تازہ ترین

مہنگائی کے ستائے عوام پر ایک اور ظلم، پٹرول 10روپے 49پیسے فی لٹر مہنگا

اسلام آباد(آئی این پی) ترجمان وزارت خزانہ نے کہا ہے کہ حکومت نے اوگرا کی سفارشات پر قیمتیں بڑھائیں،حکومت نے تقریبا دس روپے انچاس پیسے کے حساب سے پٹرول کی قیمت میں اضافہ کیا جو سوا آٹھ فیصد کے قریب اضافہ ہے، گزشتہ پندرہ دنوں میں عالمی مارکیٹ میں تیل کی قیمتوں میں 10سے 15فیصد اضافہ ہوا، ایک وضاحتی بیان میں ترجمان وزارت خزانہ نے کہا کہ روپے کی قدر میں بھی مسلسل گراوٹ کی وجہ سے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ ہو رہا ہے، انہوں نے کہا کہ حکومت صرف دو روپے پٹرولیم لیوی عوام سے وصول کر رہی ہے، میڈیا میں جو اطلاعات آ رہی ہیں کہ اوگرا نے پانچ روپے قیمت میں اضافے کی سفارش کی تھی جبکہ حکومت نے ساڑھے دس روپے کا اضافہ کیا ہے جو بالکل غلط ہے، ترجمان کا کہنا تھا کہ عالمی مارکیٹ میں پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں کو دیکھتے ہوئے حکومت کم سے کم ٹیکس لاگو کر رہی ہے تاکہ پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کم سے کم اضافہ ہو، ترجمان نے کہا کہ حکومت 30روپے پٹرولیم لیوی کی بجائے 5.62روپے پٹرولیم لیوی کی مد میں چارج کر رہی ہیحکومت 17فیصد سیلز ٹیکس کی بجائے اس وقت 6.84 فیصد ٹیکس وصول کر رہی ہے، عالمی مارکیٹ میں خام آئل کی قیمتوں اضافے نے پوری دنیا میں بحران پیدا کر دیا ہیحکومت کو پورا احساس ہے کہ موجودہ صورتحال میں اپنے عوام کو کس طریقے سے محفوظ کرنا ہے اور کم سے کم اضافہ عوام کو منتقل کیا جائے، پاکستان میں بنگلہ دیش، سری لنکا، انڈیا سمیت خطے کے دیگر ممالک کے مقابلے میں پٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں سب سے کم ہیں، آنے والے وقت میں بھی حکومت کی یہی کوشش ہوگی کہ عالمی مارکیٹ میں پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ ہوتا ہے تو کم سے کم اضافہ عوام کو منتقل کیا جائے۔دریں اثناء مہنگائی کے ستائے عوام پر ایک اور ظلم، حکومت نے پٹرول 10روپے 49پیسے فی لٹر مہنگا کر دیا۔ نئی قیمت 137روپے 79پیسے کی ریکارڈ سطح پر پہنچ گئی۔ وزارت خزانہ نے نوٹیفکیشن جاری کر دیا۔پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں 12روپے 44پیسے تک کا ریکارڈ اضافہ کیا گیا۔ وزارت خزانہ کے نوٹیفکیشن کے مطابق ہائی اسپیڈ ڈیزل کی قیمت میں 12روپے 44پیسہ تک کا اضافہ کیا گیا، جس کے بعد ہائی اسپیڈ ڈیزل کی نئی قیمت 134 روپے 48پیسے ہوگئی۔ مٹی کے تیل کی قیمت میں 10روپے 59پیسے اضافہ کر کے نئی قیمت 110روپے 26پیسے مقرر کر دی گئی۔وزارت خزانہ کے نوٹیفکیشن کے مطابق لائیٹ ڈیزل آئل کی قیمت میں 8روپے 84پیسے اضافہ کیا گیا، جس کے بعد لائیٹ ڈیزل آئل کی قیمت 108روپے 35پیسے ہوگئی۔ نئی قیمتوں کا اطلاق کر دیا گیا، نئی قیمتیں 15روز کے لئے نافذ ہوں گی۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*