تازہ ترین

بی اے پی، بی این پی عوامی اور پی ٹی آئی کے،14ناراض ارکان کی وزیراعلیٰ بلوچستان کےخلاف تحریک عدم اعتماد جمع

Districts_of_Balochistan,_Pakistan_with_district_names

کوئٹہ(این این آئی) بلوچستان عوامی پارٹی ، بی این پی (عوامی) اور پاکستان تحریک انصاف کے 14ناراض ارکان کے دستخطوں سے وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال خان کے خلاف تحریک عدم اعتماد کی قرار داد بلوچستان اسمبلی سیکرٹریٹ میں جمع کروادی گئی ،تفصیلات کے مطابق پیر کو بلوچستان اسمبلی کے 14ارکان بلوچستان عوامی پارٹی کے سردار محمد صالح بھوتانی، میر جان محمد جمالی، میر ظہور بلیدی، سردار عبدالرحمن کھیتران میر اکبر آسکانی، حاجی محمد خان لہڑی ، بشریٰ رند، ماہ جبین شیرانی،عبدالرشید بلوچ، لیلہ ترین، میر سکندر عمرانی ، بلوچستان نیشنل پارٹی (عوامی) کے میر اسداللہ بلوچ، مستورہ بی بی ، پاکستان تحریک انصاف کے میر نصیب اللہ مری کے دستخطوں سے آئین کے آرٹیکل 136اور بلوچستان اسمبلی کے قواعد انضباط کار مجریہ 1974کے قاعدہ 19Bکے ساتھ ملا کر سیکرٹری بلوچستان اسمبلی کو وزیراعلیٰ جام کمال خان کے خلاف تحریک عدم اعتماد کی قرار داد جمع کروا دی گئی ہے ،قرار داد کے متن میں کہاگیا ہے کہ گزشتہ تین سالوں کے دوران وزیراعلیٰ جام کمال خان کی خراب حکمرانی کے باعث بلوچستان میں شدید مایوسی ، بد امنی، بے روزگاری اور اداروں کی کارکردگی بر ی طرح متاثر ہوئی ہے متن میں کہا گیا ہے کہ وزیراعلیٰ جام کمال خان نے اقتدار پر براجمان ہوکر خود کو عقل کل سمجھ کر صوبے کے تمام اہم معاملات کو مشاورت کے بغیر ذاتی طور پر چلایا ہے جس سے صوبے کو ناقابل تلافی نقصان پہنچایا گیا جبکہ اس بارے میں انہیں کابینہ اراکین وقتا فوقتا آگاہ بھی کرتے رہے ہیں لیکن انہوں نے اس جانب کوئی توجہ نہ دی علاوہ ازیں بلوچستان کے حقوق کے حوالے سے وزیراعلیٰ جام کمال خان نے وفاقی حکومت کے ساتھ آئینی اور بنیادی حقوق کے مسائل پر انتہائی غیر سنجیدیگی کا ثبوت یدا ہے جس سے صوبے میں بجلی، گیس ، پانی اور شدید معاشی بحران پیدا ہوئے متن میں کہا گیا ہے کہ اس وقت صوبے کے مختلف شعبوں سے تعلق رکھنے والے افراد جن میں بیور وکریٹس ،ڈاکٹرز، طلبائ، زمیندار، حکومت کی بیڈ گورننس کی وجہ سے سراپا احتجا ج ہیں تحریک عدم اعتماد کے متن میں مطالبہ کیا گیا ہے کہ وزیراعلیٰ جام کمال خان کی خراب کارکردگی کو مد نظر رکھ کر انہیں وزیراعلیٰ /قائد ایوان کے عہدے سے ہٹا کر ان کی جگہ پر ایوان کی اکثریت کے حامل رکن اسمبلی کو وزیراعلیٰ قائد ایوان منتخب کیا جائے ۔ تحریک عدم اعتماد سیکرٹری اسمبلی کے پاس جمع کرواتے وقت بلوچستان عوامی پارٹی کے بانی سینیٹر سعید احمد ہاشمی ، ارکان اسمبلی میر جان محمد جمالی، میر ظہور بلیدی،میر اسد اللہ بلوچ، سردار عبدالرحمن کھیتران، میر نصیب اللہ مری، میر سکندر عمرانی، میر اکبر آسکانی، میر محمد خان لہڑی، بلوچستان عوامی پارٹی کے ررہنماءسردار زادہ شہزاد صالح بھوتانی ،میر عبدالرﺅف رند، میر اعجاز سنجرانی سمیت دیگر بھی موجود تھے ، اس موقع پر ارکان اسمبلی نے سیکرٹری اسمبلی کو قرار داد جمع کرواتے ہوئے کہا کہ ہم 14ارکان کی جانب سے تحریک عدم اعتماد جمع کروا رہے ہیں امید ہے جلد از جلد اسمبلی کا اجلاس طلب کر کے اس پر کاروائی کی جائےگی۔ سیکرٹری اسمبلی نے قرار اداد وصول کرلی ۔

 

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*