تازہ ترین

دورہ ویسٹ انڈیز،قومی اوراے ویمنز ٹیموں کا اعلان، جویریہ خان قومی خواتین ٹیم کی کپتان مقرر

کراچی(سپورٹس ڈیسک)پی سی بی ویمنز سلیکشن کمیٹی نے دورہ ویسٹ انڈیز میں شامل وائیٹ بال سیریز کیلئے قومی خواتین اور اے کرکٹ ٹیموں کیلئے26 کھلاڑیوں کا اعلان کردیا ہے۔208 ون ڈے انٹرنیشنل میچز میں پاکستان کی نمائندگی کرنے والی جویریہ خان کو دورہ ویسٹ انڈیز کے لیے قومی خواتین کرکٹ ٹیم کی کپتان مقرر کیا گیا ہے۔ ون ڈے اور ٹی ٹونٹی سیریز کے لیے قومی خواتین اے کرکٹ ٹیم کی علیحدہ علیحدہ کپتان نامزد کی گئی ہیں۔ ون ڈے سیریز میں قومی خواتین اے کرکٹ ٹیم کی قیادت رامین شمیم کریں گی۔ وہ2 ون ڈے اور 4 ٹی ٹونٹی انٹرنیشنل میچز میں ملک کی نمائندگی کرچکی ہیں۔ٹی ٹونٹی سیریز میں سدرہ امین قومی خواتین اے کرکٹ ٹیم کی قیادت کریں گی۔ وہ 98 انٹرنیشنل میچز کا تجربہ رکھتی ہیں۔اسکواڈ میں جویریہ خان (کپتان، قومی خواتین کرکٹ ٹیم)، رامین شمیم (ون ڈے کپتان قومی خواتین ایکرکٹ ٹیم)، سدرہ نواز (ٹی 20 کپتان قومی خواتین اے کرکٹ ٹیم)، عالیہ ریاض،ایمن انور، انعم امین، عائشہ نسیم، عائشہ ظفر، ڈیانا بیگ،فاطمہ ثناء،ارم جاوید،جویریہ رؤف، کائنات امتیاز،کائنات حفیظ،ماہم طارق،منیبہ علی صدیقی (وکٹ کیپر)،ناہیدہ خان،نجیہ علوی (وکٹ کیپر)، نشرہ سندھو،نتالیہ پرویز،ندا ڈار،عمیمہ سہیل، صباء نذیر، سعدیہ اقبال،سدرہ امین اور سیدہ عروب شاہ شامل ہیں۔قومی خواتین کرکٹ ٹیم کے دورہ کیریبئن میں 3 ٹی ٹونٹی اور 5 ون ڈے انٹرنیشنل میچزشامل ہیں۔ اس دوران دونوں ممالک کی خواتین اے کرکٹ ٹیموں کے مابین 3 ٹی ٹونٹی اور 3 ون ڈے میچزپر مشتمل کی سیریز کھیلی جائے گی۔یہ تمام 26 کرکٹرز ان تمام 14 میچز کے لیے دستیاب ہوں گی۔چیئرپرسن نیشنل ویمنز سلیکشن کمیٹی عروج ممتاز کا کہنا ہے کہ قومی خواتین کرکٹ ٹیم اور قومی خواتین اے کرکٹ ٹیم کا اکٹھے کسی دورے پر روانہ ہونا پاکستان کے لیے ایک تاریخی لمحہ ہے۔انہوں نے کہاکہ دورہ ویسٹ انڈیز دراصل قومی خواتین کرکٹ کے پول میں شامل کھلاڑیوں کے لیے اپنی صلاحیتوں کے اظہار کا بہترین موقع ہے جس کی بدولت وہ سیزن 21-2022 میں اپنی جگہ مزید بہتر کرسکتی ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ یہ 26 خواتین کرکٹرزبہترین کارکردگی کی بدولت گزشتہ 9 ماہ سے ہمارے ہائی پرفارمنس کیمپس کا حصہ ہیں، جہاں انہوں نے اپنی خامیوں پر قابو پانے کے لیے ہیڈ کوچ قومی خواتین کرکٹ ٹیم ڈیوڈ ہیمپ کی زیرنگرانی سخت محنت کی ہے۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*