زنا با لجبر کے جر م کے مر تکب افرا د کے لیے کوئی نرمی نہیں ہونی چا ہیئے

و ز یر اعظم عمر ان خان نے وفا قی کا بینہ کے اجلا س سے خطا ب کر تے ہوئے اس با ت پر زو ر دیا ہے کہ زنا با لجبر جیسے گھنا ﺅ نے جر م کے مر تکب افر اد کیلئے قا نو ن میں کوئی نر می نہیں ہونی چاہیئے ایسے مجر مو ں کیلئے سخت سے سخت سز ائیں ہونی چاہئیں کو رونا ویکسین کی بر وقت خر ید ار ی دستیا بی ،گھر یلو صا ر فین اور بر آمدات سے وا بستہ انڈ سٹر یز کیلئے گیس کی بلا تعطل دستیا بی کو یقینی بنا یا جا ئے اس وقت ملک کو سنجید ہ فیصلوں اور رو یو ں کی ضرورت ہے پاکستان میں کو رونا کی وجہ سے ایک دن میں 67 امو ا ت پیر کو ہوئیں ایسی صو رتحال میں جلسے منعقد کرنا لو گو ں کی جانو ں سے کھیلنے کے متر اد ف ہے ہم سب کو مل کر وبا ءکے پھیلا ﺅ کورو کنا ہے کا بینہ نے مختلف ادا رو ں کی نجکا ری اور زیا د تی کے مر تکب افر اد کو نا مر د بنا نے کے قا نو ن کے مسو د ہ کی منظوری دید ی۔
اس میں کوئی شک نہیں کہ زنا با لجبر کے جر م کے مر تکب افر اد کیلئے قا نو ن میں کسی بھی قسم کی کوئی نر می نہیں ہونی چا ہیئے ایسا کرنا با لکل ٹھیک نہیں ہے کیو نکہ یہ ایک ایسا گھنا ﺅ نا جر م ہے جس کی رو ک تھا م کے لیے سخت سے سخت قو انین کا نا فذ کرنا بہت ہی ضروری ہے ملک میں اس گھنا ﺅ نے جر م کی سز ا کیلئے مو ثر قا نو ن نہ ہونے کے باعث ایسے وا قعا ت میں رو ز بر وز اضافہ ہو رہا ہے جو کہ بڑی تشو یشنا ک با ت ہے اس کا سد با ب ہونا چا ہیئے جہا ں تک ز یا د تی کے مر تکب افر اد کو نا مر د بنا نے کے قا نو ن کی با ت ہے تو اس بابت قا نو نی ما ہر ین اور علما ءکر ام سے رہنما ئی حا صل کی جاسکتی ہے اور پھر اس کی رو شنی میں قا نو ن سا زی ہو نی چا ہیئے کیو نکہ ہما رے ملک میں بد قسمتی سے ایسے گھنا ﺅنے جر م کے مر تکب افر اد کوکوئی کٹر ی سز ا نہیں دی جا سکی جس کے با عث لو گو ں میں خو ف و خطر نہیں ہے اور وہ اس گھنا ﺅ نے کا م کے مر تکب ہو رہے ہیں۔
دنیا بھر کی طر ح پاکستان میں بھی کو رونا وبا ءکی جو دوسر ی لہر آئی ہے وہ بھی بہت ہی خطر نا ک ہے اس سے ہلا کتیں زیا دہ ہونے کا خد شہ ہے کیو نکہ عو ام اس کو سنجید ہ نہیں لے رہی اس کے سا تھ ساتھ ا پو ز یشن جما عتیں اس جان لیو ا وبا ءکے با و جو د جلسے کر رہی ہے اس کو اس وقت بھی صر ف اقتد ار کی ہو س ہے اس کو عو ام کی جانو ں کی با لکل ہی پر وا ہ نہیں جیسا کہ سب جا نتے ہیں کہ کو رونا وا ئر س لو گو ں کے جمع ہونے سے زیا دہ پھیلتا ہے لیکن اس کے با و جو د وہ ملک بھر میں جلسے منعقد کر رہی ہے حا لا نکہ حکومت نے کو رونا وا ئر س کی وجہ سے جلسو ں پر پا بندی عا ئدکر دی ہے اپو ز یشن کو بھی اس کا خیا ل رکھنا چا ہیئے اس کے سا تھ سا تھ عو ام کو بھی اپنے اند ر شعو ر لا تے ہوئے جلسو ں اور جلو سوں میں جانے سے گر یز کرنا چا ہیئے کیو نکہ یہ سیا ستد ا ن صر ف اپنی سیا ست چمکانے کے لیے ان کی جا نو ں سے کھیل رہے ہیں اور وہ ان کے ہا تھو ں بے وقو ف بنے ہوئے ہیں ا ن کو ایسا نہیں کرنا چا ہیئے کیو نکہ دنیا میں جان سب سے زیا دہ قیمتی شے ہو تی ہے اورزند گی ایک با ر ملتی ہے اس لیے اس کی حفا ظت کرنا بہت ہی ضروری ہے اس لیے کو رونا وا ئر س کی حا لیہ لہر سے ایک با ر پھر عو ام کو پہلے کی طرح مقا بلہ کرنے کی ضرور ت ہے جس کے لیے اسے ایک با ر پھر اسی طرح کا مظا ہر ہ کرنا ہو گا جو کہ انتہائی نا گز یر ہے اگر وہ ایسا نہیں کر تی تو اس کا بہت زیا دہ نقصان ہو سکتا ہے۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*