تازہ ترین

انتخابات کا بروقت انعقاد ملک کی بہتر محفوظ مستقبل کےلئے ضروری ہے ،مولانا حیدر ی

کوئٹہ (اسٹاف رپورٹر)جمعےت علماءاسلام کے مرکزی جنرل سےکرٹری سےنےٹر مولانا عبدالغفور حےدری نے کہا ہے کہ جمعیت علماءاسلام پارلیمنٹ کو سپریم سمجھتی ہے انتخابات کا بر وقت انعقاد ملک کی بہتر و محفو ظ مستقبل کے لئے ضروری ہے انتخابات کی التوا سے ملک میں افرا تفری پیدا ہوگی جمہوریت سے راہ افرار اختیار کرنے کا مطلب ملک کی آئین و تشخص سے انکار کرنا ہے حلقہ بندےوں کے بارے مےں الےکشن کمےشن نے آنکھےں بند کرکے فےصلہ کےا ہے جسے عوام نے مسترد کردےا 12مئی کے شہداءکے ساتھ اظہار ےکجہتی کےلئے پارٹی کے زےر اہتمام11مئی کو منگچر مےں تارےخی کانفرنس منعقد ہوگا جس سے متحدہ مجلس عمل کے مرکزی قائدےن خطاب کرےنگے ،ےہ بات انہوں نے کوئٹہ پرےس کلب مےں صوبائی جنرل سےکرٹری ملک سکندر خان اےڈووکےٹ کے ہمراہ پرےس کانفرنس کرتے ہوئے کہی، اس موقع پر متحدہ مجلس عمل کے صوبائی ترجمان حافظ ابراہےم لہڑی، پارٹی کے مرکزی رہنماءحافظ بلال ،اصغر ترےن ، سابق صوبائی وزےر سردار ےحییٰ خان ناصر،حافظ صمد مندوخےل،اسحاق ذاکر شاہوانی ،عبدالواسع سحر اور دےگر بھی موجود تھے، مولانا عبدالغفور حےدری نے کہاکہ اےک سال قبل 12مئی کو منگچر کے مقام پر مےں نے اپنے قافلے کے ساتھ جلسہ ختم کرکے جارہے تھے کہ مےرے قافلے پر بم حملہ ہوا جس مےں26نوجوان شہےد اور50کے قرےب زخمی ہو ئے تھے واقعہ کے بعد حکومت نے کوئی کارروائی کی اور نہ ہی آج تک ہمےں بتاےا گےا کہ ےہ حملہ کس نے کےا اور آنےوالی وقت مےں اےک بار پھر اس طرح واقعہ کی روک تھام کےلئے کےا پالےسی اختےار کرےنگے انہوں نے کہاکہ واقعہ کے تحقےقات تو نہےں ہوسکے البتہ صوبائی حکومت نے مجھ سے سےکورٹی بھی واپس لی گئی جو کہ اےک افسوسناک المےہ ہے انہوں نے کہاکہ 12مئی کو جو شہداءہم سے الگ ہوئے اور زخمی ہو ئے تھے ان شہداءکو ےاد کرنے کےلئے پارٹی نے اسی مقام منگچر مےں اےک تارےخی کانفرنس کا اعلان کےا اور ےہ کانفرنس 11مئی کو منعقد ہوگا جس سے متحدہ مجلس عمل کے سربراہ مولانا فضل الرحمن،سراج الحق سمےت دےگر قائدےن خطاب کرےنگے اور ےہ کانفرنس صوبے اور ملک کی تارےخ کا اےک اہم کانفرنس ہوگا انہوں نے کہاکہ مےنار پاکستان تحرےک انصاف نے ناچ گانوں کی گونج مےں جو جلسہ کےا اور نوجوان لڑکےوں کو نچاےاگےا اس کےخلاف ہم13مئی کو اےک تارےخی جلسہ کرےنگے اور ےہ ثابت کرےنگے کہ ناچ گانوں والا جلسہ بڑا تھا ےا ہمارا جلسہ ،کےونکہ ہم نے ہمےشہ ملک بھر مےں تارےخی جلسے کےے لےکن جب