پا کستا ن میں ہندوستانی د ہشتگر د ی کے ثبو ت

پا کستا ن نے ایک با ر پھر ہندوستانی د ہشتگر د ی کے نا قا بل تر دید ثبو ت پیش کر تے ہوئے وا ضح کیا ہے کہ ہما رے پا س ہندوستانی د ہشت گر دی کی فنڈ نگ کے ثبو ت ہیں ان شو ا ہد کو عا لمی بر ا در ی کے سا منے رکھا جا ئے گا افغا نستا ن میں ہندوستانی سفا ر تقا ر با قا عد گی سے مختلف د ہشتگر د سر گر میو ں کی نگر انی کر رہے ہیں پا کستا ن میں حا لیہ بد امنی میں اضا فہ ہندوستان کے تما م د ہشت گر د بر ا نڈ ز ،قو م پرست اور علیحدٰ گی پسند وں سے بر اہ را ست را بطو ں کا نتیجہ ہے ہندوستا ن کی جا نب سے مختلف دہشتگر د تنظیمو ں کو اسلحہ اور رقم فر اہم کی جا رہی ہے اس کے سا تھ سا تھ سی پیک کے خلا ف ہندوستان نے 700 افر اد پر مشتمل ملیشیا تر تیب اور پا کستان میں اہم شخصیا ت کو قتل کرنے کی منصو بہ بند ی بھی کی۔
ہندوستانی د ہشتگر د ی کے نا قا بل تر د ید ثبو ت اس کا ایک گھنا ﺅ نا کام ہے وہ پاکستان میں دہشت گر د ی کا مر تکب ہورہا ہے کیو نکہ جیسا کہ مذکو رہ بیان میں بھی وا ضح ہو چکا ہے اور اس کے سا تھ ہندوستانی جا سو س کلھبو شن یا د یو کی گر فتا ری اور اس کا دہشت گر دی کر وانے سے متعلق تصد یقی بیا ن یہا ں گر فتا ر ہونے والے اکثر د ہشت گر دو ں کا بھی اقر ار جر م جیسے وا ضح ثبو ت ہیں جس سے ظاہر ہو تا ہے کہ ہندوستان وا قعی میں پاکستان میںہونیوالی دہشتگر د ی کی وا ر دا توں میں بر اہ را ست ملو ث ہے جو کہ قا بل مذمت اقد ام ہے ہندوستان کے اس اقد ام کی جتنی مذمت کی جائے کم ہے کیونکہ ہندوستان کے اس اقد ام سے جہا ں پاکستان میں بد امنی میں اضا فہ ہو گا وہا ں خطے میں بھی عد م استحکام کی صو رتحال بھی پید ا ہو گی جو کہ یقینا اچھا اقد ام نہیں ہے اور اس کا ذمہ دا ر ہندوستا ن ہے کیو نکہ وہ خطے میں استحکام نہیں چا ہتا جس کے لیے وہ پا کستان میں دہشتگر د ی اور دیگر نا رو اکا م کر رہا ہے اس کو پاکستان نے تما م مسا ئل کے حل کیلئے کئی با ر با قا عد ہ مذا کر ات کی پیشکش کی مگر اس نے را ہ فر ار اختیا ر کی اور ہمیشہ حا لا ت خر اب کئے وہ د ہشتگر د ی کی وا ر دا تو ں میں ملو ث ہونے کے سا تھ سا تھ کنٹر ول لائن کی بھی مسلسل خلا ف ور زیا ں کر رہا ہے جس کے نتیجے میں کئی قیمتی جانیں ضا ئع اور زخمی ہو ئی ہیں ہندوستان افغانستان ہندوستانی سفا رتکا ر کے ذ ر یعے پاکستان میں د ہشت گر دی کر وا رہا ہے جو کہ بہت ہی تعجب خیز با ت ہے افغا نستان کو پاکستان کے خلا ف ہندوستان کا سا تھ نہیں دینا چا ہیئے کیو نکہ پاکستان کے افغانستان پر بڑ ے احسا نا ت ہیں لیکن بڑے افسو س کی با ت ہے کہ وہ احسا ن فر ا مو شی کر رہا ہے اسے ایسا کرنا ہر گز زیب نہیں دیتا وہ پاکستان کے از لی دشمن ایک غیر مسلم ملک کی مد د کر رہا ہے۔
اس لیے یہا ں ضرور ت اس امر کی ہے کہ عا لمی اد ا رو ں کو اس کا سخت نو ٹس لیتے ہوئے ہندوستان کے خلا ف کا رو ائیاں کرنی چا ہئیں اور اس طرح ہندوستان کے سا تھ دینے پر افغانستان کے خلا ف بھی کا رو ائی کرنی چا ہیئے ا ن مما لک کو دہشت گر دانہ کا رو ائیو ں سے روکنا چا ہیئے اگر وہ اس سے باز نہیں آتے تو ان کے خلا ف اقتصا دی پا بند یا ں لگا نی چا ہئیں اور اس سلسلے میں جا بند ا ری کا مظا ہر ہ نہیں کر نا چا ہیئے کیونکہ وہ مسلما ن مما لک سے جانبد ا ری کا مظا ہر ہ کر تے ہیں اگر کوئی غیر مسلم ملک ایسے کام کر ے تو اس کے خلا ف فو ری ایکشن لیتے ہیں جبکہ اس کے مقا بلے میں مسلما ن ملک کے لیے کوئی اقد ام نہیںاٹھا تے جو کہ قا بل مذمت اقد ام ہے اور اس طرح کرنا ان ادا رو ں کو زیب نہیں دیتا۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*