تازہ ترین

صوبائی حکومتیں سخت مالیاتی ڈسپلن اپناکر اخراجات پر کنٹرول اور کمی لاسکتی ہیں ، شوکت ترین

اسلام آباد(آئی این پی ) وفاقی وزیر خزانہ شوکت ترین نے کہاہے کہ صوبائی حکومتیں سخت مالیاتی ڈسپلن اپناکر اخراجات پر کنٹرول اور کمی لاسکتی ہیں ،مالیاتی کنٹرول سے ملنے والے اضافی فنڈز سماجی اور اقتصادی ترقی کیلئے خرچ کئے جائیں ،بجٹ میں صحت اور تعلیم کے شعبوں کو اولین ترجیحات دی جائیں۔ منگل کو وزیر خزانہ شوکت ترین سے کے پی کے وزیر خزانہ تیمور سلیم خان جھگڑا نے ملاقات کی اور ان سے آئندہ بجٹ پر بات چیت کی ۔اس دوران کے پی کے وزیر خزانہ کی حکومتی اخراجات پر کنٹرول اور کورونا ریلیف کے امور پر بریفنگ دی گئی ۔صوبائی وزیر خزانہ کی ٹیکس وصولیوں میں اضافے اور ٹیکسز کی تعداد میں کمی پر بھی بریفنگ دی گئی ۔تیمور سلیم خان جھگڑا نے کہاکہ حکومت تنخواہوں اور پنشن کے اخراجات کو منظم بنانے کیلئے اقدامات کررہی ہے جبکہ وفاقی وزیر خزانہ شوکت ترین نے کہاکہ صوبائی حکومت سخت مالیاتی ڈسپلن اپناکر اخراجات پر کنٹرول اور کمی لاسکتی ہے ۔مالیاتی کنٹرول سے ملنے والے اضافی فنڈز سماجی اور اقتصادی ترقی کیلئے خرچ کئے جائیں۔بجٹ میں صحت اور تعلیم کے شعبوں کو اولین ترجیحات دی جائیں ۔دریں اثناء وزیر خزانہ شوکت ترین سے پنجاب کے وزیر خزانہ مخدوم ہاشم جواں بخت نے بھی ملاقات کی اور انہیں آئندہ بجٹ اور مالیاتی صورتحال کے امور پر بریفنگ دی ۔صوبائی وزیر خزانہ نے کورونا وبا کے دوران متاثرہ طبقے کیلئے ریلیف اقدامات پر بھی بریفنگ دی۔وزیر خزانہ پنجاب مخدوم ہاشم جواں بخت نے کہاکہ حکومت ٹیکسوں میں اضافے، روزگار بڑھانے اور غربت میں کمی کیلئے اقدامات کررہی ہے، زراعت اور صنعتی شعبے کی ممکنہ استعداد اور خدمات کے شعبے کی بہتری کیلئے اقدامات کئے گئے ہیں۔اس دوران اپنی گفتگو میں وفاقی وزیر خزانہ شوکت ترین نے کہاکہ بجٹ سازی میں اخراجات پر کنٹرول اور ٹیکسوں میں بہتری کی پالیسی پر توجہ دی جائے،بجٹ میں گروتھ کے فروغ کو ترجیحات دی جائیں ۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*