حکومت جتنی گھبرائی ہوئی ہے شاید جنوری سے پہلے چلی جائے، مریم نواز

لاہور(آئی این پی ) پاکستان مسلم لیگ (ن)کی نائب صدرمریم نواز نے کہا ہے کہ عمران خان حکومت میں نہیں انہیں ڈمی بنا کرکرسی پربٹھایا گیا ہے،کراچی واقعے میں وزیراعظم کی خاموشی نے ثابت کردیا وہ کہیں نہیں ہیں،کراچی واقعہ پر انکوائری کی ضرورت نہیں، سب کچھ سامنے ہے، انکوائری رپورٹ چھپانے نہیں دیں گے، بڑوں کی لڑائی میں چھوٹوں کا کوئی کام نہیں، نوازشریف مخالفین کے سروں پر سوار ہیں،غلط فیصلوں کے اثرات قوم کو بھگتنا پڑتے ہیں، روٹی 30 روپے کی ہونے جا رہی ہے، مارکیٹ سے آٹا غائب ہے۔ تفصیلات کے مطابق لاہور میں دھرنے پر بیٹھے بلوچ طلبا سے ملاقات کے موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مسلم لیگ(ن)کی نائب صدرمریم نوازنے کہا کہ میں اس دھرنے میں سیاست کے لئے نہیں آئی، طلبا سے اظہاریک جہتی کیلیے آئی ہوں،میں پرسوں کوئٹہ جلسے میں ان طلبہ کا معاملہ اٹھا ں گی، یہ طلبا پاکستان کا مستقبل ہیں، تعلیم کی خاطربچے سڑکوں پردربدرپھررہے ہیں، بلوچستان کے طلبا 12 دنوں سے سڑکوں پررل رہے ہیں، اسکالرشپ دینے والے آج جیل میں ہیں۔ نوازشریف نے پورے ملک کے طلبہ کو ان کا حق دیا۔ ایسی کیا آفت آگئی اپ کو اسکالر شپ واپس لینے پڑی۔ مریم نوازنے کہا کہ نوازشریف کے بغیر پاکستان اور شہبازشریف کے بغیر پنجاب لاوارث ہے، پنجاب کے عوام کو پتہ ہے کہ کس نے ان کی خدمت کی ہے، بھائی کو بھائی سے لڑوانے کی سازش کی گئی ، غلط فیصلوں کے نتائج عوام کو بھگتنا پڑتے ہیں، بڑوں کی لڑائی میں عمران خان کہیں نہیں ہیں، اگرپارٹی کوئی غلط فیصلہ کربھی لے تو اس کے اثرات سامنے آنا شروع ہو جاتے ہیں، میں پارٹی ڈسپلن کی پابند ہوں اس لئے کچھ نہیں کہنا چاہتی، یہ جتنے بھی کیس بنائیں گے، اپنے منہ پرہی کالک ملے گی۔ مریم نوازنے کہا کہ یہ کہتے ہیں پنجاب بڑا بھائی ہے میں کہتی ہوں بلوچستان بڑا بھائی ہے، اتوارکو کوئٹہ میں جلسہ ہے (آج) ہفتہ کو روانہ ہورہی ہوں، شہبازشریف نے دل سے پنجاب کی خدمت کی، میاں صاحب ملک میں نہ ہوکربھی مخالفین کے سروں پرسوارہیں، شہبازشریف کو بھائی سے نہ لڑنے کی سزا دی جارہی ہے، جتنے کیسز بنانے ہیں بنا لو، کراچی واقعے سے پتہ چل گیا کہ اصل حکومت کون ہے، وہ تو اب ڈمی بھی نہیں رہے، نواز شریف نے کہا تھا کہ ریاست کے اوپر ریاست ہے تو عمران خان نے کراچی واقعے میں اسے ثابت کردیا،اس واقعے میں کچھ چھپائیں گے تو ہم ایسا ہونے نہیں دینگے۔ مریم نوازنے کہا کہ کیپٹن (ر)صفدرکی گرفتاری کا وارنٹ تھا میرا نہیں، کراچی واقعے کی انکوائری رپورٹ پبلک ہونی چاہیے۔ مریم نواز کے ساتھ ایسا ہوسکتا ہے توپاکستان کی کوئی بھی بہن بیٹی کے ساتھ کیا ہوتا ہوگا، اسلام کے مطابق جنگ میں بھی ماں بہن کے ساتھ اسے سلوک کی اجازت نہیں ہے، مجھے ایک لمحے کے لئے خیال نہیں آیا کہ کراچی واقعے میں پیپلز پارٹی ملوث ہے۔ مریم نوازنے کہا کہ عمران خان حکومت میں نہیں انہیں ڈمی بنا کرکرسی پربٹھایا گیا ہے، خدا کا واسطہ ہے آپ جعلی ہی سہی لیکن وزیراعظم کی کرسی پربیٹھیں ہیں، حکومت جتنی گھبرائی ہوئی ہے شاید جنوری سے پہلے چلی جائے۔ مریم نوازنے کہا کہ اس حکومت نے مرنا بھی مہنگا کردیا ہے، ان کا یہ حال اپوزیشن کی وجہ سے نہیں بلکہ عوام کی بددعاوں کی وجہ سے ہوا ہے۔ مریم نوازنے کہا کہ جلد یا بدیر عاصم سلیم باجوہ کو عدالت کے سامنے پیش ہونا ہوگا، یہاں کوئی مقدس گائے نہیں ہے۔ منتخب وزیراعظم اگر قانون کے سامنے ہو سکتے ہیں تو باقی کیوں نہیں ہو سکتے، آپ کو نیب اوردیگراداروں سے استثنی کیوں چاہیئے، عاصم باجوہ سے سوال کیا جا رہا ہے کہ ان کے پاس اربوں کھربوں کے اثاثے کہاں سے آئے۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*