قرضوں کا اژدھا ہماری معیشت کو نگل رہا ہے،خواجہ حبیب

لاہور( کامرس ڈیسک)ایران پاک فیڈریشن آف کلچر اینڈ ٹریڈ کے صدر خواجہ حبیب الرحمان نے کہا ہے کہ بیرونی قرضوں سے چھٹکارا اور اپنے وسائل میں اضافہ نا گزیر ہے ،چاہے بغیرشر ح سود یا کم شرح سود پر قرض ملے یہ معیشتوں پر بوجھ ہوتا ہے ،ٹیکسزکے نظام پر نظر ثانی کی جائے اور ان کی تعداد اور شرح میں کمی کی جائے۔اپنے ایک بیان میں انہوںنے کہا کہ حکومت عوام سے ٹیکسز دینے اور میڈ ان پاکستان مہم کی کامیابی کے لئے اپیل کرے ، درآمدات میں مزید کمی کےلئے ڈیوٹی بڑھائی جائے کیونکہ جو طبقہ امپورٹ کی گئی خوراک کھا سکتا ہے اسے اس پر بھاری ڈیوٹی دینے پر بھی کوئی فرق نہیںپڑے گا۔ انہوںنے کہا کہ ملک کے پاکستان قرض لے کر اس سے گروتھ بڑھانے کی بجائے انہیں پرانے قرضے اور سود اتارنے میں استعمال کر رہا ہے ،اگر یہ کہا جائے کہ قرضوں کا اژدھا ہماری معیشت کو نگل رہا ہے اور اس نے سانسیں روک دی ہیں تو غلط نہ ہو گا۔ انہوں نے کہا کہ معیشت کی ترقی کےلئے کاروبار دوست ماحول کو فروغ دیا جائے اور اس کےلئے ہر سطح پرمشاورت کا عمل تیز کیا جائے ۔کئی طرح کے ٹیکسز کویکجا کیا جائے اور ان کی شرح بھی کم کی جائے جس سے ٹیکس نیٹ بڑھانے میں مدد ملے گی۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*