کریں

اسلام آباد/لاہور( کامرس ڈیسک)پاکستان کارپٹ مینو فیکچررز اینڈ ایکسپورٹرز ایسوسی ایشن کے سینئر وائس چیئرمین ریاض احمد نے کہا ہے کہ برآمدی شعبوں کو درپیش مسائل کے حوالے سے کیٹگریز میں تقسیم کیا جائے اور جس شعبے کی مشکلات زیادہ ہیں اسے ترجیح دی جانی چاہیے ، وزیر اعظم عمران خان برآمدات میں اضافے کےلئے ہر ممکن کوشش کر رہے ہیں ان لئے ان سے مطالبہ ہے کہ ہاتھ سے بنے قالینوں کی صنعت کے دیرینہ مسائل کو حل کرنے کےلئے بھی اپنا کلیدی کردار ادا کریں ۔وزیر اعظم عمران خان کے نام لکھے گئے کھلے خط میں ایسوسی ایشن کے وائس چیئرمین ریاض احمد نے کہا کہ پاکستان کے ہاتھ سے بنے قالینوں کی مصنوعات دنیا بھر میںاپنی منفرد پہچان رکھتی ہیںاس لئے کئی دہائیوں سے کام کرنے والے مینو فیکچررز اور ایکسپورٹرز نامساعد حالات کے باوجود اس سے جذباتی وابستگی رکھتے ہیں او ر کم وسال کے باوجود حریف ملک بھارت سمیت دیگر ممالک کا مقابلہ کرنے کےلئے کوشاں ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم عمران خان سے اپیل ہے کہ ہمارے مسائل کو سنا جائے تاکہ انتہائی زبوں حالی کا شکار اس صنعت کو دوبارہ پاﺅں پر کھڑا کیا جا سکے ۔حکومت زراعت اور لائیو سٹاک کی ترقی کے ذریعے اربنائزیشن کو روکنے کےلئے اربوں روپے خرچ کر رہی ہے ، ہاتھ سے بنے قالینوں کی صنعت کے ذریعے بھی دیہاتوں میں لوگوں کو ان کی دہلیز پر روزگار مہیا کیا جا سکتا ہے ہمیں حکومت کی سرپرستی کی اشد ضرورت ہے تاکہ اس صنعت سے لا تعلق ہونے والوں اور نئے ہنر مندوں کو پر کشش مراعات دے کر اس جانب راغب کیا جا سکے ۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*