انسد اد منشیا ت اور اس کے عا دی افر اد کی بحا لی کے اقد اما ت

وزیر اعلیٰ بلوچستان جا م کما ل خان کا گذ شتہرو ز وفا قی وزیر بر ائے انسد اد منشیا ت اعظم خا ن سو اتی سے ملا قا ت کے دو ران با ت چیت کر تے ہوئے کہنا تھا کہ انسد اد منشیا ت اور اس کے عا دی افر اد کی بحالی کے اقد اما ت کئے جائیں گے ان اقد اما ت کی بد ولت صو بے کی نو جو ان نسل نہ صر ف منشیا ت جیسی لعنت کے مضر اثر ا ت سے محفو ظ رہیں گے بلکہ وہ اپنے رو شن اور بہتر مستقبل کی جا نب گا مز ن ہو سکیں گے اور اس کے سا تھ سا تھ ملک و صو بے کی تر قی میں اپنا تعمیر کر دا ر بھی ادا کر سکیں گے۔
صو بائی حکومت کی انسد اد منشیا ت اور اس کے عا دی افر اد کی بحالی کے اقد اما ت کرنا با ت بلا شبہ خو ش آئند اقد ام ہے کیو نکہ اس کی معا شر ے کو اس وقت بہت ہی زیا دہ ضرورت ہے جس کی وجہ یہ ہے کہ معا شر ے میں یہ نا سو ر بڑ ھتا ہی جا رہا ہے اس کی رو ک تھا م کے لیے خا طر خو اہ اقد اما ت نہیں کئے جا رہے اس کی بڑ ھنے کی کئی وجو ہا ت ہیں جن میں ان کا بلا رو ک ٹو کفرو خت ہونا اور ایسے افر اد کی سر پر ستی جیسے اقد اما ت ہیں جن کی وجہ سے یہ وبا ءکنٹرو ل ہونے کی بجا ئے پھیل رہی ہے اور اس سے خصو صاً نو جو ان نسل بر ی طر ح متا ثر ہو رہی ہے نو جو ان نسل اس جا نب رحجا ن کی سب سے بڑی وجہ بیر و ز گا ری ہے کیو نکہ یہ نو جو ا ن نسل جو اعلیٰ تعلیم حا صل کرنے کے با و جو د نو کر یو ں سے محر وم ہیں حا لا نکہ صو بے میں اس وقت بھی ایک بہت بڑی تعد اد میں خا لی آسا میا ں پڑ ی ہو ئی ہیں لیکن افسو س کی با ت یہ ہے کہ ان کو خا لی ہوئے ایک مد ت ہو گئی ہے لیکن ان پو سٹو ں پر میر ٹ پر بھر تیا ں کرنے کی بجا ئے ہر آنے والی حکومت مسلسل التو اءمیں رکھ رہی ہے اس کی جو بھی وجو ہا ت ہیں وہ نو جوان اور بے رو ز گا ر نسل کے لیے ٹھیک نہیں ہیں ۔
صو بائی دا ر الحکومت کوئٹہ کے مین نا لے میں منشیا ت کے عا دی افر اد جا کر نہ صر ف نشہ کر تے ہیں بلکہ ان کو وہا ں مبینہ طو ر پر نشہ آسا نی سے مل بھی جا تا ہے کبھی کبھی ان کے خلا ف آ پر یشن بھی ہو تا ہے لیکن وہ پھر اپنا کا م شر وع کر دیتے ہیں ۔اگر حکومت انسد اد منشیا ت اور اس کے عا دی افر اد کی بحالی کے اقد اما ت کرنا چا ہتی ہے تو اسے سب سے پہلے نشہ فر اہم کرنے والے عنا صر کیخلا ف سختکر یک ڈاﺅن کرنا چا ہیئے اس کے بعد نو جو ان نسل کے لیے رو ز گا ر کے مو اقع پید ا کر نے چا ہئیں کیو نکہ جیسا کہ او پر در ج کیا جا چکا ہے کہ نو جو ان نسل کی منشیا ت کا عا دی ہونے میں ان کا بے روز گا ر ہو نااہم وجہ ہے اس لیے حکومت کو کسی بھی سیا سی ایشو کو با لا ئے طا ق رکھتے ہو ئے صو بے میں بے شما ر خا لی آسا میو ں پر نو جو انو ں کو بھر تی کر نا چا ہیئے اور منشیا ت فر اشو ں کو سخت سے سخت سز ائیں دینی چا ہئیں کیو نکہ ہما رے ہا ں بد قسمتی سے اکثر منشیا ت فر و ش سز اﺅ ں سے بچ جا تے ہیں کبھی کبھا ر ان کا ما ل تو پکڑ ا جا تا ہے لیکن منشیا ت فر و ش گر فتا ر نہیں ہو تے جو بعدمیں اپنا یہ نقصا ن پو ر ا کر لیتے ہیں اور اس طرح یہ سلسلہ چلتا رہتا ہے جو کہ متعلقہ ادا رو ں کے لیے ایک بہت بڑ ا لمحہ فکر یہ ہے۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*