بنغازی میں امریکی سفارتخانے پر ایران نے حملہ کرایا، امریکی اخبار

iran america

واشنگٹن (م ڈ )امریکی مصنف اور صحافی کینتھ ٹمرمین نے سی آئی اے سے مطالبہ کیاہے کہ وہ ان دستاویزات کو سامنے لائے جن میں لیبیا کے شہر بنغازی میں امریکی سفارت خانے پر حملے میں ایران کے براہ راست ملوث ہونے کے ثبوت فراہم کیے گئے ۔میڈیارپورٹس کے مطابقصحافی کینھ نے ایک مضمون میں کہا کہ ایک ملٹری ٹھیکیدار کے مطابق فروری 2011 میں لیبیا کے لیڈر معمر قذافی کے خلاف بغاوت کے ابتدائی دنوں میں ایرانی قدس فورس کے ایجنٹ سڑکوں پر کھلے عام گھوم رہے تھے۔انھوں نے مزید لکھا کہ سنہ 2012 کے موسم گرما تک بنغازی اور طرابلس میں امریکی انٹلیجنس اور سیکیورٹی افسران نے سفیر کرسٹوفر اسٹیونس سمیت ان کی چین آف کمانڈ کو متنبہ کیا تھا کہ ایرانی بنغازی میں امریکی تنصیبات پر دہشت گرد حملے کی تیاری کر رہے ہیں۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*