تازہ ترین

وزیر اعظم عمر ان خان کا چینی کا تما م ذخیر ہ ما ر کیٹ میں لانے کا حکم

مو جو دہ حکومت کے دو ر میں چینی کی قیمت ملک کی بلند تر ین سطح پر پہنچ گئی اس کی قیمت میں کئی گنا اضا فہ ہو ا ہے جو اس سے پہلے کبھی نہیں ہو ا ملک میں جتنی بھی مہنگائی کی لہر آئی ہے لیکن چینی کی قیمتو ں کو اتنے پرنہیں لگے جتنے مو جو دہ حکومت کے دو ر میں لگے ہیں چینی کی قیمتوں میں اتنا ہو شر با ءاضا فہ ہو ا ہے جس کے باعث ایک غر یب آدمی بھی اس کو خر ید نے کے لیے پہلے سو چتا ہے چو نکہ یہ عام استعما ل کی شے ہے جو سب کی ضر و ر ت ہے اس لیے اس کی قیمتو ںکو اتنا زیا دہ نہیں ہونا چا ہیئے کیونکہ ہما ر املک گنے کی پید او ار میں خو د کفیل ہے اور یہاں شو گر ملز کی بہت بڑی تعد اد بھی مو جو د ہے لیکن افسو س کی با ت یہ ہے کہ شو گر ما فیا ز حکومت پر بھی زو ر ہو گئی اور اس طرح حکومت اس کے اس سا منے بے بس ہوگئی اور اس ما فیا ز نے غر یب عو ام کو دو نو ں ہا تھو ں سے لو ٹا اور دنو ں اور مہینو ں میں کھر ب پتی بن گئے لیکن حکومت دیکھتی رہ گئی پچھلے دنوں ایک دن میں 50 کلوچینی کی بو ری کی قیمت 1100روپے بڑھی ا س سے بخو بی اند از ہ لگایا جا سکتا ہے اس سے مافیا ز نے ایک د ن میں کتنا بڑ ا نفع کما یا ہو گا حیر ت کی با ت یہ ہے کہ شو گر ملز کے اکثر مالکان حکومت کا حصہ ہیں وہ خو د اسمبلیوں میں بیٹھے ہیں اس لیے ان کو کون پو چھے گا؟
مو جو دہ حکومت کے دو ر میں چینی پر ایک کمیشن تشکیل دیا گیا تھا جس کی رپو رٹ میں وزیر اعظم عمر ان خان کے قر یبی سا تھی اور پی ٹی آئی کے با نی رہنما جہانگیر تر ین اور دیگر حکو متی عہد ید ارو ں کے نا م بھی آئے تھے جو کہ وزیر اعظم عمر ان خان نے خو د پبلک بھی کئے تھے ہم سمجھتے ہیں کہ یہ بلا شبہ ان کا بہت بڑ ا کا رنامہ تھا کہ انہوں نے تما م ذا تی مفا دا ت کو با لا ئے طا ق رکھتے ہوئے اس رپو ر ٹ کو پبلک کر تے ہوئے اس میں شامل نامو ںم کا اعلان کیا لیکن اتنا اچھا کام کرنے کے با وجو د چینی کی قیمتو ں میں مسلسل اضا فہ ہو تا گیا اور اس طرح اس میں کئی گنا اضا فہ ہو گیا اور یہ قو ت خر ید سے با ہر ہو گئی اتنا سب کچھ کرنے کے با وجو د حکومت چینی کی قیمتوں پر قا بو نہ پا سکی ۔
اب گذشتہ رو ز وزیر اعظم عمر ان خان نے پر ائس کنٹر ول کمیٹی کے اجلا س سے خطا ب کر تے ہوئے چینی کی تما م ذخیر ہ ما ر کیٹ میں لانے کا حکم دیا ہے اور کہا ہے کہ عو ام کوریلیف دینے کے لیے صو بائی اور ضلعی حکومتیں میدان میں نظر آئیں حکومت غر یب طبقے پر بو جھ کم کر نے کے لیے ہر ممکن اقد اما ت لے رہی ہے حکومت سیا ست سے با لا تر ہو کر عو ام کی خد مت پر تو جہ مز کو ز رکھے ہوئے ہے مہنگائی کے اثر ات کا احسا س رکھتی ہے ۔
مذکو رہ تما م صو رتحال کے بعد اب وزیر اعظم عمر ان خان کا مذکو رہ بیان اس سے قبل دیئے گئے ان کے بیا نا ت کا تسلسل لگتا ہے جس میں وہ ایسی ہی با تیں کر چکے ہیں مگر ان کا کوئی فائدہ نہیں ہوا اور اب صو رتحال بہت گھمبیر شکل اختیا ر کر گئی ہے۔
اس لیے یہاں ضرورت اس امرکی ہے کہ وزیراعظم عمر ان خان کو عو ام کو ریلیف دینے کے لیے خو د اقد اما ت کر نے چاہئیں کیونکہ وہ ملک کے چیف ایگز یکٹو ہیں وہ صو بائی اور ضلعی حکومتوں کو ہد ایا ت دینے کی بجا ئے وفا ق کے متعلقہ ادا رو ں کو اس سلسلے میں اقد اما ت کرنے کا حکم دیں کیونکہ چینی کا تعلق وفا ق سے ہے اس لیے اس پر وہیں کام کر تے ہوئے عو ام کو ریلیف دینے کے اقد اما ت کر یں جو کہ نہا یت ہی نا گز یر ہے کیونکہ اس وقت چینی سمیت دیگر اشیا ءضر ور ت کی قیمتو ں میں بہت اضا فہ ہو چکا ہے۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*