پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں گذشتہ ہفتے مجموعی طور پر مندی کا رجحان رہا

کراچی (این این آئی)پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں گذشتہ ہفتے مجموعی طور پر مندی کا رجحان رہا ،کے ایس ای100انڈیکس1100پوائنٹس گھٹ گیا جس کی وجہ سے انڈیکس34ہزار پوائنٹس کی نفسیاتی حد سے گر گیا اور33400پوائنٹس کی کم ترین سطح پر بند ہوا ،مندی کے سبب مارکیٹ میں سرمایہ کاروں کے 171ارب روپے ڈوب گے جبکہ 57فیصد حصص کی قیمتیں بھی گر گئیں ۔ ماہرین کے مطابق اعلان کردہ وفاقی بجٹ سے کاروباری طبقے کی توقعات پوری نہ ہونے ،ملک میں کورونا مریضوں کی تعداد مین بتدریج اضافے،اسمارٹ لاک ڈاﺅن جیسے عوامل کی وجہ سے بیشتر شعبوں کی مارکیٹ میں نئی سرمایہ کاری کے بجائے حصص کی آف لوڈنگ میں زیادہ دلچسپی نے مارکیٹ کے گراف کو تنزلی کی جانب دھکیل دیا ۔ماہرین کاکہنا تھا کہ کورونا وبا سے متاثرہ کیپٹل گینز ٹیکس دیگر ٹیکسوں میں کوئی ریلیف نہیںدیا گیا جو سرمایہ کاروں کیلئے مایوسی کا سبب بنا ۔پاکستان اسٹاک مارکیٹ گذشتہ ہفتے4دن مندی کی لپیٹ میں رہی جس کی وجہ سے کے ایس ای100انڈیکس 1366.89پوائنٹس لوز کر گیا تاہم 1دن کی تیزی سے انڈیکس میں194.61پوائنٹس کی ریکوری دیکھنے میں آئی ،مجموعی طور پر مندی کا رجحان غالب رہنے سے100 انڈیکس میں 1172.28پوائنٹس کی کمی ریکارڈ کی گئی جس سے انڈیکس34611.23پوائنٹس سے گھٹ کر33438.95پوائنٹس ہو گیا جبکہ599.37پوائنٹس کی کمی سے کے ایس ای30انڈیکس15038.83پوائنٹس سے کم ہو کر14439.46پوائنٹس ہو گیا جبکہ کے ایس ای آل شیئرز انڈیکس 24703.29سے کم ہو کر24072.22پوائنٹس کی کم سطح پر آگیا ۔پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں مندی کے سبب سرمائے میں1کھرب71ارب39کروڑ62لاکھ3ہزار206روپے کی کمی ریکارڈ کی گئی جس کے نتیجے میں سرمائے کا مجموعی حجم 65کھرب32ارب43کروڑ7لاکھ65ہزار909روپے سے کم ہو کر 63کھرب73ارب95کروڑ48لاکھ70ہزار 554روپے ہو گیا ۔گذشہ ہفتے ٹریڈنگ کے دوران ایک موقع پر کے ایس ای100انڈیکس34611.23پوائنٹس کی بلند سطح کو چھوگیا تھا تاہم مندی کی لہر آنے سے انڈیکس33368.77پوائنٹس کی کم ترین سطح پر بھی دیکھا گیا ۔پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں گذشتہ ہفتے زیادہ سے زیادہ10ارب روپے مالیت کے34کروڑ08لاکھ55ہزار حصص کے سودے ہوئے جبکہ کم سے کم 3ارب روپے مالیت کے 10کروڑ58لاکھ98ہزار حصص کے سودے ہوئے تھے ۔پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں گذشتہ ہفتے مجموعی طور پر1792کمپنیوں کا کاروبارہوا جس میں سے651کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں اضافہ ،1015میں کمی اور126کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں استحکام رہا ۔کاروبار کے لحاظ سے یونٹی فوڈز ،پاور سیمنٹ ،ازگارڈ نائن ،میپل لیف ،لوٹے کیمیکل ،ٹی آر جی پاک لمیٹڈ ،ہم نیٹ ورک ،حیسکول پیٹرول ،پاک ریفائنری ،صدیق سنز ٹن ،ایگری ٹیک لمیٹڈ ،ٹی پی ایل کارپوریشن لمیٹڈ ،غنی آٹو موبائل ،دی سرل کمپنی ،جہانگیر صدیق کمپنی ،نیمائر ریسائنس ،میرٹ پیکیجنگ ،کوئس فوڈز ،میڈیا ٹائمز لمیٹڈ ،بینک آف پنجاب ، عسکری بینک ،کے الیکٹرک لمیٹڈ ،ٹی آر جی پاک لمیٹڈ اوربینک الفلاح سر فہرست رہے ۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*