انتخابات کاوقت آتا ہے تو ہمارا ووٹ چوری ہوتا ہے کےونکہ 2013کا الےکشن کسی کو ضرورت تھا جہاں کسی کا اےک ووٹ نہےں تھا وہاں انہوں نے ان لوگوں کو جتواےاگےا 2018کے الےکشن مےں بھی دھاندلی کا خدشہ ہے لےکن تمام سےاسی جماعتوں کا موقف ہے اس دفعہ الےکشن کو غےر جانبدار قراردےاجائے انہوں نے کہاکہ جمعیت علماءاسلام نے ملک کی سیاست میں شائستگی کو ترجیح دی ہے خوف خدا اللہ کے مخلو ق کی خدمت ہماری تر جیحات ہیں کسی بھی جماعت کی ماضی اس کی مستقبل کی دلیل ہوتی ہے علماءکرام نے ہمیشہ قوم کی خیر خواہی کی مثالیں قائم کی ملک کے تمام طبقات کا و فرقوں کو ساتھ لیکر چلنے کی کوشش کی ملک میں بھائی چارگی کے ماحول کو بر قرار رکھنے میں کردار ادا کیا سیاست میں پاکیزگی دیانت کی مثالیں قائم کی نصف صدی سے ملک کی سیاست مین رہنے والی جماعت کے قائدین پر آج تک کرپشن کا کوئی الزام ثابت نہیں کیا جا سکا ملک میں ہونے والے میگا کرپشنز میں جمعیت علماءاسلام کے کسی رہنما کا نام نہیں آیا اس اعتبار سے ہم استحقاق کے بنیاد پر یہ کھتے ہیں کہ اگر اس ملک کو نئے سمت پر لیجانا ہے تو جمعیت علماءاسلام کے سیاسی راستے سے روکا وٹیں ختم کی جائیں ہمارے عوامی مینڈیٹ کو روکنے کے بجائے علماءکرام کی صالح قیادت کو ملک کے اقتدار کی باگ دوڑ دی جائے ہم ملک کو نئے چیلنجو ں سے نکال سکتے ہیں انہوں نے اےک سوال کے جواب مےں کہاکہ سےنےٹ الےکشن مےں جمعےت علماءاسلام نے پشتونخواملی عوامی پارٹی کے ساتھ اتحاد کرکے اس پر واضح کےا کہ ڈپٹی چےئرمےن کے الےکشن مےں وہ کاغذات واپس لےنگے لےکن انہوں نے اتحاد کا خےال نہےں رکھا ےہی وجہ تھی کہ ڈپٹی چےئرمےن مےں ان کو کم ووٹ ملے تاہم مسلم لےگ کے امےدوار نے جمعےت علماءاسلام نے ووٹ دےا ےہ معلوم کرنا ہے کہ کس نے ووٹ نہےں دےا ہے انہوں نے مزےد کہاکہ حلقہ بندےوں کے حوالے سے الےکشن کمےشن نے آنکھےں بند کرکے جو غلط فےصلہ کےا اسے بلوچستان کے عوام نے مسترد کردےا ہے اب الےکشن پر منحصر ہے کہ وہ عوام کے مفاد ےا اپنے ضد کا فےصلہ عوام پر مسلط کرتے ہےں ۔اس موقع پر صوبائی جنرل سےکرٹری ملک سکندر خان اےڈووکےٹ نے کہاکہ الےکشن کمےشن نے ہرنائی ،شےرانی،زےارت اور موسیٰ خےل کے حوالے سے جو فےصلہ کےا اس حوالے سے الےکشن کمےشن کو خود معلوم نہےں کہ ہم لوگوں نے کس طرح فےصلہ کےا بلکہ پٹواراور بلاکس جو بنائے ان کا ابھی تک الےکشن کو بھی سمجھ نہےں آرہا اس سے معلوم ہوتا ہے کہ الےکشن کمےشن نے حلقہ بندےوں کے حوالے سے متنازعہ فےصلہ کےا۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*