موجودہ صوبائی حکومت نے ریکارڈ ترقیاتی کام کرائے ہیں، صوبائی وزراءبلوچستان

کوئٹہ(سٹاف رپورٹر)بلوچستان کے صوبائی وزراءنے دعویٰ کیا ہے کہ موجودہ حکومت نے ریکارڈ ترقیاتی کام کرائے ہیں لیکن حزب اختلاف اسمبلی میں جھوٹی تقاریر کرکے عوام کو گمراہ کرنے کی کوشش کررہی ہے وفاقی حکومت نے پہلی بار صوبے کی 162 ارب کی اسکیمات منظور کیں ہیں کوئٹہ کی مصروف شاہراوں پٹیل اور پرنس روڈ کی توسیع پر کام کیا جارہا ہے سریاب روڈ پر 130 کلو میٹر روڈ کے توسعی منصوبے کا کام آخری مراحل میں ہے کےنسر ہسپتال کا 80فےصد کام مکمل ہو چکا ہے اسی طرح نواں کلی اور امراض قلب کا ہسپتال بھی مکمل ہونے والا ہے یونیورسل ہیلتھ کارڈ کے ذریعے عوام کو صحت کے حوالے سے ریلیف فراہم کیا جائے گا اور دو مہےنے کے اندر شناختی کارڈ کے مطابق ہر شخص دس لاکھ تک کارڈ فراہم کرے گی کوئٹہ کراچی قومی شاہراہ کو دو رویہ کیا جانے کا کریڈیٹ بھی موجودہ حکومت کو جاتا ہے‘ ان خےالات کا اظہارصوبائی وزےر خزانہ مےر ظہور احمد بلےدی‘ صوبائی وزےر داخلہ مےر ضےاءاللہ لانگو‘ پارلےمانی سےکرٹری برائے اطلاعات بشریٰ رند ‘صوبائی وزےر رےونےو مےر سلےم کھوسہ‘ صوبائی مشےر کھےل و ثقافت عبدالخالق ہزارہ‘ صوبائی مشےر کےو ڈی اے مبےن خان خلجی اور رکن صوبائی اسمبلی ماہ جبےن شےران نے کوئٹہ پرےس کلب مےں مشترکہ پرےس کانفرنس کرتے ہوئے کہی‘ انہوں نے کہاکہ حزب اختلاف اسمبلی میں جھوٹ بول کر عوام کو گمراہ کرنے کی کوشش کررہی ہے موجودہ حکومت میں سب سے زیادہ ترقیاتی کام ہوئے ہیں صوبائی دارلحکومت میں اب تک جتنا کام ہوا ہے ماضی میں اسکی مثال نہیں ملتی حکومت کی کوششوں سے بلوچستان کا کینسر ہسپتال زیر تعمیر ہےاور امراض قلب کا ہسپتال بھی مکمل ہونیوالا ہے سریاب روڈ کی توسیع اور ایوب اسٹیڈیم میں ہاکی گراونڈ بھی بن رہا ہے کوئٹہ کی مصروف شاہراوں پٹیل اور پرنس روڈ کی توسیع پر کام کیا جارہا ہے سریاب روڈ پر 130 کلو میٹر روڈ کے توسعی منصوبے کا کام آخری مراحل میں ہے عوام کو صحت کی معیاری سہولیات کی فراہمی کیلئے یونیورسل ہیلتھ کارڈ کے ذریعے عوام کو صحت کے حوالے سے ریلیف فراہم کیا جائے گاکوئٹہ کراچی قومی شاہراہ کو دو رویہ کیا جانے کا کریڈیٹ بھی موجودہ حکومت کو جاتا ہے جو عوام کی ایک دیرینہ مطالبہ تھا حزب اختلاف سوشل میڈیا کیلئے تقریریں کرتی ہے ہمارے نظام میں پوسٹ کریٹ کرنا سب سے مشکل کام ہے اگر کسی کے پاس ثبوت ہے بے قاعدگیوں کے حوالے سے تو ہمیں پیش کریں حکومت کارروائی کریں گے سب کہہ رکھا یے کہ بدعنوانی کا شور مچانے کی بجائے ثبوت ہے تو سامنے لایا جائے ‘رواں سال 73 ارب پی ایس ڈی پی کی مد میں خرچ کرچکے ہیں محرمیوں کی وجہ سے بلوچستان کی ضرورتیں بڑھ گئی تھی پہلی بار وفاق نے ہماری 162 ارب کی منصوبے منظور کئے کورونا کی وبا اور مشکلات کے باوجود عوام دوست بجٹ لایا جائے گا انہوں نے کہاکہ امن وامان کی بحالی کےلئے ہمارے فورسز بھرپور طرےقے سے کردار ادا کررہی ہے اور حکومتی رٹ برقرار ہے جہاں تک لےوےز پوسٹوں کے حوالے سے مسئلہ ہے ےہ ہم مانتے ہےں کہ جاب دےنے مےں ہمےشہ ہمےں مسئلہ درپےش ہوتا ہے لوگ عدالتو ں کا رخ کرتے ہےں اور عدالتی حکم کے بعد ہم مجبور ہو جاتے ہےں کہ آرڈر نہےں کرسکتے لےکن موجودہ حکومت نے ابھی تک 20ہزار لوگوں کو نوکریاں دی ہےں انہوں نے کہاکہ موجودہ حکومت نے دو کامےاب بجٹ پےش کےے گئے جو عوامی مفادات کے مطابق رقم اور اسکےمات بنائے گئے آنےوالا بجٹ مےں کامےاب اور عوام دوست بجٹ ہوگا جس مےں پانی کے مسئلے کے حل کےلئے مختلف علاقوں مےں ڈےمز بھی بن رہے ہےں اور ساتھ مےں اب تک 39ڈگری کالج اپ گرےڈ ‘پرائمری سکولوں کو مڈل اور مڈل کو ہائی کا درجہ دےدےاگےا انہوںنے کہاکہ موجودہ حکومت نے ریکارڈ ترقیاتی کام کرائے ہیں لیکن حزب اختلاف اسمبلی میں جھوٹی تقاریر کرکے عوام کو گمراہ کرنے کی کوشش کررہی ہے وفاقی حکومت نے پہلی بار صوبے کی 162 ارب کی اسکیمات منظور کیں ہیں کوئٹہ کی مصروف شاہراوں پٹیل اور پرنس روڈ کی توسیع پر کام کیا جارہا ہے سریاب روڈ پر 130 کلو میٹر روڈ کے توسعی منصوبے کا کام آخری مراحل میں ہے کےنسر ہسپتال کا 80فےصد کام مکمل ہو چکا ہے اسی طرح نواں کلی اور امراض قلب کا ہسپتال بھی مکمل ہونے والا ہے یونیورسل ہیلتھ کارڈ کے ذریعے عوام کو صحت کے حوالے سے ریلیف فراہم کیا جائے گا اور دو مہےنے کے اندر شناختی کارڈ کے مطابق ہر شخص دس لاکھ تک کارڈ فراہم کرے گی کوئٹہ کراچی قومی شاہراہ کو دو رویہ کیا جانے کا کریڈیٹ بھی موجودہ حکومت کو جاتا ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*