آئندہ سالوں میں پاک بحریہ کی ذمہ داریوں میں مزید اضافہ ہو گا، نیول چیف

اسلام آباد(آئی این پی)چیف آف دی نیول اسٹاف ایڈمرل محمد امجد خان نیازی نے تربت، گوادر اور اورماڑہ میں پاک بحریہ کے یونٹس اورتنصیبات کا دورہ کیااور آپریشنل سرگرمیوں اور حربی تیاری کا جائزہ لیا۔تربت میں واقع نیول ائیر اسٹیشن پی این ایس صدیق آمد پر کمانڈر پاکستان فلیٹ رئیر ایڈمرل نوید اشرف نے نیول چیف کا استقبال کیا۔امیر البحر کو نیول ائیر آرم آپریشنز کے حوالے سے بریفنگ دی گئی جس کے بعد انہوں نے افسروں اور جوانوں کے ساتھ وقت گزارا۔بعد ازاں چیف آف دی نیول اسٹاف نے گوادر کا دورہ کیا جہاں انہیں پاک بحریہ کی جانب سے گوادر پورٹ اور چائنہ پاکستان اقتصادی راہداری کی میری ٹائم سیکیورٹی کے لئے تشکیل دی جانے والی میری ٹائم سیکیورٹی ٹاسک فورس 88- اور کوسٹل سیکیورٹی اینڈ ہاربر ڈیفنس فورس کے جاری آپریشنزکے حوالے سے تفصیلات بتائی گئیں۔ایڈمرل محمد امجد خان نیازی نے جناح نیول بیس اور کیڈٹ کالج اورماڑہ کا دورہ بھی کیا جہاں ان کا استقبال کمانڈر کوسٹ وائس ایڈمرل زاہد الیاس نے کیا۔اس موقع پر گفتگوکرتے ہوئے نیول چیف نے پوری ساحلی پٹی کی میری ٹائم سیکیورٹی کی عمومی اہمیت بالخصوص سی پیک کے تناظر میں اس اہمیت میں ہونے والے مزید اضافے کو اجاگر کیا۔چیف آف دی نیول اسٹاف نے سی پیک سے متعلقہ پراجیکٹس کے فوائد اور ان کے میری ٹائم سیکیورٹی سے گہرے تعلق پر روشنی ڈالتے ہوئے کہا کہ آئندہ سالوں میں پاک بحریہ کی ذمہ داریوں میں مزید اضافہ ہو گا۔ انہوں نے ملکی بحری سرحدوں کی حفاظت پر تعینات اہلکاروں کے جذبے، بے لوث لگن اور فرض شناسی کو سراہتے ہوئے اس عزم کا اعادہ کیا کہ پاک بحریہ ملکی بحری حدود اور میری ٹائم مفادات کادفاع ہر قیمت پر یقینی بنائے گی۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*