تازہ ترین

بلوچستان کے مختلف علا قو ں میں زلزلہ

گذشتہ را ت صو بائی دا ر الحکومت کوئٹہ سمیت بلوچستا ن بھر کے مختلف علا قو ں میں زلز لہ آیا زلز لے کا مر کز ہرنائی تھا 5.9 کی شد ت سے آنے والے زلز لے کے باعث اب تک 20 افر اد کے جا ں بحق اور سینکڑ و ں کے زخمی ہونے کی اطلا عا ت ہیں جبکہ اس سے سینکڑ و ں مکا نا ت بھی متا ثر ہو ئے ہیں زلز لے سے سب سے زیا دہ نقصان ہرنائی میں ہو ا ہے جہاں متعد د مکا نا ت اور سرکاری عما ر تو ں کو بھی نقصان پہنچا ہے زیا دہ ہلا کتیں گھرو ں کی چھتیں گر نے کے سبب ہوئیں جبکہ مر نے والوں میں بچے اور خو اتین بھی شا مل ہیں شعبہ تعلقا ت عامہ پا ک فو ج آئی ایس پی آر کے مطا بق امد ادی کاروائیوں میں آرمی کے ہیلی کا پٹر ز نے بھی حصہ لیا اور 9 افر اد کو کوئٹہ منتقل کیا گیا اور اس طر ح متا ثر ہ آبا دی میں خو راک اور امد ادی سا مان کی تقسیم سمیت متا ثر ین کو طبی سہو لیا ت کی فر اہمی شر وع کر دی گئی ہے۔
بلوچستا ن کے مختلف علاقوں میں آنے والے زلز لے کے نتیجے میں جا ں بحق ،زخمی اور بڑ ے پیما نے پر نقصا ن ہونا قا بل تشو یش با ت ہے اس لیے متا ثر ہ علا قو ں میں فو ری طو ر پر امد ادی سر گر میاں کو تیز کرتے ہوئے متاثرین کو ہر ممکن مد د کر نی چا ہیئے جو کہ انتہائی نا گز یر ہے گو رنر بلوچستان سید ظہو ر احمد آغا اور وزیر اعلیٰ بلوچستان جا م کمال خان نے فو ری طو ر پر متا ثرہ علا قو ں کا دورہ اور متا ثر ین کی ہر ممکن امد اد کر نے کی یقین دہانی بلا شبہ قا بل تعر یف اقد ام ہے انہوں نے یہ اقد اما ت کر کے صحیح معنو ں میں عو امی نما ئند ے ہو نے کا ثبو ت دیا ہے اس مو قع پر وزیر اعلیٰ بلوچستان جا م کما ل خان نے گفتگو کرتے ہوئے وا ضح کیا ہے کہ زلز لہ متا ثر ین کو تنہا نہیں چھوڑیں گے صو بائی حکومت ہر نائی میں ہنگا می بنیا دو ں پر امد اد اور متا ثرین کی بحالی کے لیے اقد اما ت کر رہی ہے پا ک فو ج ،ایف سی ،ڈیز اسٹر مینجمنٹ اتھا ر ٹی ،محکمہ رو ڈ ،صحت ضلع انتظامیہ اور دیگر ادا رے متا ثرہ علاقو ں میں مصر و ف ہیں۔
ہم سمجھتے ہیں کہ قد ر تی آفا ت سے ہو نیو الے نقصان کے از الے کے لیے صو بائی حکومت اور دیگر ادا رو ں کا یکجا ہو کر کام کرناقا بل تعر یف ہے ان ادا رو ں کو اپنی کارو ائیوں میںتیز ی لانی چا ہیئے اور کو شش کرنی چا ہیئے کہ متا ثر ین کی جلد سے جلد مد د کرکے ان کی مشکلا ت کو کم کر نے کو تر جیح دینی چا ہیئے اور اس سلسلے میں اس بات کا خا ص خیال رکھنا چا ہیئے کہ حق دا رو ں کی تلفی نہ ہو کیونکہ بد قسمتی سے ایسے معا ملا ت میں اکثر ایسا ہو تا ہے کہ حق دا رو ں کو ان کا حق نہیں مل پا تا جوکہ ان کے ساتھ سر اسر زیا د تی کے متر ادف اقد ام ہے تما م متعلقہ ادا رو ں کو اس چیز کا خا ص خیال رکھنا چا ہیئے صو بائی وزیر دا خلہ میر ضیا ءلا نگو نے بھی متا ثر ین زلز لہ کی ہر ممکن امد اد کو یقینی بنا نے کا عز م کیا ہے جو کہ اچھی با ت ہے۔
اس لیے یہاں ضرورت اس امر کی ہے کہ زلز لہ متا ثر ین کی امد اد کے لیے تما م سیا سی جما عتو ں کو یکجا ہو کر عملی طو ر پر اقد اما ت کر نے چاہئیں اس میں سیا سی اختلا فا ت کو بالائے طا ق رکھ کر کام کرنا چا ہیئے کیونکہ ایسے مو اقع پر سیا ست کرنا کسی بھی طو ر پر صحیح اقد ام نہیں ہے سب کو مشتر کہ طو ر پر یہ کام کرنا چا ہیئے جوکہ انتہائی نا گز یر ہے۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*