تازہ ترین

ملک مشکل وقت سے نکل رہا ہے؟

وزیر اعظم عمر ان خان کا گذشتہ رو ز دو رہ زیا رت کے مو قع پر ایک تقر یب سے خطا ب کے دور ان کہنا تھا کہ ملک مشکل وقت سے نکل رہا ہے جب اگلی ہما ری حکومت آئے گی تو پاکستان اور تیز ی سے تر قی کر ے گا بلوچستان میں پیسہ خر چ کرنے کے با وجو د دہشت گر د حملے افسو س نا ک ہیں ہم نے مشکل وقت اور مشکل حا لا ت کے با وجو د بلوچستان کو جتنا ہو سکے فنڈ ز دیئے ہیں پنجا ب اور کے پی کی حکومتیں کہتی ہیں کہ آپ بلوچستان پر زیا دہ مہر با ں ہیں انہوں نے وا ضح کیا کہ ما ضی میں بلوچستان پر جو پیسہ خر چ کیا جا ناچا ہیئے تھا وہ بھی صحیح طر یقے سے خر چ نہیں کیا گیا اور نہ ہی تو جہ دی گئی بلوچستان کے لو گو ں کو بھی ہیلتھ کا رڈ ملنا چا ہیئے۔
ملک کا مشکل وقت سے نکلنے کا وزیر اعظم عمر ان خان کا مذکورہ بیان عا م آدمی کی سمجھ سے با لا تر ہے کہ انہوں نے کو نسے مشکل وقت کی با ت کی ہے لیکن یہاں صو رتحال اس کے بر عکس ہے حالانکہ ملک پر اس وقت بڑ ا مشکل وقت ہے جب کسی ملک کی عو ام کی معا شی حا لت بہتر نہیں ہو گی تو اس پر کون سا وقت ہو گا ملک میں تا ریخ کی بد تر ین مہنگائی کا را ج اور اس کے سا تھ سا تھ بے رو ز گا ری اپنے عر وج پر ہے دیگر مسائل نے بھی ملک کو گھیر ا ہو ا ہے ایک عا م آدمی کی معا شی حا لت اتنی خر اب ہو چکی ہے کہ وہ دو وقت کی رو ٹی کے حصو ل کے لیے سر گر دا ں ہے اور یہ صو رتحال مو جو دہ حکومت کے بر سر اقتدار آنے کے بعد شر وع ہو ئی ہے اس میں کمی کی بجا ئے مسلسل اضا فہ ہو رہا ہے اس تما م صو رتحال کا ذمہ دا ر کون ہے؟عو ام اس سو ال کا جو اب چا ہتی ہے بقول وزیر اعظم عمر ان خان کہ موجو دہ بر ی معا شی صو ر تحال کے ذمہ دا ر سا بقہ حکمر ان ہیں جنہوں نے ملک کو بے در دی سے لو ٹا اور میں ان کو نہیںچھو ڑ و ں گا لیکن افسو س کی با ت یہ ہے کہ ڈھائی سالہ حکومت کے دو ران ملک سے لو ٹی گئی رقم کی وا پسی کے لیے کوئی خا طر خواہ اقد اما ت اب تک نظر نہیں آرہے ہم سمجھتے ہیں کہ جب تک لوٹی گئی رقم واپس نہیں آتی ملک کی معا شی حا لت بہتر نہیں ہو سکتی اور اس کا بر اہ را ست اثر غر یب عو ام پر پڑ رہا ہے اس لیے حکومت کو صحیح معنو ں میں ملک کو مشکل سے نکالنے کے لیے احسن اقد اما ت کرنے چاہئیں اگر ایسا ہو گا تو عو ام پی ٹی آئی کو دو با رہ منتخب کر یں گی۔
جہاں تک بلوچستا ن کی تر قی کا تعلق ہے تو اس صو بے کو ہر دو ر میں مسلسل نظر اند از کیا جاتا رہا اس کے مسائل کو سنجیدہ نہیں لیا گیا جس کے باعث یہ پسما ند گی کا شکا ر اور عو ام میں احسا س محر ومی پید ا ہو گیا اس طرح بلو چستان کو وفا ق کی جا نب سے دیئے گئے فنڈ زپر کسی بھی صو بے کو بالکل اعتر ا ض نہیں کرنا چا ہیئے وہ خو د تو تر قی یا فتہ ہیں لیکن وہ شاید بلوچستان کی پسما ند گی کا خاتمہ نہیں چا ہتے یہ بلوچستا ن کے سا تھ زیا د تی کے متر ادف اقد ام ہے حالانکہ بلوچستان قد ر تی معد نیا ت سے ما لا مال صو بہ ہے لیکن اس کے با وجو د اس کا پسما ند ہ ہونا کسی بھی طر ح صحیح نہیں ہے ملک کے با قی صو بو ں اور خصو صاً وفا ق کو اس سلسلے میں بلوچستان کو ملنے والے فنڈز کی مخا لفت کرنے کی بجائے اس کی حما یت کرنی چا ہیئے تا کہ یہ صو بہ بھی پسما ند گی سے نکل کرملک کے دوسر ے تر قی یا فتہ صوبوں کے بر ابر آجائے وزیر اعظم عمر ان خان نے جو بلوچستان کے لو گو ں کوہیلتھ کا رڈ جا ری کرنے کی با ت کی ہے اس پر عمل در آمد کرنے کی اشد ضرورت ہے کیونکہ ہیلتھ کا رڈ با قی صو بوں کو جا ری ہو چکے ہیں اس لیے بلوچستان کا بھی ان پر حق ہے۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*