جوہری معائنے میں کمی کے حوالے سے ایران اپنے فیصلے پر عمل کرےگا

تہران(م ڈ)ایران کے نائب وزیر خارجہ عباس عراقجی نے کہا ہے کہ ایٹمی توانائی کی عالمی ایجنسی (آئی اے ای اے)کے سربراہ رفائیل گروسی کے تہران کے دورے کا ایران کے فیصلے سے کوئی تعلق نہیں ، ایران اپنے فیصلے پر عمل درآمد کرے گا۔ میڈیارپورٹس کے مطابق یہ بات انہوں نے سرکاری ٹیلی وژن کو دیے گئے ایک انٹرویو میں کہی۔عراقجی کے مطابق ایرانی پارلیمنٹ کے فیصلے پر عمل کے نتیجے میں آئی اے ای اے کی نگرانی کے تناسب میں 20 سے 30 فی صد کی کمی آئے گی۔ انہوں نے مزید کہا کہ ایران یورپی یونین کی تجویز پر غور کر رہا ہے۔ تجویز میں ایرانی جوہری معاہدے میں شامل موجودہ ممالک اور امریکا کے درمیان ایک غیر سرکاری اجلاس منعقد کرنے کا کہا گیا ہے۔ تاہم ایران نے ابھی تک اس تجویز کا جواب نہیں دیا۔ ایرانی نائب وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ ہم سمجھتے ہیں کہ جوہری معاہدے میں امریکا کی واپسی کسی اجلاس کی متقاضی نہیں، یقینا اس کا واحد راستہ پابندیاں اٹھانا ہے۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*