جنوبی بلوچستان کی ترقی پورے بلوچستان کی ترقی ہے، جام کمال

Chief Minister Balochistan, Mir Jam Kamal

کوئٹہ(خ ن)وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال خان کی زیرصدارت منعقدہ وڈیو لنک اجلاس میں صوبے میں اسپیشل اکنامک زونز کے قیام اور حب صنعتی اسٹیٹ سے متعلق امور پر پیشرفت کا جائزہ لیا گیا، اجلاس میں سینئر ممبر بورڈ آف ریونیو، سیکریٹری صنعت، مینیجنگ ڈائریکٹر لیڈااور ڈائریکٹر جنرل تعلقات عامہ نے بذریعہ وڈیو لنک شرکت کی، اجلاس کو متعلقہ حکام نے بوستان، حب اور گڈانی میں صنعتی زونز کے قیام سے متعلق اب تک کی پیشرفت، موجودہ حیثیت، کاروباری پلان اور دیگر متعلقہ امور پر آن لائن بریفنگ دی، اجلاس میں وزیراعلیٰ نے متعلقہ حکام کو ہدایات دیتے ہوئے کہا کہ اسپیشل اکنامک زونز کے قیام کے لئے مختص اراضی کے حصول کو جلد پوراکیا جائے اور ان منصوبوں کے لئے پانی، بجلی اور گیس کی موثر فراہمی کو یقینی بناتے ہوئے ایک ماسٹر پلان ترتیب دیا جائے، انہوں نے کہا کہ جنوبی بلوچستان کی ترقی پورے بلوچستان کی ترقی ہے، اسپیشل اکنامک زونز کے قیام سے نہ صرف روزگار کے مواقع پیدا ہوں گے بلکہ مجموعی طور پر صوبے کے ٹیکس ریونیو میں خاطر خواہ اضافہ ہوگا، انہوں نے کہا کہ حب اور گڈانی کو کراچی سے منسلک کرنے کے لئے ٹرین کے آغاز کے منصوبے کو بھی مدنظر رکھا جائے جو مستقبل میں فائدہ مند ہوگا جبکہ لسبیلہ انڈسٹریل اسٹیٹ ڈویلپمنٹ اتھارٹی (لیڈا) نجی شعبہ کی شراکت سے قابل تجوید توانائی کے منصوبوں کو بھی شروع کرے،انہوں نے ہدایت دیتے ہوئے کہا کہ ساحل کے بہتر استعمال کے لئے اس کی ماسٹر پلاننگ ناگزیر ہے جس سے ان خصوصی صنعتی زونز کو پانی، بجلی اور گیس کی احسن انداز سے فراہمی ممکن ہوسکے گی، انہوں نے کہا کہ گوادر انڈسٹریل اسٹیٹ ڈویلپمنٹ اتھارٹی (جیڈا) کی ترقی ساحل کی ترقی منسلک ہے، ہم ان صنعتی زونز کو جتنا بہتر کریں گے اتنے ہی اس کے تعمیری فوائد سے خود کو مستفید کرسکیں گے، انہوں نے محکمہ صنعت کو حب انڈسٹریل ٹریڈنگ اسٹیٹ کے منصوبے کے حوالے سے کابینہ کی منظوری کے لئے اسے نئے منصوبے کے طور پر پھر سے ارسال کرنے کی ہدایت کی جبکہ اس حوالے سے مسائل کے لئے پہلے سے قائم کمیٹی میں محکمہ داخلہ، محکمہ صنعت وکامرس، لیڈا، قانون نافذ کرنے والے ادارے، سرمایہ کاری بورڈ، جیڈا، مائنز اور چیمبر آف کامرس کے نمائندوں کو بھی شامل کرنے اور ہر مہینے کمیٹی کے ایک اجلاس کو منعقد کرنے کی ہدایت بھی کی۔در یں اثنا ءوزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال خان کی زیرصدارت منعقدہ وڈیو لنک اجلاس میں محکمہ انفارمیشن ٹیکنالوجی کی جانب سے زیرتشکیل وزیراعلیٰ کمپلینٹ پورٹل،پرفارمنس مینجمنٹ سسٹم، مجوزہ بلوچستان ڈیجیٹل پالیسی 2020کی تشکیل اور دیگر متعلقہ امور پر پیشرفت کا جائزہ لیاگیا، سیکریٹری انفارمیشن ٹیکنالوجی یاور حسین نے آن لائن بریفنگ دیتے ہوئے وزیراعلیٰ شکایت پورٹل میں عوامی شکایات کے اندراج، درج شدہ شکایات کے حوالے سے فیڈ بیک کے میکنزم اور اس متعلق دیگر امور سے آگاہ کرتے ہوئے بتایا کہ وزیراعلیٰ شکایت پورٹل اپنی تکمیل کے آخری مراحل میں ہے جس کا آئندہ دنوں جلد افتتاح کیا جائے گا جبکہ پرفامنس منیجمنٹ سسٹم سے محکمانہ کارکردگی کو جانچنے کے طریقہ کار کو سہل بنایا جاسکے گا اور اس حوالے سے مجوزہ بلوچستان ڈیجیٹل پالیسی 2020ءبھی ترتیب دی جارہی ہے، وزیراعلیٰ نے بذریعہ وڈیو لنک اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ وزیراعلیٰ کمپلینٹ پورٹل کا مقصد احسن انداز سے عوامی شکایات کی شنوائی ہے اور درج شدہ شکایات پر بہتر انداز سے عملدرآمد کرنا ہے، انہوں نے کہا کہ پرفارمنس مینجمٹ سسٹم سے محکمانہ امور اور محکموں کی مجموعی کارکردگی کو بہتر بنایا جاسکے گا، انہوں نے کہا کہ ان اقدامات سے امور تک ڈیجیٹل رسائی، معلومات، ڈیجیٹل کاروبار، ترقیاتی منصوبوں کی ڈیجیٹل مانیٹرنگ اور ڈیجیٹل معیشت کے رحجان کو فروغ دیا جاسکے گا، انہوں نے متعلقہ حکام کو ہدایات دیتے ہوئے کہا کہ اس حوالے سے عوامی شکایات کے ازالے کو بہتر طریقہ سے ممکن بناتے ہوئے حکومت کے ایسے تمام احسن اقدامات پر عملدرآمد کو یقینی بنایا جائے انہوں نے کہا کہ بدلتا دور تقاضا کرتا ہے کہ خود کو جدت کے ساتھ ہم آہنگ بنایا جائے اور مجموعی طور پر مانیٹرنگ کے نظام کو بھی مزید فعال بناتے ہوئے اسے وقت کے ساتھ ہونے والی تبدیلیوں کے ہم آہنگ بنایا جائے۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*