تازہ ترین

آزادی تک پورا پاکستان کشمیریوں کے ساتھ کھڑا ہے ، فواد چوہدری

اسلام آباد(آئی این پی ) وفاقی وزیر سائنس اینڈ ٹیکنالوجی فواد چوہدری نے کہا مودی پر پاگل پن کا دورہ پڑا ہے، وہ بھارت تک میں علیحدہ ہوچکے ہیں،مودی کے اقدامات کے بعد کشمیر آزادی کے آخری مرحلے میں ہے ، ہم آزادی کے جس سفر پر نکلے ہیں ان کی دعائیں قبول ہونے والی ہیں،چائینز کمپنیاں آئیں اورسولر انرجی میں سرمایہ کاری کرے۔لاہورمیں پاک چین بزنس ایکسپو کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وفاقی وزیر سائنس اینڈ ٹیکنالوجی فواد چوہدری نے کہا پاکستان پہلا ملک ہے، جس نے چین کو تسلیم کیا، 1972پاک چائنہ اسٹریٹجک پارٹنرز بنے، پاکستان کی ہر حکومت نے چین سے تعلقات کو بڑھایا۔فواد چوہدری کا کہنا تھا کہ آنے والے وقتوں میں گوادر چین کے لئے میجر آئل حب بنے گا، وزیراعظم کی ہدایت پرخصوصی اکنامک زونزبنا رہے ہیں، چائنیز سرمایہ کاروں کو پاکستان میں خوش آمدید کہتا ہوں۔وفاقی وزیر سائنس اینڈ ٹیکنالوجی نے کہا سولرانرجی میں ملین میگاواٹس پیداکرنے کے پاکستان میں مواقعے ہیں، چائینز کمپنیاں آئیں اورسولر انرجی میں سرمایہ کاری کرے۔بھارت کے حوالے سے وفاقی وزیر کا کہنا تھا مودی کے اقدامات کے بعدکشمیرآزادی کے آخری مرحلے میں ہے، دنیانے دیکھاہے مودی نے آسام میں کیاکیا۔ فواد چوہدری نے کہا مودی پرپاگل پن کادورہ پڑا ہے، سو سو سال سے رہنے والوں کو بے دخل کرنے کا منصوبہ ہے، مودی کے خلاف طاقتور آوازاٹھ رہی ہے، ہم آزادی کے جس سفر پر نکلے ہیں ان کی دعائیں قبول ہونے والی ہیں، آزادی تک پورا پاکستان کشمیریوں کے ساتھ کھڑا ہے۔وزیر سائنس اینڈ ٹیکنالوجی کا کہنا تھا کہ مودی کے پاگل پن سے پورا بھارت مشکلات کاشکارہے، من موہن سنگھ تک نے کہہ دیاکہ بھارتی معیشت تباہ ہوگئی ہے، مودی مظالم کرکے دنیا کی توجہ اصل مسئلےسے ہٹانا چاہتا ہے۔انھوں نے مزید کہا مودی بھارت تک میں علیحدہ ہوچکے ہیں، ہٹلر نہیں مان رہاتھا،جرمنی تباہ ہوااوراسے خودکشی کرناپڑی، مودی کی پالیسی بھی ہٹلرجیسی ہے۔اپوزیشن پر تنقید کرتے ہوئے فواد چوہدری کا کہنا تھا کہ دونوں پارٹیاں میرے ابوکوچھوڑدوسے آگے نہیں نکل رہیں، ہم توکہہ رہے ہیں لے جا ئیں ابو وں کوبس ملک کاپیسہ واپس کردیں، وہ کہتے ہیں ابوں کوچھوڑدو،ہم کہتے ہیں پیسے دوابولو۔انھوں نے مزید کہا کہ فضل الرحمان نے کشمیرپرایک جلسی تک نہیں نکالی۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*