تازہ ترین

اپوزیشن جماعتوں کا پارلیمنٹ کے اجلاس میں مشترکہ حکمت عملی اپنانے پر اتفاق

اسلام آباد(آئی این پی)مسلم لیگ(ن)اور پیپلزپارٹی سمیت تمام اپوزیشن جماعتوں نے پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس کی مشترکہ حکمت عملی اپنانے پر اتفاق کیا ہے جبکہ اپوزیشن رہنماﺅں نے نیب کے کالے قانون کو پارلیمنٹ کے اندر اور باہر چیلنج کرنے کی حکمت عملی پر بھی مشاورت کی اور بدترین مہنگائی کے خلاف پارلیمنٹ کے اندر اور باہر بھرپور ردعمل دینے اور مشترکہ حکمت عملی اپنانے پر بھی اتفاق کیا۔جمعہ کو نجی ٹی وی کے مطابق مسلم لیگ (ن) کے صدر اور قائد حزب اختلاف شہباز شریف نے پیپلزپارٹی چیئرمین بلاول بھٹوزرداری سمیت اپوزیشن رہنماﺅں سے ٹیلی فون پر رابط کیا۔شہباز شریف نے بلاول بھٹو زرداری،پی ڈی ایم کے سربراہ مولانا فضل الرحمان ،بلوچستان نیشنل پارٹی کے چیئرمین سردار اختر جان مینگل، قومی وطن پارٹی کے سربراہ آفتاب احمد خان شیرپاو¿، عوامی نیشنل پارٹی کے مرکزی رہنما ایمل ولی خان، انس نورانی اور نیشنل پارٹی کے ڈاکٹر مالک بلوچ سے ٹیلی فونک رابطہ کیا اورپارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس کی مشترکہ حکمت عملی اور نیب ترمیمی آرڈیننس کے حوالے سے مشاورت کی۔اپوزیشن رہنماﺅں نے نیب کے کالے قانون کو پارلیمنٹ کے اندر اور باہر چیلنج کرنے کی حکمت عملی پر بھی مشاورت کی ۔اپوزیشن رہنماﺅں نے بدترین مہنگائی کے خلاف پارلیمنٹ کے اندر اور باہر بھرپور ردعمل دینے اور مشترکہ حکمت عملی اپنانے پر بھی اتفاق کیا۔اپوزیشن رہنماﺅں نے اتفاق کیا کہ عوام مہنگائی اور اس حکومت کا بوجھ اٹھانے کو تیار نہیں، موجود حکمرانوں سے نجات چاہتے ہیں،یہ حکومت رہی تو عوام اور معیشت زندہ نہیں رہے گی،موجودہ کرپٹ ترین حکومت خود کو احتساب سے بچانا چاہتی ہے۔پیپلزپارٹی چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے شہباز شریف سے مکالمہ کیا کہ ریلیف کا لالی پاپ دے کر عمران خان نے عوام کو تکلیف میں مبتلا کردیا،سلیکٹڈ حکومت کا ہر گزرتا دن عوام کے مسائل میں اضافہ کررہا ہے،مہنگائی کی وجہ سے پی ٹی آئی حکومت کے خلاف عوام کے صبر کا پیمانہ لبریز ہوچکا ہے۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*