تازہ ترین

نہتے فلسطینیوں پر اسر ائیلی بر بر یت

اسر ائیل نے گذشتہ کئی رو ز سے نہتے فلسطینیوں پر بر بر یت کا سلسلہ جا ری رکھا ہو اہے جس کے نتیجے میں سینکڑو ں فلسطینی شہید جبکہ ہز ا رو ں زخمی ہو گئے ہیں اسر ائیلی فو جیوں نے صر ف قتل وغا ر ت کا با ز ار گر م کر رکھا ہے بلکہ وہ خواتین کی بے حر متی کرنے سے بھی با ز نہیں آرہے ہیں اسر ائیلی طیا رو ں کی بمبا ری سے کئی رہا ئشی عما رتیں زمین بو س ہو گئے زخمیوں سے ہسپتا ل بھر گئے ہیں لیکن اس کے با وجو د ان پر حملوں میں کو ئی کمی نہیں آرہی وہ بد تر ین بر بر یت کا مظا ہر ہ کر تے ہوئے بچو ں خو اتین سمیت کسی کی پر واہ نہیں کر رہے ۔
گذشتہ روز او آئی سی اجلا س میں فلسطین کے حق اور اسر ائیل کے مظالم کے خلا ف ایک قر ار دا د منظو ر کی گئی جس میں اسرائیل کو تنبیہہ کی گئی ہے کہ وہ حا لا ت مز ید بگا ڑ نے سے با ز رہے قا بض اسر ائیلی فلسطینیوں کے خلا ف و حشیا نہ حملے اور تما م تر خلا ف ور زیا ں اورفلسطینی مقد س مقا ما ت اور مسجد اقصیٰ کی بے حر متی فو ری طو ر پر بند کر ے قر ار دا د میں اسرائیل کے ظا لما نہ اور وحشیا نہ اقد ام کی مذمت کی گئی۔
نہتے فلسطینیوں پر اسر ائیل کی بر بر یت کی جتنی مذمت کی جائے کم ہے کیونکہ اس نے اپنی اس مذ مو م کا روائی میں نہ صر ف نما زیوں بلکہ خو اتین اور بچوں پر بھی بمبا ری کی جس کے نتیجے میں ان افر اد نے جا م شہا دت نوش کیا وہ اسلام دشمنی پر اتنا اند ھا ہو چکا ہے کہ اس نے فلسطینیوں پر ظلم کے پہا ڑ تو ڑ دیئے ہیں او آئی سی کے اجلا س میں فلسطینیوں کے حق اور اسر ائیل کے خلا ف قر ار دا د کی منظو ری بلا شبہ قا بل تعر یف اقد ام ہے لیکن اس پر فو ری طو رپر عمل در آمد کرنے کی ضرورت ہے اورتما م اسلامی مما لک کو متحد ہو کر اسرائیل کے خلا ف سخت تر ین اقد ام اٹھا نے چا ہئیں اس سے ہر قسم کی سفا ر تی او ر تجا رتی تعلقا ت فو ری طو ر پر ختم کرنے چاہئیں کیونکہ صر ف قر ار د اد و ں کے پاس ہونے سے کام نہیں چلے گا اس پر جب تک عملی طو ر پر اقد اما ت نہ اٹھا ئے گئے معا ملا ت حل نہیں ہو ں گے کیونکہ مسلم مما لک اور خصو صاً او آئی سی کی فلسطین پر عدم توجہ کی وجہ سے اسر ائیل کو شہ ملی ہوئی ہے اس وجہ سے اس نے فلسطینیوں پر اپنا مظالم کا با زا ر گر م کر رکھا ہے اس لیے او آئی سی کو تما م مسلما ن ممالک کو متحد کر کے اسرائیل کے خلا ف ایک آواز ہونے کی اشد ضرورت ہے ان مما لک کو اسرائیل کے سا تھ ہر قسم کے تعلقا ت ختم کر کے ان کا بائیکا ٹ کرنا چاہیئے کیونکہ جب تک ایسا نہیں ہو گا اسرائیل یونہی فلسطینیوں پر بر بر یت کا سلسلہ جا ری رکھے گا اس لیے اس کو منہ تو ڑ جو اب دینا نا گز یر ہے۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*