تازہ ترین

مودی سن لوکشمیر کیلئے آخری دم تک لڑینگے‘عمرا ن خان

مظفر آباد(آئی این پی )وزیر اعظم عمران خان نے کہا ہے کہ ایمان والا موت سے نہیں ڈرتا ‘مودی سن لو کشمیر کے لیے آخری دم تک لڑیں گے، مودی تم بزدل ہواور تم کبھی دلیر انسان نہیں ہوسکتے ،دلیر انسان کبھی بھی عورتوں اوربچوں پر ظلم نہیں کرسکتا، مودی کوپیغام دینا چاہتا ہوں کہ جتنا مرضی ظلم کر لو کامیاب نہیں ہوگے ،کشمیریوں کے مردوں،بچوں اورعورتوں میں موت کا خوف ختم ہو گیا ہے ،ان کا ڈر ختم ہوگیا ہے ،شکست نہیں دے سکتے ۔ہندوستان اب وہ ہندوستان بننے جا رہا ہے جونہ نہرو کا تھا نہ گاندھی کا،کشمیر کا معاملہ اب انٹر نیشنل ایشو ہے 50سال بعد سیکیورٹی کونسل میں کشمیر کے ایشو پر بات ہوئی ہے یورپی یونین نے کہاہے کہ کشمیر کا مسئلے کا حل اقوام متحدہ کے قرار داوں کے مطابق حل ہونا چاہئے اقوام متحدہ کی انسانی حقوق 58ممالک نے پاکستان کے موقف کی حمایت کی ہے۔تفصیلا ت کے مطابق جمعے کے روزوزیر اعظم عمران خان مظفر آباد میں کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کے جلسے سے خطاب کر تے ہوئے کہا کہ شاندار استقبال پر کشمیریوں کا شکریہ ادا کرتا ہوں ، میں نے دنیا میںکشمیریوں کا سفیر بننے کا فیصلہ کیا ہے میں مسلمان اور انسان ہوں ،کشمیر کا مسئلہ انسانیت کا مسئلہ ہے ،کشمیری بزرگ بچے کرفیو میں ہیں،نریندر مودی کو پیغام دینا چاہتا ہوں کہ تم بزدل ہو اور صرف بزدل انسان ہی ایسا ظلم کرتا ہے دلیر انسان کبھی بھی عورتوں اوربچوں پر ظلم نہیں کرسکتا عمران خان نے کہا کہ آج کشمیر ی عوام پر 10لاکھ فوج کشمیر کے شہریوں کو 40دن سے بند کیا ہوا ہے نریندر مودی جس میں انسانیت ہوتی تو کبھی یہ نہ کرتا ،جو نریندر مودی اور آر ایس ایس کشمیر میں کر رہی ہے انہوں کہا کہ مودی کوپیغام دینا چاہتا ہوں کہ جتنا مرضی ظلم کر لو کامیاب نہیں ہوگے ،کشمیریوں کے مردوں،بچوں اورعورتوں میں موت کا خوف ختم ہو گیا ہے ،ان کا ڈر ختم ہوگیا ہے ،شکست نہیں دے سکتے ،مودی بچپن سے آر ایس ایس کا ممبر ہے ، آر ایس ایس وہ جماعت ہے جس کے اندر مسلمانوں کے خلاف نفرت بھری ہوئی ہے ،اس کا صرف ایک مقصد ہے کہ ہندوستان صرف ہندووں کا ہے باقی تمام اقلیتوں کو یہ کچھ نہیں سمجھتے ہیں ، آر ایس ایس شروع ہی سے مسلمانوں کے خلاف تھے عمران خان نے اپنے خطاب میں کہاکہ میں مودی کو کہنا چاہتا ہوں کہ میں دنیا میں کشمیر کا سفیر بن کر دنیا کو بتاﺅں گا کہ آر ایس ایس کیاجماعت ہے، آر ایس ایس نازی پارٹی کا نظریہ رکھتے ہیں اور نسل کشی کرنے کا ارادہ رکھتے ہیں ،ہندوستان اب وہ ہندوستان بننے جا رہا ہے جونہ نہرو کا تھا نہ گاندھی کا،کشمیر کا معاملہ اب انٹر نیشنل ایشو ہے 50سال بعد سیکیورٹی کونسل میں کشمیر کے ایشو پر بات ہوئی ہے یورپی یونین نے کہاہے کہ کشمیر کا مسئلے کا حل اقوام متحدہ کے قرار داوں کے مطابق حل ہونا چاہئے اقوام متحدہ کی انسانی حقوق 58ممالک نے پاکستان کے موقف کی حمایت کی ہے ،او آئی سی نے بھی کہا ہے کہ بھارت کشمیر سے