تازہ ترین

صو بے کے وسیع تر مفا د میں اقد اما ت

یہ با ت حقیقت پر مبنی ہے کہ کسی بھی حکومت چا ہے وہ وفا قی ہو یا صو بائی حکومت اگر اپو ز یشن ایک دوسر ے سے تعا ون کریں تو وہ حکومت بہتر ین کام کر سکتی ہے اپو ز یشن کاکام تنقید بر ائے تعمیر ہونی چا ہیئے تنقید بر ائے تنقید صحیح اقد ام نہیں ہو تا ہما رے ہا ں بد قسمتی سے اپو ز یشن تنقید بر ائے تنقید کر تی ہے کیونکہ اس کو حکومت کے نہ ملنے کا غصہ ہو تا ہے جو ان اسمبلیو ں میں حکومت کے ہر اچھے برے اقد ام کی مخا لفت کر کے اپنی بھڑ ا س نکا لتی ہے۔
بلوچستان میں گذشتہ 3 سال ایسا ہی چلتا رہا اپو زیشن حکومت پر فنڈ زنہ دینے کے الز اما ت لگا تی رہی جبکہ حکومت صو بے کے تما م علا قو ں میں یکسا ں بنیا دو ں پر کام کر نے کے دعو ے کر تی رہی اور یہ بیانا ت بھی دیتی رہی کہ جن حلقو ں سے ہما ری پا رٹی کے امید وا ر کامیا ب نہیں ہو ئے ہم اس علا قے کی تر قی کے لیے اقد اما ت کر ے گی ایسی کشمکش میں صو بے میں ایک بڑ ا بحران پید ا ہو گیا اور با لا خر جام کمال خان نے وزارت اعلیٰ کے عہد ے سے استعفےٰ دید یا اور پھر میرعبد القد و س بز نجو بھا ر ی اکثر یت سے وزیر اعلیٰ بلوچستان منتخب ہو گئے سا بق وزیر اعلیٰ بلوچستان جا م کمال خان کو عہد ے سے ہٹا نے کیلئے اپو ز یشن نے پہل کی اور ان کے خلا ف تحریک عد م اعتما د پیش کی اور اس کے بعد حکومت کے نا را ض ار اکین اسمبلی میں مید ان میں آگئے اوریہ بحر ان شد ت اختیا ر کر گیا ۔
گذشتہ رو ز وزیر اعلیٰ بلوچستان میر عبد القد و س بز نجو سے بلوچستان اسمبلی میں اپو ز یشن لیڈ ر ملک سکند ر خان ایڈ وکیٹ کی سر بر اہی میں ایک وفد نے ملا قات کی اس دو ران وزیر اعلیٰ بلوچستان میر عبد القد و س بز نجو نے با ت چیت کر تے ہوئے کہا کہ ہم صو بے کے وسیع تر مفا د میں سب کو سا تھ لے کر چلنے پر یقین رکھتے ہیں اوریہ امر باعث مسر ت ہے کہ حکومت اور اپو زیشن عو ام کی خد مت کرنا چا ہتی ہیں تما م اہم صو بائی امو ر پر اپو زیشن کو بھی اعتما د میں لیا جا ئے گا اس طرح اپو ز یشن لیڈ ر ملک سکند ر خان ایڈو کیٹ نے اس عز م کا اظہا ر کیا ہے کہ حکومت کے ہر اس اچھے کام کی حما یت کی جا ئے گی جو صو بے کے مفا د میں ہو گا۔
ہم سمجھتے ہیں کہ وزیر اعلیٰ بلوچستان میر عبد القد وس بز نجو اور اپو ز یشن لیڈ ر ملک سکند ر خان ایڈ وکیٹ کے مذکو رہ بیانا ت صو بے اور اس کی عو ام کے بہتر ین مفا د میں ہے اس طرح صو بے میں تر قیا تی کا م ہو ں گے اور اپو ز یشن بلا وجہ ان منصو بوں میں رکا وٹ نہیں بنے گی کیونکہ وزیر اعلیٰ بلوچستان میر عبد القد و س بز نجو نے صو بے کی یکسا ں تر قی کو اپنا عز م قر ار دیا ہے جوکہ بلا شبہ قا بل تعر یف اقد ام ہے اگرایسا ہو جا ئے تو یہ صو بے کی تا ریخ میں احسن اقد ام ہو گا جہاں اپو ز یشن صو بے کی مفا د کے خا طر حکومت سے تعا ون سے کر ے گی۔
اگر اس طرح حکومت اور اپو ز یشن دونوں ملکر کام کر یں تو بلوچستان پسما ند گی سے نکل جا نے میں کامیا ب ہو جا ئے گا کیونکہ رو ائتی اپو ز یشن کی وجہ سے اکثر کام مکمل نہیں ہو جا تے جو یقینا صو بے کا بڑ ا نقصا ن ہے چونکہ صو بہ سب کا مشترکہ ہے اس لیے اس کی تر قی کے لیے اقد اما ت بھی مشتر کہ ہونے چاہئیں۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*