کرفیو اٹھائے ، برطانوی پارلیمنٹرین نے بات کی، چار سنیٹروں نے امریکی صدر سے کشمیر کے معاملے کو حل کرنے کیلئے خط لکھا ہے ،اگلے ہفتے اقوام متحدہ کے جنرل اسمبلی جا رہا ہوں اور انشاءاللہ اپنے کشمریوں کو مایوس نہیں کرونگا،کشمیریوں کا ایسا سٹینڈ لونگا جو آج سے پہلے کسی نے نہیں لیا، انٹر نیشنل میڈیا پر کشمیر کے حوالے سے بات کرونگا موقع ملے تو آج او آئی سی پر میرا انٹرویو لازمی سنے،کل الجزیرہ میں سنا انشاءاللہ آپ کو فخر ہو گا کہ آپ کا جو کشمیریوں کا سفیر ہے وہ کشمیریوں کے ساتھ کھڑاہے ، ہندوستان کو بتانا چاہتا ہوں کہ اس کی فوج جو ظلم کررہی ہے لوگ اس کے خلاف لڑیں گے جب ظلم انتہا کو پہنچ جاتاہے تو ہر انسا ن فیصلہ کرتاہے کہ ذلت کی زندگی سے موت اچھی ہے ،انسانوں کو انتہا کی طرف دھکیل رہے ہیں ،اگر میرے خاندانمیں گھروالوں کو ایسے بند کیاجاتا تو میں لڑتا کیونکہ ایسی زندگی سے موت اچھی ہے ،بھارت لوگوں کو انتہا پسندی کی طرف دھکیل رہا ہے 20کروڑ مسلمانوں کو مودی کیا پیغام دے رہا ہے کہ مسلمانوں پر ظالم کر نا ہے اور یہاںآپ کیلئے جگہ نہیں ہے اگر آپ نے رہنا ہے تو سیکنڈ کلاس شہریوں کی طرح رہنا ہے یہاں آپ کے حقوق نہیں ہے ، یہاں آپ کو انسان نہیں سمجھا جاتا ،بھارت میں آپ کو جانور کی دیکھا جائے گا، انہیں کسی پر گائے کا گوشت کھانے کا الزام لگ گیا تو آر ایس ایس کے غنڈے سڑکوں پر قتل کریں گے ، بھارت کی کوئی عدالت ان کوسزا نہیں دے گی ، مودی سن لو ایمان والا موت سے نہیں ڈرتا،مودی سن لو ڈر کیوجہ سے تمہارا پائلٹ واپس نہیں کیا تھا ، ہم امن چاہتے تھے اور مذکرات سے مسئلہ کشمیر کا حل چاہتے تھے لیکن تم نے پلوامہ واقعہ کو لیکر بالاکوٹ میں حملہ کیا اور تمھارے جہاز پاکستان آزاد کشمیر کی طرف آئے لیکن تم نے دیکھ لیا کہ تمھارے جہازوں کے ساتھ کیا ہوا اور میں اپنی پاک فضائیہ کو سلام پیش کرتاہوں،عمران خان نے مزید کہا کہ دنیا میں سوا ارب مسلمان ہیں وہ سب کشمیر کیطرف دیکھ رہے ہیں جو مسلمان حکمران تجارت کی وجہ سے بھارت کے ساتھ ہیں لیکن سوا ارب مسلمان کشمیریوں کے ساتھ ہیں ان میں سے بھی لوگ انتہا کی طرف جائیں گے اور بندوق اٹھائیں گے انہوں کہا کہ اسلام کا مطلب ہی امن ہے لیکن جب مسلمان دیکھتاہے کہ ظلم ہو رہا ہے اوردنیا چپ بیٹھی ہے تو لوگ انتہا کی طرف جاتے ہیں میںبھارت کو جانتاہوں جب پلوامہ کا واقعہ ہوا توپاکستان پر الزام لگایا نریندرمودی کان کھول کر سن لو ایمان والا آدمی موت سے نہیںڈرتا،اللہ نے قرآن میں فرمایا ہے کہ جو لوگ ایمان لائے اللہ ان کے خوف کو ختم کردیتا ہے ،نریندر مودی غلط فہمی میںنہ رہنا اس لئے کہ پائلٹ واپس نہیں کیا کہ پاکستان کو تم سے ڈرتھا بلکہ اس لئے واپس کیاکہ ہم امن چاہتے ہیںلیکن اب دنیا کے سامنے کہنا چاہتا ہوں کہ مقبوضہ کشمیر میں ہونے والے ظلم کاردعمل آئے گا،میںبار بار کہتا ہوںکہ اینٹ کا جواب پتھر سے آئے گا اگر جنگ ہوئی تو آخری دم تک مقابلہ کریں گے

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*